مصر کے سابق صدر محمد مرسی انتقال کر گئے

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 18th June 2019, 11:34 AM | عالمی خبریں |

قاہرہ 18 جون (ایجنسی) مصر کے معزول کیے جانے والے سابق صدر محمد مرسی آج پیر کے روز انتقال کر گئے۔

سرکاری ٹیلی ویژن کے مطابق انہیں آج عدالت میں پیش کیا گیا جہاں وہ اچانک بے ہوش ہو کر گر گئے اور بعد ازاں ان کا انتقال ہو گیا۔

محمد مرسی تنظیم ’مسلم برادر ہڈ‘ کے اہم رہنما اور مصر کی حالیہ تاریخ کے پہلے منتخب صدر تھے۔ وہ سابق صدر حسنی مبارک کے اقتدار کے خاتمے کے بعد 2012 میں ملک کے پانچویں صدر منتخب ہوئے تھے۔

صدر بننے کے بعد مرسی نے نومبر 2012 میں ایک عبوری آئین جاری کیا تھا جس کے تحت انہیں لامحدود اختیارات حاصل ہو گئے تھے۔

بعد میں ان کی حکومت کے خلاف ملک گیر پیمانے پر احتجاجی مظاہرے شروع ہو گئے۔ مصر کی فوج نے انہیں ملک میں جاری بدترین سیاسی بحران کو ختم کرنے کے لیے فوری اقدامات کرنے کا الٹی میٹم دیا تھا۔ تاہم انہوں نے یہ الٹی میٹم مسترد کر دیا جس کے بعد مصر کی فوج نے ان کی حکومت کا تختہ الٹ کر اقتدار پر قبضہ کر لیا۔ اپنی حکومت گرنے کے بعد سے مرسی مسلسل جیل میں تھے۔

معزول کیے جانے کے چار ماہ بعد ان پر اور اسلامک برادرہڈ کے 14 سینئر رہنماؤں پر ایک صحافی اور حزب مخالف کے دو مظاہرین کو قتل کرنے اور دیگر مظاہرین کو اذیتیں دینے کے لیے اپنے حامیوں کو اکسانے کے الزامات کے تحت مقدمہ چلایا گیا۔ پہلی سماعت کے دوران انہوں نے کہا کہ فوج نے ناجائز طور پر ان کی حکومت کا تختہ الٹا ہے۔ انہوں نے خود پر مقدمہ چلانے کے لیے عدالت کے اختیار کو بھی مسترد کر دیا۔

وہ اس مقدمے میں قتل کے الزام سے تو بری ہو گئے لیکن مظاہرین کو اذیتیں دینے اور انہیں حراست میں رکھنے کے جرائم میں انہیں 20 برس قید کی سزا سنائی گئی۔

اطلاعات کے مطابق 67 سالہ محمد مرسی پر فلسطین کے انتہا پسند گروپ حماس کے لیے جاسوسی کرنے کا الزام بھی عائد کیا گیا تھا۔ اسی مقدمے کے سلسلے میں آج انہیں عدالت میں پیش کیا گیا جہاں وہ بے ہوش ہو کر گر پڑے اور پھر بے ہوشی کی حالت میں ہی ان کا انتقال ہو گیا۔

ایک نظر اس پر بھی

لبنان: تین روزہ قومی سوگ کا آغاز، عالمی امداد بھی جاری

لبنان میں جہاں ایک طرف زبردست دھماکے کی وجوہات کی تفتیش جاری ہے وہیں جمعرات سے تین روزہ قومی سوگ کا آغاز ہوگیا ہے۔ بیروت میں ہونے والے دھماکے میں 135 افراد ہلاک ہوئے تھے۔لبنان کے دارالحکومت بیروت میں منگل کے روز ہونے والے بم دھماکے سلسلے میں حکومت نے جس تین روزہ سوگ کا اعلان کیا ...

عالمی ادارہ صحت نے کہا؛ سماجی فاصلہ برقرار نہ رکھنے سے بڑھ رہے ہیں کورونا کے معاملات، نوجوان مریضوں کی تعداد میں تین گنا اضافہ

عالمی ادارہ صحت (ڈبلیو ایچ او) کا کہنا ہے کہ سماجی فاصلہ برقرار نہ رکھنے کی وجہ سے گزشتہ پانچ ماہ کے دوران کرونا وائرس سے متاثرہ نوجوانوں کی تعداد میں تین گنا اضافہ ہوا ہے۔ڈبلیو ایچ او کی رپورٹ کے مطابق فروری کے آخر سے لے کر جولائی کے وسط تک، کرونا وائرس کا شکار ہونے والے 60 لاکھ ...

جاپانی ماہرین کا کورونا وائرس کی وبا پر قابو پانے کے لئے سوپر کمپیوٹر کے استعمال کا اعلان

کورونا وائرس کی روکتھام کے اقدامات سے متعلق جاپان کے انچارج وزیر نیشی مورا یاسوتوشی نے امید ظاہر کی ہے کہ حکومت، مصنوعی ذہانت اور دیگر ٹیکنالوجیز کو بروئے کار لاتے ہوئے، انفیکشنز پر قابو پانے کے نئے موثر اقدامات دریافت کرنے میں، رواں ماہ کے آخر تک کامیاب ہو جائے گی۔ جاپانی ...

بیروت میں ہوئے زبردست دھماکہ کی کیا ہے اصل کہانی ؟ 6 سال سے ایک بحری جہاز پر 2750 ٹن دھماکا خیز مواد امونیم نائٹریٹ رکھا ہوا تھا؛ اب تک 135 کی موت

بیروت،06 /اگست (آئی این ایس انڈیا)منگل چار اگست کی سہ پہر ہونے والے زور دار دھماکے کے نتیجے میں بیروت میں بحری جہازوں کے لنگر انداز ہونے کا مقام مکمل طور پر تباہ ہو گیا۔ اس کا شمار لبنان کے اہم ترین مقامات میں ہوتا ہے جو ریاستی خزانے میں مالی رقوم پہنچانے کا نمایاں ترین ذریعہ تھا۔ ...

امریکہ کا ایران پر عائد ہتھیاروں کی پابندی میں توسیع پر اصرار بدستور قائم

امریکہ ابھی تک ایران پر عائد ہتھیاروں کی بین الاقوامی پابندی کی قرار داد میں توسیع کے موقف پر مصر ہے۔ یہ پابندی رواں سال اکتوبر میں اختتام پذیر ہو رہی ہے۔اس سلسلے میں امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے زور دے کر کہا ہے کہ اُن کا ملک آئندہ ہفتے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں ایک ...