کاروار کی زیر تعمیر نئی مچھلی مارکیٹ کے عدالتی معاملات آپسی رضامندی سے حل کرنےکی کوشش کی جائے گی : وزیر کوٹاشری نواس پجاری کا بیان

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 8th June 2020, 8:21 PM | ساحلی خبریں |

کاروار:8؍جون (ایس اؤ نیوز) شہر میں زیر تعمیر نئی مچھلی مارکیٹ میں فی الحال 180خواتین ماہی گیروں کو بیٹھنے کی سہولت ہے جہاں وہ  مچھلی  فروخت کرتی ہیں۔ اس سلسلے میں جو  بھی معاملات عدالت میں زیر سماعت ہیں انہیں آپسی رضامندی سے حل کرنے کی کوشش کی جائے گی۔ ان خیالات کا اظہار ریاستی وزیر برائے ماہی گیر کوٹا شری نواس نے کیا۔

شہر میں اتوار کو مچھلی مارکیٹ کا معائنہ کرنے کے بعد پجاری اخبارنویسوں سے بات کررہے تھے۔ انہوں نے بتایا کہ 7ہزار مربع فٹ وسعت والی جگہ پر 5کروڑ روپیوں کی لاگت سے مچھلی مارکیٹ کی تعمیر ہورہی ہے ۔ ماہی گیروں کی مانگ ہے کہ متعلقہ مارکیٹ میں 400 خواتین ماہی گیروں کے لئے جگہ فراہم کی جائے ۔ عدالت میں زیر سماعت معاملات کو حل کرلینے کے بعد مارکیٹ کی توسیع کے متعلق غور کیا جائے گا۔ اس موقع پر رکن اسمبلی روپالی نائک، ودھا ن پریشد کے ممبر ایس وی سنکنور، اے سی پریانگا ، بلدیہ افسر آر پی نایک ، ماہی گیر لیڈر گنپتی مانگرے موجود تھے۔

ماہی گیروں کی مخالفت : ماہی گیر خواتین کا کہنا ہے کہ زیر تعمیر مچھلی مارکیٹ  میں 480 ماہی گیروں کو جگہ فراہم کرنے کی بات کرتے ہوئے عملی نقشہ تیار کیا گیا تھا، اس بنا پر  زیر تعمیر نئی مچھلی مارکٹ میں  تمام ماہی گیر خواتین  کو بیٹھنے کا انتظام کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ جب تک تمام ماہی گیر خواتین  کے لئے انتظام نہیں کیاجائے گا ہم بیوپار کےلئے نہیں بیٹھیں گے۔

 کانگریس ٹاسک فورس ضلع سمیتی کے صدر ستیش سئیل نے  اخبار نویسوں سے  بات کرتےہوئے اس بات پر سخت اعتراض کیا کہ  عملی نقشہ میں تحریف کیا گیا ہے۔ ابتداء میں کہاگیا تھا کہ نچلی منزل میں سواریوں کی پارکنگ کے لئے جگہ مختص کی گئی تھی اور ماہی گیر مارکیٹ کا پانی تقطیر کرنے کے بعد عمارت کے اطراف والے چمن کو استعمال کئے جانے کی بھی بات کہی گئی تھی ، لیکن اب اس میں تبدیلی کی گئی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کاروار:ایس ایس ایل سی امتحان کے نتائج۔ سرسی کی سنّدھی ہیگڈے نے پایا ریاست میں پہلا رینک

امسال ریاست میں ایس ایس ایل سی کے جو امتحانات ہوئے تھے اس کا سامنا طلبہ نے کووڈ وباء کے پس منظر میں ذہنی تناؤ کے ساتھ کیا تھا۔اس کے بعد کافی دنوں سے طلبہ بڑی بے چینی کے ساتھ اپنے نتائج کا انتظار کررہے تھے۔

یلاپورکے دیہات میں محکمہ جنگلات کے افسران اور عملے کی طرف سے مسلسل ہراسانی کے خلاف بھٹکل میں دیا گیا میمورنڈم

ضلع شمالی کینرا کے یلاپور تعلقہ میں گولاپور نامی دیہاتی علاقے میں رہائش پزیر ایک 70سالہ خاتون اوراس کے خاندان کو محکمہ جنگلات کے افسران اور عملے کی جانب سے مسلسل ہراساں کیے جانے کا الزام لگاتے ہوئے جنگلاتی زمین پر بسنے والے لوگوں کے حقوق کے لیے جدوجہد میں مصروف تنظیم نے وزیر ...