سدانندگوڈا، پربلاد جوشی، سریش انگڑی، شیوکمار اداسی مرکزی وزارت کی دوڑ میں ایڈی یورپا، شوبھا کے حق میں، نرملا سیتارامن کونیااہم قلمدان ملنے کی توقع

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 25th May 2019, 12:20 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،25؍مئی (ایس او نیوز) مرکزی وزیر برائے اسٹاٹسٹکس اور پروگرام اپلی منٹیشن، ڈی وی سدانندگوڈا،ہبلی- دھارواڈ لوک سبھا رکن پربلاد جوشی،بلگام سے رکن پارلیمان سریش انگڑی اور ہاویری رکن پارلیمان شیوکمار اداسی اب کرناٹک سے مرکزی وزارت کے لئے دوڑ میں سب سے آگے ہیں - توقع ہے کہ گوڈا کو اس بار بھی موقع مل جائے گا- اگر بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) وکلیگا فرقے کو پھر سے نمائندگی دینے کا فیصلہ کرے-تاہم توقع ہے کہ بی جے پی کے ریاستی صدر بی ایس ایڈی یورپا، اڈپی چکمگلور سے رکن پارلیمان شوبھا کرندلاجے کے نام پر زور دیں گے- ایسی صورتحال میں گوڈا یا شوبھا میں سے کسی ایک کو ہی کابینہ میں جگہ ملے گی- زعفرانی ذرائع نے یہاں اس بات کی اطلاع دی ہے- اگر پارٹی سینیارٹی کی بنیاد پر جاتی ہے تو جوشی اور انگڑی کے امکانات زیادہ ہیں جنہوں نے لگاتار چوتھی بار کامیابی حاصل کی ہے- اس طرح لنگایت کوٹے پر توجہ دی گئی تو ہاویری سے 3بار رکن پارلیمان اداسی کے بھاگ کھل جائیں گے- یہ بات اس حساب سے بھی درست ہوگی جب وزیر اعظم نریندر مودی اپنی ٹیم میں کسی نئے چہرے کو شامل کرنا چاہیں - موجودہ حکومت میں سدانندگوڈا کابینی وزیر ہیں جبکہ بیجاپور رکن پارلیمان امیش جگجنگی اور شمالی کنڑا کے اننت کمار ہیگڈے وزرائے مملکت ہیں - حالانکہ جگجنگی اورہیگڈے کے دوبارہ وزارت ملنے کے امکانات کم ہیں - لیکن کرناٹک بی جے پی لیڈران جگجنگی کے نام پر زور دیں گے تاکہ دلت برادری کو نمائندگی کی بات رہ جائے- ریاست سے راجیہ سبھا رکن نرملا سیتارامن فی الحال وزیر دفاع ہیں - ذرائع نے بتایا کہ وہ نئی کابینہ میں بھی جگہ بنائیں گی اورانہیں کوئی اہم اور ضروری قلمدان ملے گا-

ایک نظر اس پر بھی

دوہفتوں میں وقف بورڈ تشکیل دیا جائے ریاستی حکومت کو ہائی کورٹ کی سخت ہدایت

ریاستی حکومت کی طرف سے وقف بورڈ کی تشکیل میں کی جا رہی غیر معمولی تاخیر پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ریاستی ہائی کورٹ نے چہارشنبہ کے روز ریاستی حکومت کو یہ سخت ہدایت جاری کی کہ دو ہفتوں کے دوران ریاستی وقف بورڈ تشکیل دیا جائے -

وزیرا عظم مودی کے جنم دن پر آر وی دیشپانڈے نے پیش کی مبارکباد۔دل کھول کر ستائش کرنے کے پیچھے کیا ہوسکتا ہے راز؟

یہ بات ثابت شدہ ہے کہ سیاست کوئی بھی مستقل دوست یا مستقل دشمن نہیں ہوتا۔ مگر نظریاتی اختلاف یا اتفاق کے بارے میں سمجھا جاتا ہے کہ وہ اگر مستقل نہ ہوتو کسی بھی شخصیت کا وقار مجروح ہوتا ہے۔

تبریزانصاری ہجومی تشددکیس: بنگلوروآئی آئی ایم کے اساتذہ اورطلبا نے وزیراعظم کولکھا خط

جھارکھنڈ میں پیش آئے تبریزانصاری کے ماب لینچنگ واقعہ میں پولیس جانچ پرسوالات اٹھ رہے ہیں۔ اس درمیان بنگلورو میں آئی آئی ایم کے اساتذہ اورطلبا نے وزیراعظم نریندر مودی کو خط لکھا ہے۔ ملک کے باوقار ادارے انڈین انسٹی ٹیوٹ آف منیجمنٹ کے طلبا اوراساتذہ نے جھارکھنڈ پولیس کی ...