کرناٹک بحران: رہا ہونے کے بعد  ڈی کے شیوکمار سخت برہم 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th July 2019, 11:41 PM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

نئی دہلی 10جولائی (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) کرناٹک میں سیاسی بحران کے درمیان حراست میں لئے گئے کانگریس کے قدآور لیڈر ڈی کے شیو کمار کو ممبئی پولیس نے رہا کر دیا ہے۔ حراست سے رہا ہونے کے بعد ڈی کے شیو کمار نے بی جے پی اور ممبئی پولیس پر جم کر حملہ بولا۔ انہوں نے کہا کہ ممبئی پولیس کو شرم آنی چاہئے انہوں نے مجھے میرے شہری حقوق کے استعمال سے روکا ہے۔ ہوٹل میں میری بکنگ تھی لیکن مجھے ہوٹل کے عملے نے بتایا کہ ان پر بھی دباؤ بنایا جا رہا ہے۔ میں صرف اتنا کہنا چاہتا ہوں کہ جمہوریت میں حکومت آتی اور جاتی ہے، لیکن کسی کو بھی قانون کا غلط استعمال نہیں کرنا چاہئے۔ میں قانون پر انحصار کرنے والا شہری ہوں، یہاں اپنے دوستوں اور پارٹی سے وابستہ لوگوں سے ملنے آیا تھا، لیکن وہ مجھے ان سے ملنے نہیں دے رہے ہیں، جبکہ پارٹی کے ممبر اسمبلی مجھ سے ملنا چاہتے ہیں۔ میں آپ کو صاف کر دینا چاہتا ہوں کہ ممبئی پولیس نے جو دلیل دی ہے وہ حقیقت سے کوسوں دور ہے۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی باغیوں کو تحفظ فراہم کر رہی ہے۔

غور طلب ہے کہ اس سے پہلے کانگریس کے باغی اراکین اسمبلی سے ملنے آئے ڈی کے شیو کمار کو ممبئی پولیس نے حراست میں لے لیا تھا۔ ڈی کے شیو کمار ، ملند دیوڑا کے ساتھ مل کر کانگریس ممبران اسمبلی سے ملنے جا رہے تھے۔ کانگریس کے وزیر ڈی کے شیو کماراور جے ڈی ایس ممبر اسمبلی شوا لنگا گوڑا بدھ کو اسپیشل فلائٹ سے بنگلور سے ممبئی پہنچے تھے۔ دونوں لیڈر باغی ممبران اسمبلی سے ملاقات کرنے کے لئے ممبئی پہنچے تھے۔ اگرچہ ممبئی کے جس ہوٹل میں باغی ممبر اسمبلی ٹھہرے ہیں،وہاں کی سیکورٹی بڑھا دی گئی تھی۔ 

ایک نظر اس پر بھی

یلاپور ضمنی انتخاب: کیا کانگریس کا’ہاتھ‘ چھوڑنے والے بی جے پی امیدوار شیورام ہیبار کو ان کے اپنے ہی شکست دیں گے؟!

سابقہ اسمبلی انتخاب کے دوران ضلع اُترکنڑا کے یلاپورحلقے سے کانگریس کے ٹکٹ پر بہت ہی کم ووٹوں کے ساتھ جیت درج کرنے والے شیورام ہیبار نے اُس وقت اپنے طبقے کے لوگوں کو دوش دیتے ہوئے کہا تھا کہ میرے اپنے لوگوں نے مجھے جیت دلانے کے لئے خوش دلی سے ووٹ نہیں ڈالے تھے۔

راجیہ سبھا میں کانگریس نے گاندھی خاندان کی ایس پی جی سیکورٹی بحال کا مطالبہ کیا

راجیہ سبھا میں بدھ کو کانگریس نے سابق وزیر اعظم منموہن سنگھ اور کانگریس صدر سونیا گاندھی، پارٹی کے سابق صدر اور رہنما راہل گاندھی اور پارٹی کے جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی کی ایس پی جی سیکورٹی واپس لئے جانے کا معاملہ اٹھایا۔

ہوم گارڈ ڈیوٹی گھوٹالہ: فرضی ڈیوٹی دکھا کروصولی کر رہے تھے ہوم گارڈ افسر،گرفت میں آئے تو جلادئیے دستاویز

گوتم بدھ نگر کے گریٹر نوئیڈا میں ایک بڑے گھوٹالے کے تمام دستاویزات کو جلا کر راکھ کر دیا گیا۔گھوٹالہ یہ تھا کہ ضلع میں ہوم گارڈ کی ڈیوٹی میں فرضی انٹری دکھائی جا رہی تھی،

جے این یو پر بہار کے ڈپٹی سی ایم سشیل مودی بولے، کیمپس میں بیف پارٹی کرنے والے شہری نکسلی غریب طالب علموں کو کررہے ہیں گمراہ

جواہر لالو نہرو یونیورسٹی (جے این یو) میں اضافی فیس کے خلاف چل رہے مظاہرے پر بہار کے نائب وزیر اعلی سشیل کمار مودی نے ٹویٹ کر کے مخالفت کا اظہار کیا ہے۔