کاروار اور انکولہ میں ڈسٹرکٹ انچارج وزیر شیورام ہیبار کے ہاتھوں ’اندرا کینٹین ‘ کا افتتاح

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 6th June 2020, 7:54 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

کاروار:6؍جون (ایس اؤ نیوز)اترکنڑا ضلع نگراں کار وزیر شیو رام ہیبار نے کاروار کے ہیسکام دفتر روڈ پر تعمیر کردہ اور انکولہ میں بلدیہ کی زیر سرپرستی چلنے والی  ’اندرا کینٹین ‘کا افتتاح کیا۔ اس کے بعدا نہوں نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ اندراکینٹین  سے غریبوں کا فائدہ ہوگا اور انہیں اس کینٹین سے کم قیمت پر ناشتہ سمیت دوپہر اور رات کا کھانا دستیاب ہوگا۔ انہوں نے بلدیہ والوں سے کہاکہ ہوٹل میں صاف صفائی ، غذا کا معیار وغیرہ کی کڑی نگرانی رکھیں۔ اسی طرح انہوں نے مقامی سطح کے عوامی نمائندوں کو  بھی اس طرف توجہ دینے کی بات کہی۔ انہوں نے بتایا کہ ہماری سرکار غریبوں کے حق میں جو منصوبہ جات ہیں اس کو جاری رکھے گی۔

بلدیہ افسران نے بتایا کہ 75لاکھ روپیوں کی عمارت میں 15لاکھ روپیوں کے مشین ہیں ، جہاں ترکاری کاٹنے سے لے کر ابالنے تک کا پورا کام خود مشینیں ہی انجام دیتی ہیں۔کاروار کی اندار کینٹین  میں  ہردن 500 لوگوں کو 5 اور 10روپئے میں کھانا تیار کیا جاتا ہے،  اسی طرح انکولہ میں صبح کا ناشتہ ، دوپہرکاکھانا  اور رات کا کھانا 200 لوگوں کے لئے تیار کیا جائے گا۔

اخبارنویسوں سے بات کرتے ہوئے شیورام ہیبار نے بتایا کہ کووڈ-19زندگی کا ایک حصہ ہے، اگلے دو تین برسوں تک لاک ڈاؤن کو جاری رکھنا ممکن نہیں ہے،ہم سب کو اس کا شعور حاصل کرنا ہے کہ  ہماری جان کی ہمیں خود حفاظت کرنی ہے، سرکار ہرکام کو انجام دینا ممکنات میں سے نہیں ہے۔ اس موقع پر انہوں نے ڈی سی ، ایس پی اور ضلع پنچایت سی ای او کی ستائش کرتے ہوئے کہاکہ انہی کی وجہ سے ہمارے ضلع میں کورونا پر قابوپایاگیا ہے۔

اسکولوں اور کالجوں کی شروعات کو لےکر انہوں نے بتایا کہ کورونا کی وجہ سے ہمارے طلبا کا ایک سال ضائع ہوجاتاہے تو ہونے دیجئے لیکن ان کی زندگیوں سے کھیلنے حکومت تیار نہیں ہے۔ حالات سنگین ہیں کوئی قطعی فیصلہ لینا ممکن نہیں ہے ۔

 اس موقع پر رکن اسمبلی روپالی نائک، ضلع پنچایت صدر جئے شری موگیر، ڈی سی ڈاکٹر ہریش کمار، ایس پی شیوپرکاش دیوراج ، سی ای اؤ محمد روشن ،  بلدیہ افسر پریانگا، فاریسٹ افسر ڈاکٹر اجے وغیرہ موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

اننت کمار ہیگڈے نے لگایابی ایس این ایل میں دیش دروہی افسران موجود ہونے کا الزام

اپنے متنازعہ بیانات کے لئے پہچانے جانے والے رکن پارلیمان اننت کمار ہیگڈے نے الزام لگایا کہ بھارت سنچار نگم لمیٹڈ کے اندر دیش دروہی افسران بیٹھے ہوئے جس کی وجہ سے اس کے کام کاج میں کوئی ترقی نہیں ہورہی ہے۔ اس لئے آئندہ دنوں میں اس کی نج کاری (پرائیویٹائزیشن) کیا جائے گا۔

ایم پی اننت کمار ہیگڈے کا بھٹکل دورہ؛ 23.72کروڑ روپے کے ترقیاتی منصوبوں کو دکھائی ہری جھنڈی

پیر کو رکن پارلیمان اننت کمار ہیگڈے نے بھٹکل کا دورہ کرتے ہوئے  بھٹکل تعلقہ میں ’پردھان منتری گرام سڑک یوجنا‘کے تحت 23.72کروڑ روپے لاگت کے مختلف ترقیاتی منصوبوں کو ہری جھنڈی دکھائی۔ وہ یہاں ماروتی نگر میں بی جے پی تعلقہ آفس کا افتتاح کرنے کے بعد خطاب کررہے تھے۔

مینگلور کے قریب سولیا میں ہائی ٹینشن الیکٹرک کیبل کی زد میں آکر بائک کے ساتھ بائک سوا ر بھی جل کرخاکستر

ضلع دکشن کنڑا کے  سولیا میں کلّیری نامی علاقے میں آج منگل صبح 5.30بجے پیش آئے  ایک انتہائی دردناک حادثہ میں دو لوگ موقع پر ہی جل کر ہلاک ہوگئے جن میں ایک  شناخت  اُمیش (45) کی حیثیت سے کی گئی ہے، جبکہ  بائک کی پچھلی سیٹ پر سوار اس کے  ساتھی کا  نام معلوم نہ ہوسکا۔

کاروار:ایس ایس ایل سی امتحان کے نتائج۔ سرسی کی سنّدھی ہیگڈے نے پایا ریاست میں پہلا رینک

امسال ریاست میں ایس ایس ایل سی کے جو امتحانات ہوئے تھے اس کا سامنا طلبہ نے کووڈ وباء کے پس منظر میں ذہنی تناؤ کے ساتھ کیا تھا۔اس کے بعد کافی دنوں سے طلبہ بڑی بے چینی کے ساتھ اپنے نتائج کا انتظار کررہے تھے۔

باپ کی املاک پر بیٹی کا بیٹے کی طرح یکساں حق: سپریم کورٹ

سپریم کورٹ نے منگل کو ایک دور رس نتائج والے اپنے فیصلہ میں کہا ہے کہ ہندو غیر منقسم خاندان کی آبائی املاک میں بیٹی کو بیٹے کی طرح ہی حقوق حاصل ہوں گے، یہاں تک کہ اگر ہندو جانشینی (ترمیمی) ایکٹ 2005 کے نفاذ سے قبل ہی اس کے والد کی موت کیوں نہ ہوگئی ہو۔

بنگلور: ٹرانسفرس کے احکامات ملتوی کرانے میں مبینہ طور پر با رسوخ اساتذہ کی لابی شامل، چار سال سے ڈگری کالجوں کے لکچررس کے تبادلے نہیں ہوسکے

ریاست کرناٹک کے سرکاری فرسٹ گریڈ کالجوں میں خدمات انجام دے رہے لکچررس کے تبادلے نہیں ہوسکے ہیں، جس کے سبب انہیں کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اس تعلق سے الزامات لگائے جارہے ہیں کہ  چند با رسوخ لکچررس کی طرف سے سیاسی اثر و رسوخ کا استعمال کرکے تبادلوں کی کاروائی ملتوی ...