ریاست میں ڈینگو بخار سے عوام پریشان : جنوری سے ابھی تک 14757افراد ڈینگو میں مبتلا

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 16th November 2019, 5:57 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

بنگلورو:16؍نومبر(ایس اؤ نیوز) ریاست میں ڈینگو بخار کا ہنگامہ جاری ہے، محکمہ صحت اور خاندانی فلاح وبہبودی کے مطابق یکم جنوری سے ابھی تک 14757افراد ڈینگو میں مبتلا پائے گئے ہیں، جس سے پچھلے ایک دہے میں سب سے زیادہ ڈینگو معاملات امسال درج کئے گئے ہیں۔

گزشتہ برس اسی وقت 3357ڈینگو معاملات کا پتہ چلا تھا، بنگلورو کے بی بی ایم پی حدود میں ہی 698معاملات درج ہوئے تھے تو امسال ڈینگو کیسس میں چار گنا اضافہ ہواہے۔ بی بی ایم پی حدود میں امسال 8483افراد ڈینگو بخار سے جھوجھ رہے ہیں۔ سال 2014سے ڈینگو بخار میں مبتلا ہونےو الوں کی تعداد میں لگاتار اضافہ ہوتارہا، 2018میں کچھ حد تک اس پر روک لگائی گئی تھی لیکن امسال جنوری سے ہی ڈینگو عوام کے لئے پریشانی کا باعث بنی ہوئی ہے۔

گزشتہ ایک مہینےمیں ڈینگو بخار سے 5لوگوں کی موت واقع ہوئی ہے، 2476افراد بخار کا علاج کروائے ہیں، ہرسال بارش کم ہوتے ہی ڈینگو بخار بھی کم ہوجاتی تھی لیکن امسال وقفے وقفے سے بارش ہونے کےنتیجےمیں ڈینگو بخار سال بھر پریشان کرتی رہی ہے۔ اب یہ کنٹرول میں ہونے کی محکمہ کے افسران نے جانکاری دی ۔

ریاست میں سب سے زیادہ جن اضلاع میں ڈینگو بخار کاپتہ چلا ہے ان کی تفصیل کچھ اس طرح ہے۔ دکشن کنڑا -1425(4ہلاک )۔شیموگہ 545(1ہلاک )۔ ہاویری 358۔ چتردرگہ 278(1ہلاک )۔چامراج نگر 271۔ ڈاونگیرہ 266۔اُڈپی 249۔ رائچور 235۔کلبرگی 229۔کولار 212(ایک ہلاک )۔ یادگیری 196۔ چک مگلورو 190۔ دھارواڑ 188۔ ہاسن 189اورچک بلاپور میں 183 معاملات کا پتہ چلاہے۔ بنگلورو شہر میں دو افراد، رام نگر، وجئے پور، گدگ،منڈیا میں ایک ایک فرد ڈینگو بخار سے ہلاک ہوئے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

کورونا اَپ ڈیٹ:منگلورو کووِڈ ہاسپٹل کے پیتھولوجسٹ ہو ا کورونا کا شکار۔ 10ڈاکٹر پہلے ہی ہوچکے ہیں متاثر،ڈی سی کا دفتر 3دن تک رہے گا بند!۔ کووِڈ سے مرنے والوں کی تعداد ہوگئی 18

وینلاک کووِڈ ہاسپٹل میں پیتھو لوجسٹ (لیباریٹری جانچ کا ماہر)کے طور پر خدمات انجام دینے والا شخص خود ہی کورونا کا شکار ہوگیا ہے۔

کورونا پر قابو پانا عوام کے اپنے ہاتھ میں ہے۔ بھٹکل میں قائم کیے جارہے ہیں ’مِنی فیور کلینک‘۔ اسسٹنٹ کمشنر کا بیان

اسسٹنٹ کمشنر بھرت ایس نے بھٹکل میں بگڑتی ہوئی کووِڈ کی صورت حال پر ایک پریس کانفرنس میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ کورونا وباء کو قابو میں کرنا اب عوام کے اپنے ہاتھ میں ہے۔اور اگر عوام اس کو سنجیدگی سے لیں تو یہ کوئی مشکل کام بھی نہیں ہے۔

بھٹکل میں بڑھتے کورونا معاملات؛ اب بھٹکل ویمن سینٹر کو کیا جائے گا کورونا سینٹر میں تبدیل؛ سو بستروں کا کیا جارہا ہے انتظام

بھٹکل میں کورونا کے بڑھتے معاملات اور آئندہ مزید اس میں اضافہ  کے خدشے کے  پیش نظر اب بھٹکل ویمن سینٹر کو  کورونا سینٹر میں تبدیل کئے جانے کا کام تیزی کے ساتھ جاری ہے۔ ویمن سینٹر میں بستروں کا انتظام کیا جارہا ہے اور آج یا کل میں کورونا سے متاثرہ لوگوں کو   اس نئے کورونا ...