جنوبی کینرا کے ڈی سی سسی کانت کا استعفیٰ۔ ملک کے بدلتے سیاسی حالات میں ایماندار افسران کی بے بسی کا ایک اور ثبوت 

Source: S.O. News Service | Published on 7th September 2019, 12:28 AM | ساحلی خبریں |

منگلورو 6/ستمبر (ایس اونیوز) ملک کا سیاسی اورسماجی منظر نامہ کس حد تک بدل گیا ہے اور آنے والے دن کتنے پریشان کن ہوسکتے ہیں ا س کی طرف اشارہ کرنے والا ایک سلسلہ چل پڑا ہے جس میں ایماندار اور صاف و شفاف کردار والے آئی اے ایس اور آئی پی ایس افسران یکے بعد دیگرے سرکاری ملازمت سے مستعفی ہوتے جارہے ہیں اور اپنے استعفیٰ ناموں میں وہ واضح طور پر کہہ رہے ہیں کہ ایک باکردار اور باضمیر افسر کے لئے موجودہ سرکاری سسٹم میں بنے رہنا ناممکن ہوگیا ہے۔

حال میں کشمیر کے تعلق سے مرکزی حکومت کے فیصلے پر بے اطمینانی جتاتے ہوئے آئی اے ایس آفیسرکیرالہ سے تعلق رکھنے والے کنن گوپی ناتھن نے اپنے عہدے سے بطور احتجاج استعفیٰ دیا تھا۔امسال مئی کے مہینے میں عوام میں مقبولیت اور نیک نامی کمانے والے اور   ”سنگھم “ کے نام سے معروف پولیس آفیسر انا ملائی (آئی پی ایس) نے بنگلورو ڈپٹی کمشنر آف پولیس کے عہدے سے استعفیٰ دے کر سرکاری ملازمت سے چھٹکارہ حاصل کیا تھا۔حالانکہ اناملائی کے فیصلے کو سیاسی عزائم سے جوڑ دیکھاجارہاتھا اور ان کے بھارتیہ جنتا پارٹی میں شامل ہونے کی باتیں بھی ہورہی تھیں، لیکن انہوں نے موجودہ نظام میں بے باکی سے فرائض انجام دینے کی راہ میں آنے والی رکاوٹوں کو اس کاسبب بتایا اور خود کو سول سروس سے الگ کرکے اپنے آبائی گاؤں میں زراعت اور باغبانی سے منسلک کرنے کی بات کہی تھی۔

اب اس سلسلے کی تازہ کڑی کے طور جنوبی کینرا کے ڈپٹی کمشنر سسی کانت سینتھل کا نام سامنے آیا ہے۔سسی کانت سینتھل میں ایک عوام دوست ڈی سی کے طور پر بہت ہی مقبول آفیسر رہے ہیں۔انہوں نے  6/ستمبر  اچانک اپنے عہدے سے استعفیٰ دے کر اپنے چاہنے والوں کو حیرت زدہ کردیا ہے۔بہت ہی بے باک اور شفاف کردار کے مالک سسی کانت سینتھل نے اپنے استعفیٰ نامے میں چند جملوں میں موجودہ حالات اور مستقبل کے موسم کا پورا نقشہ کھینچ دیا ہے۔

انہوں نے لکھاہے کہ:”میں نے یہ فیصلہ پوری طرح ذاتی احساسات کی بنیا دپر لیا ہے۔کیونکہ میں سمجھتاہوں کہ ایسے حالات میں جبکہ جب ہماری مختلف النوع جمہوریت کی بنیادیں ہل رہی ہوں اور جمہوری اقدار کے اس قسم کی ماضی میں کبھی نہ دیکھی گئی مصالحت کی جارہی ہو تو پھرمیرے لئے سرکاری آفیسر کے عہدے پر بنے رہنا ایک انتہائی غیر اخلاقی بات ہوگی۔ مجھے اس بات کا سخت احساس ہورہا ہے کہ آنے والے دنو ں میں قوم کے بنیادی تانے بانے کے لئے انتہائی دشوار مراحل کا سامنا کرناپڑے گا۔ ایسے میں یہی بہتر ہے کہ میں آئی اے ایس کے زمرے سے باہر نکل آؤں تاکہ سب لوگوں کی زندگی بہتر بنانے کا کام جاری رکھ سکوں۔“

سینتھل کی اچانک سبکدوشی اور اس ضمن میں ان کی وضاحت سے صاف اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ حقیقت پسندانہ نظر سے دیکھیں تو ملک اور قوم کے لئے مستقبل میں کس قدر دشوار مراحل درپیش ہیں اور موجودہ سرکاری نظام میں کس قدر گھٹن پیدا ہوچکی ہے کہ سرکاری افسران اگر اپنے ضمیر کی آواز سنیں تو انہیں وہاں ایک پل کے لئے بھی جینا مشکل ہوگیا ہے۔ریاستی سطح پر کچھ ایسے حالات کی ہی نشاندہی کنن گوپی ناتھن کے علاوہ اناملائی جیسے افسران کی سبکدوشی سے بھی ہوئی تھی۔ جبکہ قومی سطح پر امسال جنوری میں آئی اے ایس آفیسر شاہ فیصل نے کشمیر میں قتل و غارت گری کے بے لگام سلسلے پر احتجاجاً استعفیٰ دے دیا تھا۔ یاد رہے کہ کشمیر سے تعلق رکھنے والے شاہ فیصل 2017کے سول سروس بیاچ میں ملکی سطح پر ٹاپر تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں بجلیوں کی چمک اور بادلوں کی گرج کے ساتھ موسلادھار بارش؛ بینگرے میں ایک گھرکو نقصان، ماولی میں الیکٹرانک اشیاء جل کر راکھ؛ الیکٹرک سٹی سپلائی بری طرح متاثر

آج منگل دوپہر کو ہوئی موسلادھار بارش اور بجلیاں گرنے سے ایک مکان کو نقصان پہنچا وہیں دوسرے ایک مکان کی الیکٹرانک اشیاء جل کر خاک ہوگئی۔

بھٹکل: جے این یو کے لاپتہ متعلم نجیب احمد کو ڈھونڈ نکالنے  اور اُس کے ساتھ انصاف کرنے  کا مطالبہ لے کر ایس آئی اؤ آف انڈیا کا ملک گیر احتجاج : بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر کو بھی دیا گیا میمورنڈم

15اکتوبر 2016کو جواہر لال یونیورسٹی میں ایم ایس سی کےفرسٹ ائیر میں زیر تعلیم نجیب  احمد یونیورسٹی کے ہاسٹل سے لاپتہ ہوئے تین سال ہورہےہیں ،گمشدگی کی پہلی رات کو ہاسٹل میں اے بی وی پی کے کارکنان نے حملہ کیا تھا، مگر اس معاملے میں ابھی تک کوئی پیش رفت نہیں ہونے پر اسٹوڈنٹس اسلامک ...

بھٹکل کے اسسٹنٹ کمشنر ساجد ملا کا تبادلہ :ایماندار آفسران کے تبادلوں پر عوام میں حیرت ؛کے اے ایس آفیسر  اے رگھو ہونگے نئے اے سی

بھٹکل کے اسسٹنٹ کمشنر ساجد ملا کا تبادلہ کرتےہوئے ریاستی حکومت نے حکم نامہ جاری کیا ہے، ساجد ملا کے عہدے پر کے اے ایس جونئیر گریڈ کے پروبیشنری افسر اے رگھو کا تقر ر کیاگیا ہے۔ اس طرح تعلقہ کے اہم کلیدی عہدوں پر فائز ایماندار افسران کے تبادلوں کولے کرعوام تعجب کا اظہار کیا ہے۔

محکمہ جنگلات کے افسران کے خلاف بھٹکل پولس اسٹیشن کے باہر احتجاج؛ اے ایس پی کو دی گئی تحریری شکایت

جنگلاتی زمین کے حقوق کے لئے لڑنے والی ہوراٹا سمیتی کے کارکنان نے آج بھٹکل ٹاون پولس تھانہ کے باہر جمع ہوکر محکمہ جنگلات کے اہلکاروں کے خلاف کاروائی کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے احتجاج کیا اور بھٹکل سب ڈیویژن کے اسسٹنٹ ایس پی  کے نام میمورنڈم پیش کیا۔ 

ضلع شمالی کینرا میں آج بھی 24ہزار خاندان گھروں سے محروم ! کیا آشریہ اسکیم کے ذریعے صرف دعوے کئے جاتے ہیں ؟

حکومت کی طرف سے بے گھروں کو مکانات فراہم کرنے کی اسکیمیں برسہابرس سے چل رہی ہیں۔ اس میں سے ایک آشریہ اسکیم بھی ہے۔ سرکاری کی طرف سے ہر بار دعوے کیے جاتے ہیں کہ بے گھروں اور غریبو ں کا چھت فراہم کرنے کے منصوبے پوری طرح کامیاب ہوئے ہیں۔

بھٹکل کے آٹو رکشہ ڈرائیور بھی ایماندار؛ بھٹکل میں تین لاکھ مالیت کے زیورات سے بھری بیگ لے کر رکشہ ڈرائیور پہنچا پولس اسٹیشن

  بھٹکل میں  راستے پر  کوئی  قیمتی چیز کسی کو گری ہوئی ملتی ہے  تو اکثر لوگ  اُسے اُس کے اصل مالک تک  پہنچانے کی کوشش کرنا عام بات ہے،  بالخصوص مسلمانوں کو راستے میں پڑی ہوئی  کوئی قیمتی چیز مل جاتی ہے تو     لوگ یا تو خود سے سوشیل میڈیا  میں پیغام وائرل کرکے  اُسے اُس کے اصل ...