ذہنی دباؤ بیسویں صدی کا ایک مہلک مرض؛ آئیٹا گلبرگہ کے ورک شاپ سے ڈاکٹر عرفان مہا گا وی کا خطاب

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 26th September 2022, 8:51 PM | ریاستی خبریں |

گلبرگہ 26 ستمبر(پریس ریلیز/ایس او نیوز): نئے دور کی شدید ترین بیماریوں میں ذہنی دباؤ اور اس سے پیدا ہونے والے اثرات کو مہلک امراض میں شمار کیا جاتا ہے ۔ روز مرہ کی مشینی زندگی میں ذہنی دباؤ  میں بہت زیادہ اضافہ ہوا ہے ۔ لیکن اس کو کیسے کم کیا جائے اس پر غور کر نے اور اس سلسلے میں کوشش کرنے کی ضرورت ہے ۔ ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر عرفان مہا گا وی ماہر نفسیات نے اساتذہ کے لئے منعقد پروگرام ذہنی دباؤ کا تدارک میں کیا۔ آپ نے مزید کہا کہ مسائل کے تئیں ہمارے روئیے اور اپروچ میں تبدیلی سے ذہنی دباؤ کو کم کیا جا سکتا ہے ۔نئے حالات کی قبولیت، منفی جذبات کو مثبت جذبات میں تبدیل کردیتی ہے ۔ آپ نے کہا کہ شکر گزاری کا جذبہ ذہنی دباؤ کو کم کر سکتا ہے ۔اطمنان سے نماز اور اذکار کا اہتمام ذہنی صحت کے لئے موثر ہے ۔ذہنی دباؤ کو کم کر نے کے لئے گھر والوں سے بات چیت،  لہجے میں نرمی، مثبت نکتہ نظر، کاموں کی منصوبہ بندی،  خود کے لئے وقت دینا، خوش رہنا ضروری ہے ۔

اس سے قبل جناب جعفر کاریگر صدر آئیٹا چیتاپور نے حمد پیش کی،  جناب خالد پرواز صدر مقامی آئیٹا گلبرگہ نے افتتاحی کلمات میں  پروگرام کے مقصد اور اہمیت پر روشنی ڈالی اور کہا حالیہ سروے کے مطابق 60فیصد اساتذہ  بی پی، شوگر اور دیگر امراض  میں مبتلا ہیں ۔ اسی لئے آئیٹا کرناٹکا نے صحتمند معلم-صحتمند تعلیم کے عنوان سے دس روزہ مہم کا آغاز کیا ہے ۔جناب احمد پاشاہ صاحب صدر کراٹا ضلع گلبرگہ نے کہا کہ آج کل اساتذہ پر ذہنی دباؤ میں اضافہ ہو گیا ہے۔اس لئے یہ عنوان بہت اہمیت کا حامل ہے ۔جناب اطہر با با سکریٹری گلشن اطفال اسکول گلبرگہ نے آئیٹا کے کام کو سراہا اور کہا کہ اس طرح کے کاموں وہ ہمیشہ تعاون کرتے رہینگے ۔ جناب نصرت محی الدین ضلعی صدر آئیٹا گلبرگہ نے اپنے صدارتی خطاب میں صبر اور شکر کی اہمیت واضح کرتے ہوئے ڈاکٹر عرفان مہا گا وی کا شکریہ ادا کیا اور اساتذہ سے التماس کی ان کے بہترین مشوروں کو اپنی زندگی کا حصہ بنائیں ۔ آخر میں جناب شمش الدین صاحب مقامی سکریٹری آئیٹا گلبرگہ نے مہمانوں کا شکریہ ادا کیا ۔اس پروگرام کی نظامت جناب  محمد جاوید ضلعی سکریٹری آئیٹا نے بہترین انداز میں کی۔ اس پرگرام میں ڈاکٹرشنتوشی کلنکل سیکاٹریسٹ کے علاوہ اساتذہ کی بڑی تعداد شریک رہی

ایک نظر اس پر بھی

گرام پنچایتوں کیلئے آئین کی نقل تقسیم: وزیر اعلیٰ بسواراج بومئی

وزیر اعلیٰ بسواراج بومئی نے کہا کہ ریاست کے تمام گرام پنچایتوں کی لائبریریوں میں آئین کی نقل کے ساتھ گرام پنچایت 73اور 74ویں ترمیم، پنچایت راج قوانین کی نقول بھی روانہ کرکے وہاں بھی آئین پر مبنی انتظامیہ فراہم کرنا حکومت کا مقصد ہے۔

ووٹر ڈاٹا چوری معاملہ: 4 بی بی ایم پی افسروں سمیت اب تک11افراد گرفتار

ووٹرلسٹوں میں مبینہ ہیراپھیری،چھیڑ چھاڑ اور چیلومے نامی ادارے کے کارکنوں کو سرکاری عہدیداروں کا فرضی شناختی کارڈ دینے کے معاملے کی سختی سے جانچ کرتے ہوئے شہر کی پولیس نے اب تک اس کیس میں 11 افراد کو گرفتار کیا ہے -

بنگلورو: بی بی ایم پی بجٹ میں عوام کو شامل کرنے”مائی سٹی۔مائی بجٹ“ مہم

بروہت بنگلور مہا نگر پالیکے(بی بی ایم پی) بجٹ میں عوامی مشوروں کو شامل کرنے کے مقصد سے جنا گراہا نامی رضاکارانہ ادارے کی جانب سے ہر سال ”مائی سٹی۔مائی بجٹ“(اپنا شہر۔اپنا بجٹ) مہم چلائی جاتی ہے جس کے تحت بی بی ایم پی کے تمام وارڈز میں مہم کے دوران مقامی افراد سے مشورے حاصل کر کے ...

بیلگاوی کرناٹک میں رہے یامہاراشٹر میں کیافرق پڑنے والاہے: کمارسوامی

سابق وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمارسوامی نے بی جے پی کوشدیدتنقیدکانشانہ بناتے ہوئے کہاکہ یکساں سیول کوڈ نافذ کرنے جا رہے بی جے پی والو، کیا آپ یہ نہیں کہہ رہے کہ ہم سب ہندوستانی ہیں؟ اگر ایسا ہے تو بیلگام یہاں کرناٹک میں رہے یامہاراشٹر میں کیافرق پڑنے والاہے،ہم سب ہندوستانی ہیں؟

بیلگام: مدرسہ کی 4طالبات سیلفی لینےکے دوران ندی میں غرق؛ ایک کو بچالیا گیا

بیلگام سرحد سے متصل ، مہاراشٹرا کے کتواڑ فالس میں سیلفی لینے کے دوران مدرسہ میں زیر تعلیم  4طالبات توازن کھو کر غرق ہوگئیں  اور اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھیں۔ واقعہ سنیچر کو پیش آیا۔ حادثے میں ایک طالبہ کو بچالیا گیا ہے، مگر اس کی حالت نازک بتائی گئی ہے۔

پونے : پھر گرم ہوا کرناٹکا - مہاراشٹرا سرحدی تنازعہ - کرناٹکا کی بسوں پر پوتا گیا کالا رنگ - مہاراشٹرا کی حمایت میں لکھے گئے نعرے

کرناٹکا اور مہاراشٹرا کے بیچ جو سرحدی تنازعہ ہے اس پر کرناٹکا کے وزیر اعلیٰ بسوا راج بومئی نے جو بیان دیا تھا اس کے خلاف مہاراشٹرا کے کئی علاقوں میں مراٹھا تنظیموں نے احتجاجی مظاہرے کیے ۔ اسی کے ساتھ  کے ایس آر ٹی سی  کی بین الریاستی بسوں پر بعض جگہ کالا رنگ پوتا گیا اور اس پر ...