جلد ہی دہلی کا اپنا تعلیمی بورڈہوگا:منیش سسودیا

Source: S.O. News Service | Published on 10th September 2019, 10:00 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،10ستمبر(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) دہلی کے نائب وزیر اعلی منیش سسودیا نے کہا کہ جلد ہی دہلی کا اپنا تعلیمی بورڈ ہوگا لیکن وہ سی بی ایس کی جگہ نہیں لے گا، بلکہ یہ اگلی نسل کا بورڈ ہوگا جو جی ای،نیٹ جیسے داخلہ امتحانات کی تیاریوں میں طالب علموں کی مددکرے گا۔نائب وزیراعلیٰ نے کہاہے کہ دہلی حکومت بورڈ کو ایسے طور پر دیکھتی ہے جو موجودہ حالات کی تشخیص کرے۔موجودہ میں طالب علم اسکولوں کی مددسے بورڈ امتحانات کی تیاری، لیکن انہیں انجینئرنگ اور میڈیکل کاداخلہ امتحان پاس کرنے کے لیے کوچنگ سینٹروں کاسہارالینا پڑتاہے۔منیش سسودیا نے کہاکہ یہ المیہ ہے کہ ہلی میں کوئی تعلیمی بورڈنہیں ہے۔ہم دہلی کو اپنا تعلیمی بورڈ دینے کی تیاری کر رہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ ہم نے2015 میں اس کے بارے میں سوچنا شروع کر دیا اور اس پر کام کرنا بھی شروع کر دیاہے۔لیکن جب ہم نے عمارتوں کی حالت دیکھی اور کلاسوں میں تعلیم کے ماحول کو محسوس کیا تو ہمیں لگا کہ نیابورڈبنانے کی بجائے پہلے بنیادی ڈھانچہ کو بہتر بنانے کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ دہلی کا اپنا تعلیمی بورڈ بنانے کا وقت آ گیا ہے۔منیش سسودیا نے کہاکہ حکومت اس پر کام کر رہی ہے۔یہ سی بی ایس کی جگہ نہیں لے گابلکہ نئی نسل کا بورڈہوگا۔یہ بورڈ اور اس کا کورس کیسا ہوگا، اس کے بارے میں انہوں نے کہاہے کہ سرکارمختلف موضوعات پر مختلف گریڈ دینے کا ارادہ رکھتی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بے لگام میڈیا پر جمعیۃ کی عرضی: جب تک عدالت حکم نہیں دیتی حکومت خود سے کچھ نہیں کرتی: چیف جسٹس

مسلسل زہر افشانی کرکے اور جھوٹی خبریں چلاکر مسلمانوں کی شبیہ کوداغدار اور ہندوؤں اورمسلمانوں کے درمیان نفرت کی دیوارکھڑی کرنے کی دانستہ سازش کرنے والے ٹی وی چینلوں کے خلاف داخل کی گئی

دہلی فسادات: پروفیسر اپوروانند کی حمایت میں سامنے آئے ملک و بیرون ملک کے دانشوران

 ملک اور بیرون ملک کے ایک ہزار سے زائد معروف دانشوروں، نوکر شاہوں، صحافیوں، مصنفوں، ٹیچروں او اسٹوڈنٹس نے دہلی یونیورسٹی کے پروفیسر اپوروانند سے مشرقی دہلی میں فسادات کے معاملے میں پوچھ گچھ کئے جانے اور انکا موبائل فون ضبط کرنے کے واقعہ کی شدید مذمت کی ہے اور پولیس کے ذریعہ ...

کالعدم چینی کمپنیوں سے بی جے پی کے گہرے رشتے ہیں: کانگریس

 کانگریس نے الزام عائد کیا ہے کہ حکومت نے قومی سلامتی کے لیے خطرہ بتاتے ہوئے جن چینی کمپنیوں پر پابندی لگائی ہے ان میں سے کئی کے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) سے گہرے رشتے ہیں اور گزشتہ عام انتخابات میں ان کمپنیوں نے اس کے لیے تشہیری مہم کا کام کیا تھا۔

ریا چکرورتی کا سوشانت کے ساتھ جڑنے کا واحد مقصد ان کی جائیداد ہڑپنا تھا: بہار پولیس کا حلف نامہ

 بہار پولیس نے اداکار سوشانت سنگھ راجپوت کی مبینہ خودکشی کے معاملے میں سپریم کورٹ میں دائر حلف نامے میں کہا کہ کلیدی ملزمہ ریا چکرورتی اور اس کے اہل خانہ کا اداکار کے ساتھ جڑنے کا واحد مقصد اس کی جائیداد ہڑپنا تھا۔