جلد ہی دہلی کا اپنا تعلیمی بورڈہوگا:منیش سسودیا

Source: S.O. News Service | Published on 10th September 2019, 10:00 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،10ستمبر(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) دہلی کے نائب وزیر اعلی منیش سسودیا نے کہا کہ جلد ہی دہلی کا اپنا تعلیمی بورڈ ہوگا لیکن وہ سی بی ایس کی جگہ نہیں لے گا، بلکہ یہ اگلی نسل کا بورڈ ہوگا جو جی ای،نیٹ جیسے داخلہ امتحانات کی تیاریوں میں طالب علموں کی مددکرے گا۔نائب وزیراعلیٰ نے کہاہے کہ دہلی حکومت بورڈ کو ایسے طور پر دیکھتی ہے جو موجودہ حالات کی تشخیص کرے۔موجودہ میں طالب علم اسکولوں کی مددسے بورڈ امتحانات کی تیاری، لیکن انہیں انجینئرنگ اور میڈیکل کاداخلہ امتحان پاس کرنے کے لیے کوچنگ سینٹروں کاسہارالینا پڑتاہے۔منیش سسودیا نے کہاکہ یہ المیہ ہے کہ ہلی میں کوئی تعلیمی بورڈنہیں ہے۔ہم دہلی کو اپنا تعلیمی بورڈ دینے کی تیاری کر رہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ ہم نے2015 میں اس کے بارے میں سوچنا شروع کر دیا اور اس پر کام کرنا بھی شروع کر دیاہے۔لیکن جب ہم نے عمارتوں کی حالت دیکھی اور کلاسوں میں تعلیم کے ماحول کو محسوس کیا تو ہمیں لگا کہ نیابورڈبنانے کی بجائے پہلے بنیادی ڈھانچہ کو بہتر بنانے کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ دہلی کا اپنا تعلیمی بورڈ بنانے کا وقت آ گیا ہے۔منیش سسودیا نے کہاکہ حکومت اس پر کام کر رہی ہے۔یہ سی بی ایس کی جگہ نہیں لے گابلکہ نئی نسل کا بورڈہوگا۔یہ بورڈ اور اس کا کورس کیسا ہوگا، اس کے بارے میں انہوں نے کہاہے کہ سرکارمختلف موضوعات پر مختلف گریڈ دینے کا ارادہ رکھتی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

دہلی میں جماعت اسلامی ہند کا یک روزہ ورکشاپ۔ امیر جماعت نے کہا؛ ہر زمانے میں سخت اور چیلنجنگ حالات میں ہی دعوت دین کا کام انجام دیا گیا ہے

 جماعت اسلامی ہند حلقہ دہلی کا یک روزہ ورکشاپ برائے ذمہ دران حلقہ،انڈین انسٹی ٹیوٹ آف اسلامی اسٹڈیز ابو الفضل انکلیو، اوکھلا میں منعقد ہوا۔ ورکشاپ میں نئی میقات 2019تا2023کی پالیسی پروگرام کی تفہیم کرائی گئی۔ صبح 10  بجے  سے شام تک چلے اس ورکشاپ میں جماعت اسلامی ہند دہلی کے ...

ایک قوم‘ایک زبان معاملہ: سیاسی قائدین کی جانب سے شدید رد عمل کا اظہار

اداکار سے سیاست داں بنے جنوبی ہند چینائی کے کمل ہاسن نے ایک قوم ایک زبان کے معاملہ میں بی جے پی قومی صدر امیت شاہ پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستان 1950ء میں کثرت وحدت کے وعدے کے ساتھ جمہوریہ بناتھا اور اب کوئی شاہ یا سلطان اس سے انکار نہیں کرسکتا ہے۔

بی جے پی حکومت کی اُلٹی گنتی شروع: کماری شیلجہ

ہریانہ کانگریس کی ریاستی صدر اور رکن پارلیمنٹ کماری شیلجہ نے آج دعوی کیا کہ ریاست کی بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جےپی) حکومت کی الٹی گنتی شروع ہوگئی ہے کیونکہ عوام اس حکومت کی بدنظمی سے تنگ آچکے ہیں۔

جموں و کشمیر کے سابق سی ایم فاروق عبداللہ کو پی ایس اے کے تحت حراست میں لیا گیا

جموں و کشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ فاروق عبداللہ کی حراست لیا گیا ہے۔ان کے حراست کو لے کر سپریم کورٹ میں داخل عرضی پر سماعت کے دوران عدالت نے مرکزی حکومت کو ایک ہفتے کا نوٹس دے کر جواب دینے کے لئے کہا گیا ہے۔