حضرت عائشہؓ پر وسیم رضوی کی فلم کے بارے میں دہلی اقلیتی کمیشن کا نوٹس اور پروجکٹ پر مزید کام نہ کرنے عبوری حکم

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 19th September 2019, 2:06 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی 19/ستمبر (ایس او نیوز/راست)  میڈیا رپورٹوں اور دہلی کے کچھ باشندوں کی شکایت پر دہلی اقلیتی کمیشن نے شری وسیم رضوی کو ایک نوٹس بھیجا ہے۔ اطلاعات کے مطابق شری  رضوی حضور پاک ﷺ  کی زوجۂ طاہرہ حضرت عائشہؓ کے بارے میں ایک فلم بنارہے ہیں یا بنا چکے ہیں۔ انھوں نے اپنی فلم کا ایک ٹریلر ریلیز کیا ہے اور اس متنازع پروجیکٹ کے بارے میں بیانات بھی دیے ہیں۔اس فلم کی خبروں سے مسلمانان ہند سخت ناراض ہیں۔ شری رضوی کو کمیشن نے حکم دیا ہے کہ 2 اکتوبر تک اپنا جواب فائل کرکے بتائیں : (1) اس پروجیکٹ کا مقصد کیا ہے؛  (2) اس وقت یہ پروجیکٹ کس مرحلے میں ہے اور (3) کیا اس فلم کے لیے سینٹرل بورڈ آف فلم سرٹیفکیشن سے اجازت  لی گئی ہے یا اس کے لیے درخواست دی گئی ہے۔ کمیشن نے شری رضوی کو یہ حکم بھی دیا ہے کہ  کمیشن کو مذکورہ فلم یا اس کے ٹریلر کا سی ڈی فراہم کریں، سینٹرل بورڈ آف فلم سرٹیفکیشن کے اجازت نامے یا اس کے لیے دی گئی درخواست کی کاپی مہیا کریں اور فلم کی اسکرپٹ کے ساتھ اس کے لکھنے والے ، ریسرچ کرنے والے اورڈائرکٹر وغیرہ  کے نام بھی بتائیں۔

دہلی اقلیتی کمیشن نے اپنے آرڈر میں مزید کہا ہے: ’’چونکہ یہ بہت حساس مسئلہ ہے، اس  کی وجہ سے کروڑوں مسلمانوں کے جذبات مشتعل ہونگے اور بڑے پیمانے پر تشدد پھیل سکتا ہے نیز ہمارے ملک کی اس سے بےعزتی ہوگی، اس لیے جب تک یہ کیس نیم عدالتی اختیارات کی مالک دہلی اقلیتی کمیشن میں درج ہےآپ اس پروجیکٹ پر مزید کوئی کام نہیں کریں گے‘‘۔

اسی کے ساتھ دہلی اقلیتی کمیشن کے چیئرمین ڈاکٹر ظفر الاسلام خان نے سینٹرل بورڈ آف فلم سرٹیفکیشن کو  خط لکھ کر کہا ہے کہ ’’یہ فلم  حد درجے کی اہانت ہے جس سے کروڑوں مسلمانوں کے جذبات نہ صرف ہندوستان میں مشتعل ہونگے بلکہ دنیا کے بہت سے ملکوں میں بھی غصے کی لہر دوڑے گی کیونکہ پیغمبر اسلام کی زوجہ پر فلم نہیں بنائی جاسکتی ہے بلکہ ان کا کارٹون تک نہیں بنایا جاسکتا ہے۔ اگر ایسا ہوا تو ہماری سڑکوں پر تشدد پھیلے گا ۔ آپ سے درخواست ہے کہ اس اہانت انگیز فلم کو اجازت نامہ نہ دیں‘‘۔  اقلیتی کمیشن کے صدر نے اپنے خط میں مذکورہ بورڈ کو  مزید مطلع کیا  ہے کہ ’’اگر یہ فلم ریلیز ہوتی ہے تو ہم کم از کم صوبہ دہلی میں اس پر پابندی لگادیں گے‘‘۔

ایک نظر اس پر بھی

ملک میں گزشتہ 24 گھنٹے میں کورونا کے 6387 نئے معاملے، متاثرین کی تعداد 1.50 لاکھ سے متجاوز

ملک میں گزشتہ دو دنوں کے دوران کورونا انفیکشن کے نئے معاملوں میں جزوی کمی آئی اور تقریباً 4000 لوگوں کے صحت مند ہونے سے جہاں تھوڑی راحت ملی ہے، وہیں گزشتہ 24 گھنٹے میں انفیکشن کے 6387 نئے کیس سامنے آنے سے ملک میں اس سے متاثر ہونے والے لوگوں کی تعداد 1.50 لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے۔

گجرات کے سورت سے نکلی ٹرین ، بہار کے چھپرا کے بجائے پہنچی کرناٹک کے بنگلورو: مزدورں کا حال بے حال

لاک ڈاؤن کی مدت میں مزدوروں کو ان کے وطن لوٹانے گجرات سے نکلی ایک مزدور ٹرین (شریمک ریل ) بہار پہنچنے کے بجائے کرناٹکا کے بنگلورو پہنچ کر سب کو حیرت میں ڈال دیا ہے۔ گرچہ یہ ایک مذاق لگتا ہے مگر ہے حقیقت۔ اسی طرح اور ایک خصوصی مزدور ریل گجرات کے سورت سے 1200مزدوروں کو لے کر بہار کے ...

تبلیغی جماعت کے 57 غیر ملکی افراد عدالت سے بری، حکومت ہریانہ کو ان کے ملک بھیجنے کا حکم

  ہریانہ کی ایک عدالت نے اہم فیصلہ سناتے ہوئے سبھی چھ ممالک کے 57 غیرملکی جماعتیوں پرغیرملکی قوانین کے تحت عائد تمام دفعات کو بے بنیاد تسلیم کرتے ہو ئے سبھی جماعتیوں کو بری کردیا اورہریانہ حکومت کو حکم دیا کہ جلد سے جلد سبھی جماعت والوں کو ان کے ملک بھیجنے کا انتظام کرے۔ یہ بات ...

مزدور پیدل نہ جائیں، سب کے لئے مفت ریل سفر کے انتظامات: منیش سسودیا

  دہلی کے نائب وزیر اعلی منیش سسودیا نے تارکین وطن مزدوروں سے پیدل سفر نہ کرنے کی اپیل کی ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ دہلی حکومت نے تمام مفت ریل سفروں کا انتظام کیا ہے۔ 7 مئی سے 25 مئی تک ، 2،41،169 افراد کو 196 ٹرینوں کے ذریعے ان کے گھر بھیج دیا گیا ہے۔ بہار میں سب سے زیادہ 1،25،711 افراد ہیں ...

ملک میں پہلی بار 5 ہزار مسلمانوں نے عید کی نماز آن لائن ادا کی

 کورونا وائرس کے سبب جب لوگوں کو مسجد میں جا کر نمازیں پرھنے اورعبادت کرنے پرروک لگی ہوئی ہے اور مسلمان اجتماعی عبادت کے بجائے انفرادی عبادت کرنے پر مجبور ہیں تو ایسی استثنائی صورتحال میں نئی اور جدید ٹیکنالوجی کے استعمال کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے