بھٹکل میں17اور18اگست کو ہوگا  اقلیتی تعلیمی اداروں کی ہمہ جہت ترقی اور مسائل کے حل پر دوروزہ سیمنار؛ انجمن میں ہوئی پیشگی میٹنگ میں کئی اُمور پر تبادلہ خیال

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 9th July 2019, 2:38 AM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل:8؍جولائی  (ایس اؤ نیوز) انجمن حامئی مسلمین بھٹکل کی طرف سے سال رواں میں منائےجارہے  صدسالہ جشن کی  مناسبت سے  ساحلی پٹی کے اقلیتی تعلیمی اداروں کی ہمہ جہت ترقی، طلبا و طالبات میں اعلیٰ تعلیم کا شعور، اداروں کے مختلف مسائل اور ان کے حل کے متعلق اٹھائے جانے والے اقدامات جیسے اہم نکات پر  17اور 18اگست کو دوروزہ سمینار منعقد کیا جائے گا۔ اس بات کی اطلاع انجمن کے ذمہ داران نے  دی ہے۔

سمینار  کی پیشگی تیاری کے طورپر صدر انجمن عبدالرحیم جوکاکو کی صدارت میں انجمن کے صدر دفتر شمس الدین بلاک میں بھٹکل و اطراف کے اقلیتی تعلیمی  اداروں کے ذمہ داران کے ساتھ ایک اہم نشست کا انعقاد کیا گیا جس میں تعلیمی ماحول، مہارت (اسکل ) ڈیولیپمنٹ ، وکیشنل کورسس،  ڈپلوماکورسس، اساتذہ کے لئے تربیتی کیمپ، فنڈ کی کمی ،اپاہج بچوں کے لئے خصوصی اسکول، سرکاری اردو اسکولوں کو گود لینے ، جدید زمانے کے تحت انٹرنیٹ اور ٹکنالوجی کا استعمال ،اسکول فیس ،طلبا میں تخلیقیت، لڑکیوں کے لئے ہاسٹل کا قیام، اساتذہ کی مختلف طریقے سے ہمت افزائی ، قانونی رہنمائی  اور ریاستی زبان کنڑا کو ترجیح دینے وغیرہ کے متعلق میٹنگ میں  گفتگو ہوئی ۔

انجمن صد سالہ جشن کے کنونیر مولوی عبدالرقیب ایم جے ندوی، جنہوں نے ابتدا میں  مہمانوں کا استقبال کیا تھا، آخر  میں بتایا کہ اقلیتی  تعلیمی اداروں کے مسائل اور اس کے حل کے لئے اقلیتی تعلیمی وفاق قائم کیا جائے گا اور اس  میں  تمام اداروں کو شامل کیا جائےگا۔

میٹنگ میں انجمن کے جنرل سکریٹری صدیق اسماعیل نے مختلف سوالوں کے  جوابات  دیتے ہوئے کہاکہ مائنارٹی طلبا کے لئے ہمارے پاس ہاسٹل موجود ہے، اردو میڈیم اور اردو زبان کے لئے انجمن کی طرف سے کافی سہولیات فراہم کی جارہی  ہیں اس کی ترقی و ترویج کے لئے انجمن  ہمیشہ کوشاں رہی ہے۔ اسی طرح انہوں نے اداروں کے ذمہ داران کو بتایا کہ ہمارے ہاں کئی تجربہ کار اور سنئیر اساتذہ موجود ہیں اگر ان سے دیگر ادارے استفادہ چاہتےہیں تو انجمن  اس کے تعاون کے لئے تیار ہے۔

صدر انجمن عبدالرحیم جوکاکو نے صدارتی خطاب کرتے ہوئے کہاکہ انجمن کا بنیاد ی مقصد تعلیم اور صرف تعلم ہے، مگر اس کے ساتھ ہم چاہتے ہیں کہ اپنے ملی اداروں کے ساتھ انجمن کے بہتر روابط اور تعلقات قائم کرتےہوئے انہیں ایک پلیٹ فارم پر لایاجائے۔ ہمارے تجربے ان کے ساتھ شئیر کئے جائیں ، اسی سلسلےمیں یہ دو روزہ سیمنار منعقد کیا جارہاہے۔ جناب عبدالرحیم کے مطابق  مسلمان تعلیم کو لے کر احساس کمتری میں مبتلا ہیں، ان کے مطابق ہمارے ہاں  بھی معیاری تعلیم دی جاتی   ہے ۔ جناب عبدالرحیم نے بتایا کہ تعلیمی اداروں کے لئے فنڈ کا مسئلہ بہت اہم ہوتاہے اس کو حل کرنےکے سلسلےمیں بھی غور کیاجائے گا۔

وڈیو کانفرنس کے ذریعے دبئی سے  میٹنگ میں شریک ہوتے ہوئے  قائد قوم ڈاکٹر ایس ایم  سید خلیل الرحمن  نے  کہاکہ  ہمیں ہماری تعلیم کو معیاری بنانے کی طرف توجہ دینے کی ضرورت ہے، اسی طرح  ڈراپ آوٹ بچوں کو دوبارہ تعلیم گاہوں  کی طرف لانا اور ٹیکنالوجی کو عملی طورپر استعمال کرنے کی طرف توجہ دینا ضروری ہے۔ انجمن انجنئیرنگ کالج بھٹکل کے پرنسپال ڈاکٹر مشتاق بھاوی کٹی نے  پروجکٹر کے ذریعے کانفرنس کی تفصیلات پیش کیں۔ انجمن کے ایڈیشنل جنرل سکریٹری اسحاق شاہ بندری نے آخر میں شکریہ ادا کیا۔

میٹنگ میں انجمن کے عہدیداران ،ذمہ داران کے ساتھ ساتھ دیگر تعلیمی اداروں کے ذمہ داران بالخصوص  مولاناعبیداللہ کندلوری ندوی، محمد اسماعیل محتشم ، انجنئیر حافظ قاضی نذیر احمد ، مولانا طلحہ رکن الدین ندوی، ڈاکٹر  امین الدین گوڈا وغیرہ بھی موجود تھے۔  کمٹہ اور  سرسی وغیرہ سے بھی تعلیمی اداروں کے ذمہ داران  نے میٹنگ میں شریک ہوکر اپنی قیمتی آراء سے بحث میں حصہ لیا۔

ایک نظر اس پر بھی

کاروار میں ’سوچھ رتھ ‘موبائیل سواری کا اجراء: ضلع کو پاکیزہ بنانا ہم سب کی ذمہ داری ہے: جئے شری موگیر

اترکنڑا ضلع کو ’پاکیزہ ضلع‘ کی حیثیت سے ترقی دینا ہم سب کی ذمہ داری ہے۔ ضلع کو ریاست کا پہلا گندگی سے پاک ضلع بنانے کے لئے ہم سب کو کام کرنا ہے۔ اترکنڑا ضلع پنچایت کی صدر جئے شری موگیر نے ان خیالات کا اظہار کیا۔

شرالی میں پنچایت افسران کا دکانوں پر چھاپہ :28.45کلوگرام پلاسٹک ضبط

بھٹکل تعلقہ کے شرالی میں پلاسٹک کے استعمال سے غلاظت بھرے کچرے کا مسئلہ پیدا ہونے کے پیش نظر اور ضلع پنچایت سی ای اؤ کی ہدایات پر پیر کو شرالی گرام پنچایت حدود کے کئی دکانوں پر چھاپہ ماری کرتے ہوئے 28.45 کلوگرام وزنی پلاسٹک کی تھیلیاں ضبط کرنے کا واقعہ پیش آیاہے۔

ملکی معیشت  کے برے اثرات سے ہر شعبہ کنگال؛ بھٹکل میں بھی سونا اور رئیل اسٹیٹ زوال پذیر؛ کیا کہتے ہیں جانکار ؟

ملک میں نوٹ بندی  اور جی ایس ٹی کی وجہ سے ملکی معیشت پر سنگین اثرات مرتب ہونےکے متعلق ماہرین نے بہت پہلے سے چوکنا کردیا  تھا۔ اب اس کے نتائج بھی  ظاہر ہونے لگے ہیں۔ رواں سال کے دوچار مہینوں سے جو خبریں آرہی ہیں، اُس سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ ہمارے  ملک میں روزگاروں کا بےروز ...

ملکی معیشت  کے برے اثرات سے ہر شعبہ کنگال؛ بھٹکل میں بھی سونا اور رئیل اسٹیٹ زوال پذیر؛ کیا کہتے ہیں جانکار ؟

ملک میں نوٹ بندی  اور جی ایس ٹی کی وجہ سے ملکی معیشت پر سنگین اثرات مرتب ہونےکے متعلق ماہرین نے بہت پہلے سے چوکنا کردیا  تھا۔ اب اس کے نتائج بھی  ظاہر ہونے لگے ہیں۔ رواں سال کے دوچار مہینوں سے جو خبریں آرہی ہیں، اُس سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ ہمارے  ملک میں روزگاروں کا بےروز ...

 ای۔ ٹکٹ میں جعلسازی کے ذریعے منگلورو ایئر پورٹ پر غیر مجاز شخص کا داخلہ۔ ملزم گرفتار

بینہ طور پر ای۔ ٹکٹ میں جعلسازی کرتے ہوئے اپنا نام داخل کرکے منگلورو انٹرنیشنل ایئر پورٹ کے اندر ایک غیر مجاز شخص کے داخل ہونے کا معاملہ سامنے آیا ہے جس کے بعد سنٹرل انڈسٹریل سیکیوریٹی فورس کے افسران نے مذکورہ شخص کو حراست لے کر پولیس کے حوالے کردیا ہے۔