سمندری طوفان امفان سے ہندوستان اور بنگلہ دیش میں تباہی، 24 افراد ہلاک

Source: S.O. News Service | Published on 21st May 2020, 3:40 PM | ملکی خبریں | عالمی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

ڈھاکہ،21؍مئی (ایس او نیوز؍ایجنسی) سمندری طوفان امفان نے ہندوستان اور بنگلہ دیش کے ساحلی علاقوں میں تباہی مچا دی ہے جہاں اب تک مختلف واقعات میں 24 افراد ہلاک ہو گئے ہیں۔

دونوں ملکوں میں سمندری طوفان سے ہونے والی بیشتر ہلاکتیں دیواروں، بجلی کے کھمبوں اور درختوں کے گرنے کی وجہ سے ہوئی ہیں۔

جمعرات کی صبح امفان طوفان بنگلہ دیش کے ساحل سے ٹکرایا۔ طوفان نے بھارت کے ساحلی علاقوں میں بھی بڑے پیمانے پر تباہی مچائی ہے۔

خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس کے مطابق  ہندوستانی  ریاست مغربی بنگال میں 12 اور بنگلہ دیش میں 10 افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

ہندوستان کی مشرقی ریاست اوڈیشا (اڑیسہ) میں بھی بڑے پیمانے پر تباہی ہوئی ہے جہاں ابتدائی طور پر دو افراد کے ہلاکتوں کی تصدیق ہوئی ہے۔ ریاست میں مزید اموات کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔

مغربی بنگال کے صدر مقام کولکتہ میں نظامِ زندگی درہم برہم ہو گیا ہے جب کہ شہر کے مرکزی ہوائی اڈے کو بند کر دیا گیا ہے جس کی عمارت کو بھی نقصان پہنچا ہے۔

بدھ کی سہ پہر بنگلہ دیش اور ہندوستان کے ساحلی علاقوں میں چلنے والی ہواؤں کی رفتار 170 کلو میٹر فی گھنٹہ تھی۔ ہواؤں کی زیادہ سے زیادہ شدت 190 کلو میٹر فی گھنٹہ ریکارڈ کی گئی تھی۔

تیز ہواؤں کے ساتھ آندھی اور تیز رفتار بارش کے باعث ساحلی علاقوں میں لکڑی سے بنے مکانات اڑ گئے اور کئی مقامات پر درخت اور بجلی کے کھمبے اُکھڑ گئے۔

ہندوستانی ریاست مغربی بنگال کی وزیرِ اعلیٰ ممتا بینرجی نے کہا ہے کہ طوفان کے بعد ریاست کا مرکز سے رابطہ منتقطع ہو گیا ہے۔ بیشتر علاقوں میں بجلی اور مواصلاتی نظام تباہ ہے جس کے باعث طوفان کے نتیجے میں ہونے والے نقصان کے متعلق فوری طور پر کچھ نہیں کہا جا سکتا۔

ان کے بقول جنوبی بنگال کے گنجان آباد علاقے سب سے زیادہ متاثر ہیں جہاں تین قسم کے بحرانوں کا سامنا ہے۔

ممتا بینرجی نے کہا کہ ریاست کو کرونا وائرس کے علاوہ لاک ڈاؤن کے باعث مختلف شہروں سے واپس آنے والے ہزاروں مزدوروں اور اب طوفان کی صورت میں بحران کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

دوسری جانب بنگلہ دیش کے وزیرِ توانائی کا کہنا ہے کہ سمندری طوفان کے بعد پیدا ہونے والی صورتِ حال کی وجہ سے کم از کم 10 لاکھ افراد بجلی سے محروم ہو گئے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

کورونا: ہندوستان میں ہلاکتوں کی تعداد 46 ہزار کے پار، 24 گھنٹے میں پھر 60 ہزار سے زائد کیسز درج

ہندوستان میں کورونا وائرس کے بڑھتے قہرکے درمیان اس جان لیوا وبا سے شفایابی حاصل کرنے والوں کی تعداد میں بھی تیزی سے اضافہ ہورہا ہے اور گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 56 ہزار سے زیادہ افراد کی شفایابی کے بعد اب تک تقریبا 16.40 لاکھ صحت مند ہوئے ہیں۔

لبنان کی ہرحکومت حزب اللہ کو غیر مسلح کرنے کی پابند ہو گی: امریکا

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں امریکی مندوب کیلی کرافٹ نے منگل کے روز العربیہ کے ساتھ ایک انٹرویو میں کہا ہے کہ لبنان کی کوئی بھی حکومت حزب اللہ کو اسلحہ کے حصول سے باز رکھنے کی پابند ہو گی۔ ان کا کہنا تھا کہ اقوام متحدہ کی لبنان میں تعینات امن فوج ' UNIFIL' جنوبی لبنان میں اپنا مشن ...

ترکی کے وزیر دفاع کا دورہ بغداد منسوخ، سرحدی خلاف ورزی پر عراق کا شدید احتجاج

دو روز قبل ترکی کے ایک مسلح ڈرون طیارے کے حملے میں عراق کے صوبہ کردستان میں دو عراقی افسروں اور ایک فوجی کے قتل کے بعد بغداد اور انقرہ کے درمیان سخت کشیدگی سامنے آئی ہے۔ عراق نے ترک وزیر دفاع کے کل جمعرات کے روز ہونے والے دورہ بغداد کی اجازت دینے سے انکار کر دیا ہے۔ اس کے علاوہ ...

پاکستان اپنی برآمدات میں 12 ارب ڈالرز تک اضافہ کر سکتا ہے: عالمی بینک

عالمی تجارتی تنظیم انٹرنیشنل ٹریڈ سینٹر (آئی ٹی سی) نے اپنی تازہ رپورٹ میں کہا ہے کہ کرونا وبا کے باوجود پاکستان اپنے تجارتی شعبے میں اصلاحات لا کر آئندہ تین سال کے دوران اپنی برآمدات میں 12 ارب ڈالرز اضافہ کر سکتا ہے۔ ...

باپ کی املاک پر بیٹی کا بیٹے کی طرح یکساں حق: سپریم کورٹ

سپریم کورٹ نے منگل کو ایک دور رس نتائج والے اپنے فیصلہ میں کہا ہے کہ ہندو غیر منقسم خاندان کی آبائی املاک میں بیٹی کو بیٹے کی طرح ہی حقوق حاصل ہوں گے، یہاں تک کہ اگر ہندو جانشینی (ترمیمی) ایکٹ 2005 کے نفاذ سے قبل ہی اس کے والد کی موت کیوں نہ ہوگئی ہو۔

بنگلور: ٹرانسفرس کے احکامات ملتوی کرانے میں مبینہ طور پر با رسوخ اساتذہ کی لابی شامل، چار سال سے ڈگری کالجوں کے لکچررس کے تبادلے نہیں ہوسکے

ریاست کرناٹک کے سرکاری فرسٹ گریڈ کالجوں میں خدمات انجام دے رہے لکچررس کے تبادلے نہیں ہوسکے ہیں، جس کے سبب انہیں کافی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اس تعلق سے الزامات لگائے جارہے ہیں کہ  چند با رسوخ لکچررس کی طرف سے سیاسی اثر و رسوخ کا استعمال کرکے تبادلوں کی کاروائی ملتوی ...