کووِڈ کے علاج میں ایک نئی پیش رفت۔ کینسر اسپتال کے ڈاکٹروں نے تلاش کیا ایک نیا طریقہ۔ تجرباتی مرحلے پر ہورہا ہے کام!

Source: S.O. News Service | Published on 23rd May 2020, 1:06 PM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

بنگلورو،23؍مئی (ایس او نیوز) سر اور گلے کے کینسر اورروبوٹک سرجری کے ماہر ڈاکٹر وشال راؤ کا کہنا ہے کہ ایچ سی جی کینسر اسپتال میں کووِڈ 19کے علاج کے لئے ڈاکٹروں نے ایک نئے طریقے پر کام کرنا شروع کیا ہے جس میں خون کے اندر موجود سائٹوکینس نامی ہارمون کا استعمال کیا جائے گا۔اس بات کی رپورٹ معروف انگریزی روزنامہ بنگلورمِرر نے  شائع کی ہے۔

اخبار نے ڈاکٹر وشال کے حوالے سے لکھا ہے کہ  ابھی اس طریقہ علاج کی توثیق نہیں کی گئی ہے مگر اس پر تجرباتی مرحلے میں کام ہورہا ہے اور 25؍مئی سے انسانوں پر اس کا تجربہ شروع کیا جائے گا۔اسپتال کے ڈاکٹروں کو امید ہے کہ کووِڈ کے مریض کے جسم میں سائٹو کینس داخل کرنے پر وہ خون کے اندر قوت مدافعت بڑھانے کا کام انجام دیں گے۔ کیونکہ قدرتی طورپر ہمارے جسم میں گلے کے اندر ایک گلٹی(گلانڈ) ہوتی ہے جسے تھائمس کہتے ہیں اور اس کا کام ہی یہ ہوتا ہے کہ جب جسم کو بیرونی جرثومے یا وائرس سے خطرہ ہوتا ہے تو وہ سائٹوکن نامی ہارمون خارج کرکے جسم کے مدافعتی عمل کو لڑنے کے لئے تیار ہونے کا پیغام دیتی ہے۔

تجربے سے یہ بات ثابت ہوئی ہے کہ بچوں اور نوجوانوں کے اندر کووِڈ کا حملہ ہونے کے بعد یہ گلٹی اپنا کام تیزی سے کرتی ہے اور ابتدائی مرحلے میں انفیکشن سے جنگ کرکے جسم کو صحت مندر رکھنے کی ذمہ داری اداکرتی ہے۔ لیکن 65سال سے زائد عمر کے لوگوں میں یہ گلٹی چونکہ قدرتی طور پر بوسیدہ اور کمزور ہوچکی ہوتی ہے اس لئے یہ اس تیزی کے ساتھ کام نہیں کرپاتی جس کی وجہ سے عمر رسیدہ افراد میں کووِڈ کا اثر بہت ہی سنگین ہوجاتا ہے اور قوت مدافعت اس حالت میں نہیں رہتی ہے کہ وہ بیرونی حملے کا مقابلہ کرسکے۔

اب جس نئے طریقے پر کام ہورہا ہے اس کے مطابق ایک صحت مند انسان کے جسم سے 2ملی میٹر کے قریب خون لے کر اس میں سے تھائمس سیلس کو الگ کیا جائے گاپھر ان سیلس پر وائرس کا حملہ مصنوعی طریقے سے کیا جائے گا۔ جس کے بعد یہ سیلس قوت مدافعت بڑھا نے کا سگنل دینے والا ہارمون سائٹو کینس تیار کریں گے۔ پھر اس ہارمون کو کووِڈ کا حملہ ہوتے ہی ابتدائی مرحلے میں اگر مریض کے جسم میں انجکشن کے ذریعے داخل کیا جائے گا تو وہ مریض کے اندر موجود ہلکی علامات کو فوری طور پر ختم کرنے اور وائرس کے اثر کو مزید آگے بڑھنے سے روکنے کے لئے ایک مدافعتی فوج تیار کروانے کا کام کرے گا۔یعنی مریض کے جسم کو ایک ’خصوصی طاقت‘ مل جائے گی اور ابتدائی مرحلے میں یہ علاج بہت ہی کامیاب ثابت ہوگا۔

ماہر ڈاکٹروں کی ٹیم رضاکارانہ طور پر آگے آنے والے چند افراد پر اس کا تجربہ کررہی ہے۔ انہوں نے بتایا ہے کہ یہ جو طریقہ ہے وہ ’ویکسین‘ اور ’پلازما تھیراپی‘ سے بالکل جداگانہ ہے۔ان ڈاکٹروں نے یہ بھی واضح کیا کہ جن مریضوں کی حالت بہت ہی بگڑ گئی اور سنگین مرحلے میں ہوں تو پھر ان کے لئے ’اسٹیم سیل تھیراپی‘ ہی واحد طریقہ علاج ہوسکتا ہے، جسے چین میں کامیابی کے ساتھ آزمایا جاچکا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک میں تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے کورونا؛ 122 نئے کیسس، صرف گلبرگہ میں ہی 29 پوزیٹو کی تصدیق، دکشن کنڑا اور اُڈپی میں بھی بڑھ رہے ہیں معاملات

ریاست کرناٹک میں  کورونا کیسس تھمنے کا نام نہیں رہے ہیں اور ہرروز سو سے زائد معاملات درج کئے جارہےہیں ۔ آج بدھ کو ریاست میں 122 کورونا پوزیٹو کیسس کی تصدیق کی گئی ہے جس میں سب سے زیادہ گلبرگہ سے 28 معاملات سامنے آئے ہیں، یادگیر سے16، ہاسن سے 15جبکہ ضلع اُترکنڑا میں چھ،  پڑوسی ضلع ...

گجرات کے سورت سے نکلی ٹرین ، بہار کے چھپرا کے بجائے پہنچی کرناٹک کے بنگلورو: مزدورں کا حال بے حال

لاک ڈاؤن کی مدت میں مزدوروں کو ان کے وطن لوٹانے گجرات سے نکلی ایک مزدور ٹرین (شریمک ریل ) بہار پہنچنے کے بجائے کرناٹکا کے بنگلورو پہنچ کر سب کو حیرت میں ڈال دیا ہے۔ گرچہ یہ ایک مذاق لگتا ہے مگر ہے حقیقت۔ اسی طرح اور ایک خصوصی مزدور ریل گجرات کے سورت سے 1200مزدوروں کو لے کر بہار کے ...

ہائی کورٹ فیصلے کے بعد ہی ایس ایس ایل سی امتحانات

ایس ایس ایل سی امتحانات منسوخ کئے جانے کی اپیل کرتے ہوئے ہائی کورٹ میں ایک مفاد عامہ عرضی داخل کی گئی ہے۔ اس عرضی پر سماعت اور تصفیہ کے بعد ہی امتحان کے تعلق سے مزید تفصیلات پیش کی جاسکیں گی۔

کیا کرناٹکا میں یکم جون سے مسجد، گرجا گھر اور مندروں کو کھولنے کی دی جائے گی اجازت ؟

کورونا وائرس کے انفیکشن کو پھیلنے سے روکنے کے لئے ملک میں لاک ڈاؤن لاگو ہے۔لاک ڈاؤن 4.0 میں حکومت کی جانب سے بہت سی مراعات دی گئی ہیں، تاہم مندر، مسجد کو لے کر پابندیاں جاری ہیں لیکن حکومت نے لاک ڈاؤن میں رعایت کو لے کر ریاستوں کو بھی فیصلہ لینے کا حق دیا تھا۔دریں اثنا کرناٹک ...

ملک میں گزشتہ 24 گھنٹے میں کورونا کے 6387 نئے معاملے، متاثرین کی تعداد 1.50 لاکھ سے متجاوز

ملک میں گزشتہ دو دنوں کے دوران کورونا انفیکشن کے نئے معاملوں میں جزوی کمی آئی اور تقریباً 4000 لوگوں کے صحت مند ہونے سے جہاں تھوڑی راحت ملی ہے، وہیں گزشتہ 24 گھنٹے میں انفیکشن کے 6387 نئے کیس سامنے آنے سے ملک میں اس سے متاثر ہونے والے لوگوں کی تعداد 1.50 لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے۔

گجرات کے سورت سے نکلی ٹرین ، بہار کے چھپرا کے بجائے پہنچی کرناٹک کے بنگلورو: مزدورں کا حال بے حال

لاک ڈاؤن کی مدت میں مزدوروں کو ان کے وطن لوٹانے گجرات سے نکلی ایک مزدور ٹرین (شریمک ریل ) بہار پہنچنے کے بجائے کرناٹکا کے بنگلورو پہنچ کر سب کو حیرت میں ڈال دیا ہے۔ گرچہ یہ ایک مذاق لگتا ہے مگر ہے حقیقت۔ اسی طرح اور ایک خصوصی مزدور ریل گجرات کے سورت سے 1200مزدوروں کو لے کر بہار کے ...

تبلیغی جماعت کے 57 غیر ملکی افراد عدالت سے بری، حکومت ہریانہ کو ان کے ملک بھیجنے کا حکم

  ہریانہ کی ایک عدالت نے اہم فیصلہ سناتے ہوئے سبھی چھ ممالک کے 57 غیرملکی جماعتیوں پرغیرملکی قوانین کے تحت عائد تمام دفعات کو بے بنیاد تسلیم کرتے ہو ئے سبھی جماعتیوں کو بری کردیا اورہریانہ حکومت کو حکم دیا کہ جلد سے جلد سبھی جماعت والوں کو ان کے ملک بھیجنے کا انتظام کرے۔ یہ بات ...

مزدور پیدل نہ جائیں، سب کے لئے مفت ریل سفر کے انتظامات: منیش سسودیا

  دہلی کے نائب وزیر اعلی منیش سسودیا نے تارکین وطن مزدوروں سے پیدل سفر نہ کرنے کی اپیل کی ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ دہلی حکومت نے تمام مفت ریل سفروں کا انتظام کیا ہے۔ 7 مئی سے 25 مئی تک ، 2،41،169 افراد کو 196 ٹرینوں کے ذریعے ان کے گھر بھیج دیا گیا ہے۔ بہار میں سب سے زیادہ 1،25،711 افراد ہیں ...

ملک میں پہلی بار 5 ہزار مسلمانوں نے عید کی نماز آن لائن ادا کی

 کورونا وائرس کے سبب جب لوگوں کو مسجد میں جا کر نمازیں پرھنے اورعبادت کرنے پرروک لگی ہوئی ہے اور مسلمان اجتماعی عبادت کے بجائے انفرادی عبادت کرنے پر مجبور ہیں تو ایسی استثنائی صورتحال میں نئی اور جدید ٹیکنالوجی کے استعمال کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے