کرونا وبا کی دردناک کہانی: والدین کو کھونے والے یتیموں کی زندگی کی راہ کیا ہوگی ؟

Source: S.O. News Service | Published on 3rd May 2021, 4:56 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی ،3؍مئی (ایس او نیوز؍ایجنسی) ایک 14 سالہ بچہ اپنے والدین کی لاش کے پاس اپنے گھر میں گھنٹوں بیٹھا رہا۔ بچے کے والدین کرونا وبا کی نذر ہوگئے ، شمالی دہلی میں واقع اپنے گھر میں رہنے والے اس بچے کو کسی رشتے دار کے گھر جانے میں ہمت کرنی پڑی۔ ایک این جی او میں کام کرنے والے ایک کارکن نے بتایا کہ یہ بچہ کئی منٹ خاموش رہا اور بمشکل کچھ بھی بول سکا۔ لڑکے کی والدہ کی عمر 35 سے 40 سال کے درمیان رہی ہوگی، سب سے پہلے والدہ میں کرونا کی علامت نظر آئی ،پھر اس کے 41 سالہ والدبھی کرونا کی زد میں آگئے ۔

ایک ڈاکٹر نے کچھ دوائیں لکھ کر دیں، دیگر اہل خانہ آکسیجن سلنڈر حاصل کرنے میں کامیاب ہوگئے ،لیکن بدقسمتی یہ کہہ لیں کہ اس بچہ کے والدین گھر میں ہی بیماری کے شکار ہوکر دم توڑ گئے۔اس جوڑے کی طرح کورونا کی اس دوسری لہر میں کتنے افرادکی موت ہوگئی اور ہندوستانی طبی نظام بے بسی کے عالم میں دیکھتا رہا، لیکن کچھ کرنے سے قاصر تھا۔ اس عمر کے کئی سارے بچے ایسے ہیں ،جن کے والدین کی موت کورونا وائرس کے باعث ہوئی۔

دہلی حقوق اطفال کمیشن

ڈی سی پی سی آر کی چیئرپرسن انوراگ کنڈو نے کہا کہ انہیں بہت سی ایسی اطلاع ملی ہیں ، جن میںبچے تنہا چھوڑدیئے گئے،کیونکہ ان کے والدین اسپتال میں داخل تھے، یا بچہ اپنا پوراہی خاندان کھو چکا ہے ۔ کنڈو نے بتایا کہ حالت یہ ہے کہ کئی بار ان کو کھانا دینے والا کوئی نہیں ہے۔ ایک ڈی سی پی سی آر رضاکار نے بتایا کہ ہماری این جی او نے 14 سال کے لڑکے کے رشتہ دار سے رابطہ کیا ہے، ہم ایسے بچوں کو بہتر گھر کی تلاش میںرابطہ قائم کرنے میں مدد کریں گے۔

تاہم رشتہ دار نے کسی بھی ادارہ کی مدد لینے سے انکار کردیا ہے ۔کنڈو نے بتایا کہ کم از کم دو معاملہ میں بچوں کو ان کی حالت پر چھوڑدیا گیا ہے ، ہم انہیں دہلی کے ایک پناہ گاہ منتقل کر چکے ہیں ، یہاں تک کہ ہم ان کے لئے ایسی فیملی تلاش کررہے ہیں، جو ان کی دیکھ بھال کرسکیں اور انھیں بہتر مستقبل دے سکیں ۔کنڈو نے کہا کہ لوگ ہمیشہ ایسے بچوں کو قبول کرنے کے لئے تیار رہتے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

دہلی پولیس کا شری نیواس بی وی سے پوچھ گچھ کرنا سیاسی انتقام کے سوا کچھ نہیں ہے۔ ایس ڈی پی آئی

سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (ایس ڈی پی آئی) کے قومی جنرل سکریٹری کے ایچ عبدالمجید نے اپنے جاری کردہ اخباری بیان میں دہلی میں کوویڈ وبائی مرض سے متعلق امدادی سرگرمیوں میں حصہ لینے والے انڈین یوتھ کانگریس کے صدر شری نیواس بی وی سے دہلی پولیس کی جانب سے پوچھ گچھ کا سخت نوٹس  ...

کورونا کا خاتمہ جولائی تک نہیں ہوگا: ایکسپرٹ

جس طرح کورونا کے نئے معاملوں کی تعداد میں کمی درج ہو رہی ہے اس سے یہ امید بنی ہے کہ ہندوستان میں کورونا کی دوسری لہر کا خاتمہ جلد ہو جائے گا لیکن وبائی بیماریوں کے ماہر شاہد جمیل کا کہنا ہے کہ بھلے ہی ابھی کچھ ریاستوں میں کورونا کے کیس کم ہوتے نظر آ رہے ہوں لیکن دوسری لہر کا ...

سادگی کے ساتھ عید منائیں اور چھوٹی جماعت کے ساتھ عید کی نماز ادا کریں ، سرکردہ مسلم رہنماوں کی مسلمانوں سے اپیل

آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کے صدر مولانا رابع حسنی ندوی ۔ جمعیت علماءہند کے صدر مولانا ارشد مدنی ۔ جماعت اسلامی ہند کے امیر سید سعادت اللہ حسینی سمیت دیگر سرکردہ علماء اور مسلم قائدین مسلمانوں نے اپیل کی ہے کہ وہ کرونا کے بڑھتے خطرات کے پیش نظر احتیاط کریں اور مختصر جماعت ...

لاک ڈاؤن پر ہو سختی سے عمل: اشوک گہلوت

راجستھان میں عالمی وبا کورونا کی دوسری لہر کی چین توڑنے کے لئے آج صبح 5بجے سے لے کر 24 مئی تک سخت لاک ڈاؤن نافذ ہوگیا ہے۔ اس مدت کے دوران، ہنگامی اور ضروری خدمات، میڈیکل، دودھ اور دیگر ضروری خدمات کے لئے رعایت رہے گی۔