مہاراشٹرمیں کورونا کی وبا رکنےکا نام نہیں لے رہی

Source: S.O. News Service | Published on 27th July 2020, 11:07 AM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی،27؍جولائی(ایس او نیوز؍یو این آئی) ہندوستان میں کورونا وبا بہت تیزی سے پھیل رہی ہے اورہندوستان کی مختلف ریاستوں سےاچھی خبریں نہیں آرہی ہیں۔مختلف ریاستوں کی صورتحال پر نظر ڈالیں تو سب سے زیادہ کورونا کے متاثر مہاراشٹر میں ہیں اور کل انفیکشن کے 9431نئے معاملے سامنے آئے ہیں اور 267لوگوں کی موت ہوگئی۔ یہاں اب متاثرین کا اعداد وشمار 3,75,799اور مرنے والوں کی تعداد 13,656ہے جبکہ 2,13,238لوگ اس سے ٹھیک ہوئے ہیں۔

انفیکشن کے معاملے میں دوسرے پر تملناڈو میں اس دوران 6986نئے معاملے سامنے آئے اور 85لوگوں کی موت ہوئی جس سے متاثرین کی تعداد 2,13,723اور مرنے والوں کا اعدادو شمار 3494ہوگیا ہے۔ ریاست میں 1,56,526لوگوں کو اسپتال سے چھٹی دی جاچکی ہے۔

قومی راجدھانی دہلی میں کورونا کی صورتحال اب کچھ کنٹرول میں ہے اور یہاں انفیکشن کے معاملات میں اضافہ کی شرح تھوڑی کم ہوئی ہے۔ راجدھانی میں اب تک 1,30,606لوگ کورونا کی زد میں آئے اور اس کی وجہ سے مرنے والوں کی تعداد 3,827ہوگئی ہے۔یہاں اب تک 1,14,875مریض ٹھیک ہوئے ہیں۔

بہار میں تمام اقدامات کے باوجود صرف پٹنہ ضلع میں 620سمیت ریاست میں انفیکشن کے 2605نئے معاملات کی تصدیق کے بعد کل پازیٹیو کی تعداد بڑھ کر 38919ہوگئی اور 17متاثرہ افراد اپنی جان گنوا بیٹھے۔

آندھراپردیش میں متاثرین کی تعداد کے معاملے میں اب چوتھے نمبر پر پہنچ گیا ہے۔ ریاست میں 96,298لوگ متاثر ہوئے ہیں اور 1041لوگوں کی اس سے موت ہوئی ہے جبکہ 46,301لوگ صحت یاب بھی ہوئے ہیں۔

پانچویں نمبر پر واقع کرناٹک میں اب تک 96,141لوگ متاثر ہوئے ہیں اور 1878لوگوں کی موت ہوئی ہے۔ ریاست میں اب تک 35,838مریض ٹھیک ہوئے ہیں۔

آبادی کے حسا ب سے ملک کی سب سے بڑی ریاست اترپردیش کورونا کے معاملے میں گجرات کو پیچھے چھوڑ کر چھٹے نمبر پر آگیا ہے۔ ریاست میں اب تک 66,988معاملے سامنے آئے اور اس وبا سے 1426لوگوں کی موت ہوئی ہے جبکہ 41,641مریض ٹھیک ہوے ہیں۔

اس ردمیان مغربی بنگال گجرات کو پیچھے چھوڑتے ہوئے ساتویں نمبر پر پہنچ گیا ہے۔ بنگال میں اب تک58,718معاملے سامنے آئے ہیں اور 1372لوگوں کی موت ہوئی ہے جبکہ 37,751مریض ٹھیک ہوئے ہیں۔

گجرات انفیکشن کے معاملے میں آٹھویں نمبر پر ہے لیکن مرنے والوں کی تعداد کے معاملے میں مہاراشٹر، دہلی اور تملناڈو کے بعد چوتھے نمبر پر ہے۔ گجرات میں 55,822لوگ وائرس سے متاثر ہوئے ہیں اور 2322لوگوں کی موت ہوئی ہے۔ ریاست میں 40,467لوگ اس بیماری سے ٹھیک ہوئے ہیں۔تلنگانہ میں آج کا اعدادوشمار نہیں مل سکا۔ یہاں کل تک کورونا کے مریضو ں کی تعداد 54,059ہوگئی تھی اور 463لوگوں کی موت ہوچکی ہے جبکہ 41,332لوگ اس بیماری سے ٹھیک ہوئے ہیں۔

بہار میں 2600سے زیادہ نئے معاملے آنے کے ساتھ ہی متاثرین کی مجموعی تعداد 38,919ہوگئی ہے اور مرنے والوں کی تعداد 249ہوگئی ہے جبکہ اب تک 26,308مریض ٹھیک ہوئے ہیں۔

اس دوران راجستھان میں 1132نئے کورونا مریض سامنے آنے کے ساتھ ہی اتوار کویہاں اس کی تعداد بڑھ کر 36,430ہوگئی اور گیار ہ مزید لوگوں کی موت ہوگئی۔

کورونا سے مدھیہ پردیش میں 811، ہریانہ میں 392، جموں وکشمیر میں 312، پنجاب میں 306، اوڈیشہ میں 174، جھارکھنڈ میں 83، آسام میں 79، اتراکھنڈ میں 63، کیرالہ میں 62، چھتیس گڑھ میں 43، پڈوچیری میں 40، گوا میں 35، چندی گڑھ، ہماچل پردیش اور تریپورہ میں 13-13، میگھالیہ میں پانچ، نالگالینڈ میں چار، اروناچل پردیش اور لداخ میں تین تین اور دادر ناگرحویلی اور دمن دیو میں دو دو لوگوں اور سکم میں ایک شخص کی موت ہوئی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

ایردوآن نے یو این میں اٹھایا مسئلہ کشمیر، ’اندرونی معاملات میں دخل نہ دے ترکی‘ انڈیا کی تاکید

 جموں و کشمیر کے حوالہ سے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں ترکی کے صدر رجب طیب اردوآن کے بیان پر اقوام متحدہ میں ہندوستان کے مستقل نمائندہ ٹی ایس ترومورتی نے سخت احتجاج کرتے ہوئے کہا ہے کہ ترکی کو دوسرے ممالک کی خودمختاری کا احترام کرنا سیکھنا چاہئے۔

ممبئی میں طوفانی بارش سے سیلابی صورتحال، عام زندگی مفلوج، متعدد رہائشی کالونیاں زیر آب

ملک کی تجارتی راجدھانی ممبئی میں گزشتہ شب سے جاری بھاری بارش کی وجہ سے سیلابی صورتحال پیدا ہوگئی ہے۔ ستمبر کے مہینے میں اس طرح کی بارش نے ایک بار پھر شہر کی عام زندگی کو مفلوج کرکے رکھ دیا ہے۔

ممبئی میں طوفانی بارش سے سیلابی صورتحال، عام زندگی مفلوج، متعدد رہائشی کالونیاں زیر آب

ملک کی تجارتی راجدھانی ممبئی میں گزشتہ شب سے جاری بھاری بارش کی وجہ سے سیلابی صورتحال پیدا ہوگئی ہے۔ ستمبر کے مہینے میں اس طرح کی بارش نے ایک بار پھر شہر کی عام زندگی کو مفلوج کرکے رکھ دیا ہے۔