کرناٹک میں آج کورونا کے مزید 45 معاملے آئے سامنے؛ دبئی سے لوٹنے والے 20 لوگوں کی رپورٹ آئی پوزیٹو؛ ضلع جنوبی کینرا کے 16 اور اُُڈپی کے 5 لوگ پائے گئے کورونا سے متاثر

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 15th May 2020, 1:40 PM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

بنگلور15/مئی (ایس او نیوز) ملک بھر میں لاک ڈاون چل رہا ہے ، مگر نوول کورونا وائرس کے اثرات کم ہونے کے بجائے بڑھتے جارہے ہیں، آج جمعہ کو ریاست کرناٹک میں 45 نئے معاملات کے سامنے آنے کے ساتھ ہی  کورونا مریضوں کی تعداد کا اکڑہ ایک ہزار کو بھی کراس کرگیا ہے۔ ہیلتھ بلٹین میں دی گئی اطلاع کے مطابق کل جمعرات شام پانچ بجے سے آج جمعہ صبح بارہ بجے تک جملہ 45 کورونا متاثرین پائے گئے ہیں جس کی بنا پر ریاست میں کورونا سے متاثرہ لوگوں کی تعداد بڑھ کر 1032 ہوگئی ہے۔

خیال رہے کہ 1032 کورونا کے معاملوں میں اب تک 35 لوگوں کی موت بھی ہوچکی ہے جبکہ 476 لوگ صحتیاب ہوکراسپتالوں سے ڈسچارج بھی ہوچکے ہیں۔ اس طرح مختلف اسپتالوں میں کورونا کے 520 ایکٹیو کیسس ہیں۔

 آج کے نئے کیسس میں  16 کا تعلق ضلع جنوبی کینراسے ہے، 13 بنگلور سے اور پانچ اُڈپی سے ہے۔ ہاسن اور بیدر سے  تین معاملات، چتردرگہ سے دو معاملات  اور باگلکوٹ، شموگہ اور کولار سے ایک ایک معاملے سامنے آئے ہیں۔

ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق آج کے نئے کورونا معاملات میں 20 لوگ دبئی  سے لوٹے ہوئے لوگ  ہیں، ممبئی سے  آئے ہوئے چار لوگ اور چینائی سے آئے ہوئے تین لوگ شامل ہیں۔ بتایا گیا ہے دیگر جن لوگوں کی رپورٹس کورونا پوزیٹو آئی ہے وہ کنٹینمنٹ زون کے  رابطے والے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو: گئو رکھشکوں پر دائر مقدمات واپس لیے جائیں گے۔ وزیر مویشی پالن کی یقین دہانی

وزیر برائے مویشی پالن پربھو چوہان نے ضلع انتظامیہ کےساتھ جائزاتی میٹنگ کےبعد پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ گئو رکھشکوں کے خلاف جو مقدمات درج کیے گئے ہیں، ریاستی حکومت کی طرف سے وہ مقدمات واپس لیے جائیں گے۔

بیلاری میں کو ويڈویکسین لگانے کے24 ؍گھنٹوں میں ایک شخص کی موت، دل کا دورہ پڑنے سے ہوئی تھی موت، حکومت کی وضاحت

بیلاری ضلع ڈپٹی کمشنر اور ضلع میڈیکل آفیسر نے بیلاری میں کوویڈ ۔19 لگانے کے 24؍ گھنٹوں کے اندر ہی فوت ہوجانے والے ہیلتھ ورکر 43؍ سالہ ناگراج کے تعلق سے پھیلی افواہوں کی وضاحت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ناگراج کی موت دراصل دل کا دورہ پڑنے سے ہوئی ہے۔ ویکسین لگانے کے اثر سے نہیں ۔

بنگلورو انٹرنیشنل ایئرپورٹ پرکسٹم آفسر کی بیگ سے برآمد ہوئے 74 لاکھ روپئے نقد

بنگلور کے کیمپے گوڈا انٹرنیشنل ائرپورٹ پر منگل کی صبح ایک عجیب واقعہ پیش آیا جب سیکوریٹی چیکنگ کے دوران ایک  آف ڈیوٹی کسٹم آفسر نے   اپنا کیبین لگیج کھول کر دکھانے سے انکار کیا، اس کاروائی کےدوران قطار میں کھڑی اس کی اہلیہ  ٹوائلیٹ چلی گئی۔ بعد میں پتہ چلا کہ  متعلقہ کسٹم ...

22؍جنوری کا بنگلورو بند ملتوی، ڈی جے ہلی کے جی ہلی کیسوں میں ضمانتوں کی شروعات کے بعد تنظیموں کا اعلان

بنگلورو شہر کے ڈی جے ہلی اور کے جی ہلی تشدد کے سلسلہ میں گرفتار نوجوانوں کی رہائی کے لئے فوری اقدامات پر زور دینے کے لئے کرناٹک کی متعدد تنظیموں کی طرف سے 22جنوری کو بندمنانے کا جو اعلان کیا گیا تھا اسے ان تنظیموں نے ٹال دیا ہے۔

ٹیکہ لگوانا ذاتی فیصلہ، لوگوں کا بھروسہ دھیرے دھیرے بڑھے گا: وزیر صحت ستیندر جین

کووڈ 19 کے حفاظتی ٹیکوں کی مہم کے دو دن میں صحت سے متعلق کارکنوں کی ویکسینیشن کی رفتار میں کمی کے درمیان دہلی کے وزیر صحت ستیندر جین نے منگل کے روز کہا کہ یہ ٹیکہ لگوانا رضاکارانہ اور ذاتی فیصلے سے منسلک ہے جی ہاں یا نہیں؟ تاہم عوام کا اعتماد بڑھانے کے لئے تمام تر کوششیں کی جارہی ...

زراعت کے مالک بن جائیں گے 3-4 سرمایہ دار ، قوانین کو واپس لینا واحد حل : راہل گاندھی

کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے منگل کے روز تین مرکزی زرعی قوانین پر مرکزی حکومت کو نشانہ بنایا اور دعوی کیا کہ ان قوانین کا مقصد زرعی شعبے پر تین چار سرمایہ داروں کی اجارہ داری قائم کرنا ہے جو ملک کے متوسط طبقے کو ادا کرنا پڑتا ہے۔

ستیا پور لوجہادمعاملہ:ملزمین کے خلاف قائم مقدمہ ختم کرنے والی عرضداشت پر الہ آبا د ہائی کورٹ میں کل سماعت ہوگی: گلزار اعظمی

یوپی کے سیتا پور شہر سے لوجہادکے نام پر گرفتار دس ملزمین جس میں دو خاتون بھی شامل ہیں کومقدمہ سے ڈسچارج یعنی کہ ان کے خلاف قائم مقدمہ ختم کرکے انہیں جیل سے فوراً رہا کئے جانے کی عرضداشت پر الہ آبادہائیکورٹ کی لکھنؤ بینچ کل یعنی کے 20 جنوری کو سماعت کریگی، جسٹس راجیو سنہا اور ...

گجرات میں سڑک کنارے سونے والے مزدوروں پر ڈمپر لاری چڑھ گئی، 15 ہلاک

گجرات کے ضلع سورت میں گذشتہ دیر رات ایک بے قابو گاڑی  سڑک کنارے سونے والے 20 افراد پر چڑھ گئی   جس کے نتیجے  میں 15 کی  موت  واقع ہو گئی۔ حادثہ سورت سے تقریباً 50 کلومیٹر دور کِم-مانڈوی روڈ پر کوسنبا کے پلوڈگام کے نزدیک  پیش آیا۔