بھٹکل میں کورونا وائرس کےبڑھتے مشتبہ مریضوں کے پیش نظراندرونی محلوں اور گلیوں پر نظر رکھنے پولس نے کیا ڈرون کیمروں کا استعمال

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 1st April 2020, 5:21 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل یکم اپریل (ایس او نیوز) بھٹکل میں کورونا وائرس کے مریضوں کی  تعداد میں ہورہے مسلسل  اضافہ کو دیکھتے ہوئے  شہر میں جاری لاک ڈاون میں مزید سختی برتی جارہی ہےاور اس بات کو یقینی بنایا جارہا ہے کہ عوام اپنے گھروں میں ہی بند رہیں  یہاں تک کہ شہر کے اندرونی محلوں اور گلی کوچوں میں جہاں پولس پہنچنے سے قاصر رہتی ہے، اُن علاقوں کی بھی نگرانی کی جارہی ہے جس کے لئے پولس نے آج سے ڈرون کیمروں کا استعمال شروع کریا  ہے۔

انتظامیہ کو شکایتیں مل رہی تھیں کہ اکثر لوگ اندرونی محلوں میں کسی بھی قسم کا فاصلہ رکھے بغیر ہجوم کی شکل میں باہر ہی جمع رہتے ہیں اور اندرونی محلوں میں کرفیو  جیسی کوئی صورتحال نہیں ہے، مگر پولس کو اب یقین ہے کہ ڈرون کیمروں کی مدد سے اُن تمام شکایات کا ازالہ کیا جاسکے گا۔

آج بدھ صبح اور شام بھٹکل کے شمس الدین سرکل، اولڈ بس اسٹائنڈ، بھٹکل کے پرانے محلوں اور نوائط کالونی سمیت کئی دیگر علاقوں میں ڈرون کیمرے اُڑائے گئے اور شہر کی نگرانی کی گئی کہ کہیں لوگ سواریوں پر تو نہیں گھوم رہے ہیں یا اندرونی محلوں میں لوگ گھروں سے باہر تو نہیں ہیں۔

بھٹکل ڈی وائی ایس پی مسٹر گوتم نے ڈرون کیمروں کے استعمال کا اغاز کرنے کے بعد اخبار نویسوں کو بتایا کہ اگر کہیں سے بھی  امتناعی احکامات کی خلاف ورزی کئے جانے کی بات معلوم ہوئی تو  ایسے لوگوں کے خلاف کیسس درج کئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں اس بات کا پتہ ہے کہ بعض لوگوں کو انتظامیہ نے گھروں سے باہر نکلنے کےلئے پاس جاری کئے ہیں، اُن کو چھوڑ کر اگر کوئی دوسرے لوگ امتناعی احکامات کی خلاف ورزی کرتے ہوئے پائے جاتے ہیں تو پھر ہمیں اُن کے خلاف معاملے درج کرنے ہی پڑیں گے۔

اس موقع پر ڈسٹرکٹ کرائم برانچ سرکل انسپکٹر رام چندرا نائک، پی ایس آئی کوڈگُنٹی و دیگر پولس اہلکار موجود تھے۔

خیال رہے کہ ضلع اُترکنڑا میں اب تک آٹھ مریضوں کی رپورٹ کورونا پوزیٹیو آئی ہے۔ اور یہ تمام معاملات بھٹکل سے سامنے آئے ہیں  جس میں چھ مریضوں کو  کاروار پتنجلی اسپتال منتقل کیا جاچکا ہے، جبکہ دیگر  دو کو کل صبح تک لے جانے کی توقع ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بیرون ریاست سے بھٹکل آنے والوں کو سرکاری طور پر مقرر کردہ مراکز میں کیا جائے گا کوارنٹین۔ اسسٹنٹ کمشنر بھرت کا بیان

بھٹکل کے اسسٹنٹ کمشنر بھرت ایس نے بتایاہے کہ جو بھی افراد بیرون ریاست سے بھٹکل آئیں گے انہیں نئے پروٹو کول کے مطابق سرکار کی طر ف سے مقرر کردہ مراکز میں ہی کوارنٹین کیا جائے گا۔

کرناٹک میں کورونا کے اب تک کے سب سے زیادہ معاملات؛ ایک ہی دن سامنے آئے 515 معاملات؛ صرف اُڈپی میں ہی 204 کورونا پوزیٹو

ملک بھر میں لاک ڈاون میں  ڈھیل دی جارہی ہے اور پورے ملک میں لاک ڈاون کے بعد اب  اگلے چند دنوں میں  حالات نارمل ہونے کے امکانات  نظر آرہے ہیں مگر دن گذرنے کے ساتھ ہی کرناٹک میں کورونا کے معاملات میں کمی آنے کے بجائے  اُس میں مزید اضافہ ہی دیکھا جارہا ہے۔

بھٹکل میں ایک خاتون کی رپورٹ آئی کورونا پوزیٹو؛ یلاپور کے چھ اور کاروار سے ایک کی رپورٹ بھی کورونا پوزیٹو

کافی دنوں کے وقفے کے بعد آج بھٹکل میں ایک اور کی رپورٹ کورونا پوزیٹو آئی ہے، جبکہ ضلع اُترکنڑا کے یلاپور سے چھ اور کاروار سے ایک کورونا کے معاملات بھی سامنے آئے ہیں۔ یاد رہے کہ بھٹکل سے کورونا کا آخری معاملہ 17 مئی کو سامنے  آیا تھا اور وہ شخص  یکم جون کو  ڈسچارج ہوگیا ...

کیرالہ سے داخل ہوتے ہوئے ساحلی کرناٹکا میں مانسون نے دی دستک۔ کرناٹکا میں پوری طرح مانسون شروع ہونے میں ہوسکتی ہے تاخیر

حسب معمول جون کے آغاز میں ہی مانسون نے کیرالہ میں داخلہ لیااور پھر وہاں سے ہوتے ہوئے دودن پہلے ساحلی کرناٹکا میں دستک دی۔ جس کے ساتھ ہی مینگلور، اُڈپی، بھٹکل، کمٹہ اور کاروار وغیرہ علاقوں میں  موسلادھار بارش، طوفانی ہواؤں اور بادلوں کی گھن گھرج کے ساتھ مانسون نے اپنی آمد کا ...

اُڈپی میں کوویڈ کے بڑھتے معاملات پر بھٹکل کے عوام میں تشویش؛ پڑوسی علاقہ سے بھٹکل داخل ہونے والوں پر سخت نگرانی رکھنے ضلعی انتظامیہ سے مطالبہ

بھٹکل کورونا فری ہونے کے بعد اب پڑوسی ضلع اُڈپی میں روزانہ پچاس اور سو کورونا معاملات کے ساتھ  پوری ریاست میں اُڈپی میں سب سے  زیادہ کورونا کے معاملات سامنے آنے پر بھٹکل میں بھی تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے۔ عوام اس بات کو لے کر پریشان ہیں کہ اُڈپی سے کوئی بھی شخص آسانی کے ساتھ ...