یواے ای: کرونا وائرس کے 38ہزار ٹیسٹ ، 873 نئے کیسوں کی تشخیص

Source: S.O. News Service | Published on 19th May 2020, 9:24 PM | خلیجی خبریں |

دبئی،19؍مئی(ایس او نیوز؍ایجنسی) متحدہ عرب امارات میں گذشتہ 24 گھنٹے میں کرونا وائرس کے 38 ہزار ٹیسٹ کیے گئے ہیں۔ان میں سے 873 نئے کیسوں کی تشخیص ہوئی ہے اور اب ملک میں کرونا وائرس کے کیسوں کی تعداد 25063 ہوگئی ہے۔

یو اے ای میں روزانہ صحت یاب ہونے والے مریضوں کی تعداد تشخیص شدہ کیسوں سے بڑھ گئی ہے اور مزید 1214 افراد تند رست ہوگئے ہیں۔ملک میں اب تک صحت مند ہونے والے مریضوں کی تعداد 10791 ہوگئی ہے۔

وزارت صحت نے منگل کے روز کووِڈ-19 کا شکار 3 افراد کی وفات کا بھی اعلان کیا ہے۔وہ مختلف پیچیدگیوں کا شکار ہوگئے تھے۔اب تک یو اے ای میں کرونا وائرس سے 227 افراد کی وفات ہوئی ہے۔

خلیج تعاون کونسل(جی سی سی) میں شامل 6 ممالک میں سے یو اے ای اس وقت کرونا وائرس کے مریضوں کی تعداد کے لحاظ سے تیسرے نمبرپر ہے۔ سعودی عرب میں اب تک سب سے زیادہ مریضوں کی تشخیص ہوئی ہے۔اس کے بعد قطر کا نمبر ہے۔اس نے تقریباً 35 ہزار کیسوں کی تشخیص کی ہے۔

یو اے ای مشرق اوسط میں پہلا ملک ہے جہاں سب سے پہلے کرونا وائرس کے کسی مریض کی تشخیص ہوئی تھی۔ یہ مریضہ ایک 73 سالہ چینی خاتون تھیں۔ ان میں 29 جنوری کو کرونا وائرس کے مرض میں تشخیص ہوئی تھیں۔اس کے بعد مزید چینی سیاح بھی کووِڈ-19 کا شکار پائے گئے تھے۔

یو اے ای کی حکومت نے فروری اور مارچ میں کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے سخت اقدامات کیے تھے،شہروں میں رات کا کرفیو نافذ کردیا تھا اور مختلف پابندیوں کا نفاذ کیا تھا۔

یواے ای کی حکومت نے حال ہی میں ملک بھر میں نافذ لاک ڈاؤن اور پابندیوں میں نرمی کردی ہے لیکن سوموار کو جرمانوں کی ایک فہرست بھی جاری کی ہے اور کہا ہے کہ بدستور نافذ پابندیوں کی خلاف ورزی کے مرتکبین پر بھاری جرمانے عاید کیے جائیں گے۔

متحدہ عرب امارات نے 20 مئی بدھ سے تاحکم ثانی رات کے کرفیو کے دورانیے میں مزید دو گھنٹے اضافہ کا فیصلہ کیا ہے۔ اب اس کرفیو کا آغاز رات آٹھ بجے ہوگا اور صبح چھے بجے تک جاری رہے گا۔

یو اے ای کی حکومت نے ملک بھر میں کرونا وائرس سے بچاؤ کے لیے 26 مارچ کو صفائی ستھرائی کا قومی پروگرام شروع کیا تھا اور اس پرعمل درآمد کے لیے رات دس بجے سے صبح چھے بجے تک کرفیو نافذ کردیا تھا۔

اس پروگرام میں یواے ای کے مختلف سرکاری اداروں سے تعلق رکھنے والے سیکڑوں کارکنان ، نگران اور منتظمین حصہ لے رہے ہیں۔اس تطہیری پروگرام کے تحت دبئی میٹرو ، ٹیکسیوں ، بسوں اور ٹراموں کو مصفا کیا گیا ہے اور کیا جارہا ہے۔

ملک میں جاری نظافت کے اس پروگرام کے تحت ریستوران ، باہمی تعاون کی سوسائٹیاں ، روزمرہ استعمال کی دکانیں ، سپرمارکیٹیں اور دوا خانے ہفتے میں سات دن اور 24 گھنٹے کھلا رکھنے کی اجازت ہے۔

اماراتی حکام کا کہنا ہے کہ اب خریداری مراکز اور مال صبح نو بجے سے شام سات بجے تک کھلیں رہیں گے۔تاہم 60 سال سے زیادہ عمر کے بزرگ افراد اور 12 سال سے کم عمر بچوں کو شاپنگ مالوں اور خریداری مراکز میں داخل ہونے کی اجازت نہیں ہے۔حکام نے ان خریداری مراکز میں آنے والے افراد کویہ ہدایت کی ہے کہ وہ وہاں دو گھنٹے سے زیادہ دیر تک نہ رُکے رہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

سعودی عرب نے پرائیویٹ ملازمین کو 2 سال تک نصف تنخواہ کی ادائیگی کا کیا اعلان

دنیا بھر میں کورونا وائرس کے پیش نظر حکومتوں نے عوام، مزدوروں اور ملازمین کو ریلیف فراہم کرنے کے اعلانات کر رکھے ہیں اور اس سلسلہ میں متعدد ممالک کی حکومتوں نے ملازمین کو خصوصی ریلیف فراہم کرنے کے انتظامات بھی کئے ہیں۔

دبئی سے مینگلور جانے کے لئے350 سے زائد درخواستیں موصول،کن کن کو کریں روانہ ؟ ذمہ داران کے سامنے اہم سوال

چارٹرڈ فلائٹ پر دبئی میں پھنسے بھٹکل اور اطراف کے لوگوں کو مینگلور روانہ کرنے کے تعلق سے سینکڑوں  لوگوں کے رابطہ کرنے پر دبئی میں موجود بھٹکل کے ذمہ داران سوچ میں پڑ گئے ہیں کہ اتنی بڑی تعداد میں لوگ دبئی لاک ڈاون میں پھنسے ہیں تو اُنہیں انڈیا روانہ کرنے کے لئے کس طرح کے ...

کورونا وباء اور لاک ڈاون کے چلتے دبئی میں پھنسے بھٹکل کے عوام کے لئے زبردست خوش خبری؛ 11 جون کو مینگلور کے لئے نکل رہی ہے چارٹرڈ فلائٹ

کورونا وباء کے بعدلاک ڈاون کے چلتے دبئی اور عرب امارات میں پھنسے بھٹکل اور اطراف کے عوام کے لئے ایک زبردست خوش خبری یہ ہے کہ  بھٹکل کے معروف بزنس مین اور نُہیٰ جنرل ٹریڈنگ کمپنی    کے مالک جناب عتیق الرحمن مُنیری نے  عوام کی تکلیفات کو دور کرنے اور اُنہیں اُن کے وطن  واپس ...