امریکا کا یورپین یونین کے ساتھ تمام قسم کے سفری رابطے منقطع کرنے کا فیصلہ

Source: S.O. News Service | By INS India | Published on 12th March 2020, 8:45 PM | عالمی خبریں |

نیویارک،12مارچ(آئی این ایس انڈیا)امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کرونا وائرس کے پھیلاو  سے نمٹنے کے لیے یورپ پر نئی سفری پابندیاں عائد کرنے کا اعلان کیا ہے۔ ٹیلی ویژن پر اپنے نشری خطاب میں انہوں نے کہا کہ اگلے 30 دن کے لیے یورپ سے امریکا آنے والوں کے لیے تمام سفر معطل رہے گا۔انھوں نے کہا کہ یہ سخت مگر ضروری‘ پابندیوں کا اطلاق برطانیہ پر نہیں ہوگا جہاں اب کرونا وائرس کے 460 کیسز کی تصدیق ہوچکی ہے۔امریکا میں کرونا وائرس کے 1135 تصدیق شدہ کیسز ہیں جن میں 38 افراد کی ہلاکت ہوئی ہے۔صدر ٹرمپ نے کہا کہ اس وائرس کے نئے کیسز کو ہمارے ساحل سے داخل ہونے سے روکنے کے لیے ہم اگلے 30 دن کے لیے یورپ سے امریکا کے سفر کو معطل کردیں گے انہوں نے بتایا کہ ان نئی پابندیوں کا اطلاق جمعہ کی شب 12 بجے سے ہو گا۔

یاد رہے امریکی صدر نے یورپین یونین کے ساتھ سفری رابطے منقطع کرنے کا فیصلہ کرونا وائرس سے بچاؤ کے حکومتی اقدام کے تحت کیا ہے۔ امریکی صدر کا کہنا ہے کہ یورپ میں نا مناسب اقدامات کی وجہ سے کرونا وائرس پھیلا ہے۔ امریکی صدر کے مطابق کرونا وائرس پھیلنے کی وجہ سے امریکا سے یورپ آنے اور جانے پر 30 روز کے لیے پابندی ہو گی۔صدر ٹرمپ کا مزید کہنا تھا کہ امریکی قوم ہرقسم کے خطرے سے نمٹنے کے لیے تیار ہے۔ امریکی صدر یورپین ممالک کے ساتھ سفری رابطے ایک ماہ کے عرصے کے لیے ختم کریں گے جبکہ حیران کن طور پر امریکی صدر نے برطانیہ کو سفری پابندیوں سے استثنیٰ دیا ہے جہاں کرونا وائرس کے 460 کیسز کی تصدیق کی جا چکی ہے۔واضح رہے کہ مہلک کرونا وائرس سے امریکا میں اب تک 38 افراد ہلاک ہو چکے ہیں جبکہ وائرس کا شکار1135 افراد زیر علاج ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی