لاک ڈاؤن: بجلی بل ادا نہ کرنے پر بھی نہیں کٹے گا کنکشن

Source: S.O. News Service | Published on 29th March 2020, 10:40 AM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی،29؍مارچ (ایس او نیوز؍ایجنسی) کورونا وائرس کے انفکشن کے خوف سے کئے گئے لاک ڈاؤن کی وجہ سے اگرآپ بجلی کا بل ادا کرنے کے قابل نہیں ہیں تو فکر کی کوئی بات نہیں ہے-ایسا ہونے پر نہ تو آپ کا کنکشن کٹے گا اور نہ ہی کوئی جرمانہ دینا پڑے گا-

اس کے لئے مرکزی بجلی کی وزارت کی جانب سے تمام ریاستوں کے وزیر اعلیٰ اور چیف سکریٹری کو خط بھیجا جا رہا ہے-اس سے پہلے مرکزی حکومت نے ریاستوں کی بجلی تقسیم کار کمپنیوں کیلئے ہفتہ کو ایک امدادی پیکیج کی منظوری دے دی-

ہفتہ کو مرکزی بجلی کی وزارت نے بجلی کے شعبے کیلئے جو ریلیف پیکیج کا اعلان کیا، اس کے تحت ریاستی حکومت کے تابع کام کرنے والی بجلی کی تقسیم کمپنیوں کو اگلے تین ماہ تک ان کی طرف سے خریدی گئی بجلی کا بل فوری طور پر ادا کرنے سے چھوٹ ہے-یہی نہیں، بعد بھی ان کی بجلی کی خریداری کیلئے جمع کی جانے والی سکیورٹی رقم میں 50 فیصد کی امداد دی گئی ہے-

مرکزی بجلی کی وزارت کا کہنا ہے کہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے، ریاستوں کی بجلی تقسیم کار کمپنیوں کے پاس مکمل آمدنی نہیں آ رہی ہے-ایسے میں وہ بجلی بنانے والی اور ٹرانس میشن کمپنیوں کو مکمل ادائیگی نہیں کر پا رہی ہیں -

ظاہر سی بات ہے کہ جب ان کے پاس آمدنی نہیں ہوگی تو وہ ادائیگی کیسے کریں گے لہٰذا ریزرو بینک نے جیسے ای ایم آئی کی قسط بھرنے سے تین ماہ کی چھوٹ دی ہے، ویسے ہی بجلی کے شعبے میں بھی اہتمام کیا گیا ہے-

مرکزی بجلی وزیر راج کمار سنگھ نے بجلی کی تقسیم کمپنیوں کو یقین دہانی کرائی ہے کہ اگلے تین ماہ تک انہیں بجلی ملتی رہے گی،لہٰذا وہ گاہکوں کو بھی فراہمی جاری رکھیں -وزارت کے ایک سینئر افسر کا کہنا ہے کہ تمام ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں کو خط لکھ کر کہا جا رہا ہے کہ وہ اگلے تین ماہ تک کسی گاہک کی بجلی نہ کاٹیں -یہی نہیں، تین ماہ کی تاخیر سے بل ادا کرنے پر کوئی جرمانہ نہ لگائیں،حالانکہ انہوں نے یہ واضح نہیں کیا کہ یہ سہولت صرف گھریلو صارفین کو ملے گی یا صنعتی صارفین کو بھی-

ایک نظر اس پر بھی

حاملہ ہاتھی کی موت تکلیف دہ، لیکن مینکا گاندھی کا بیان ناقابل قبول: رمیش چنیتھلا

کیرالا میں اپوزیشن رہنما رمیش چنیتھلا نے بی جے پی رکن پارلیمنٹ مینکا گاندھی پر کیرالا کے سائیلینٹ ویلی جنگل میں ایک حاملہ جنگلی  ہاتھی کی دردناک موت کے معاملے میں ایک مخصوص طبقے کے خلاف اشتعال انگیز بیان دینے اور مَلّاپورم ضلع کو جرائم کے گڑھ کے طور پر پیش کرنے کا الزام عائد ...

مودی حکومت تبلیغی جماعت معاملہ میں نہیں چاہتی سی بی آئی انکوائری، حلف نامہ داخل

مرکزی حکومت نے دارالحکومت دہلی کے نظام الدین تبلیغی مرکز میں جماعتیوں کے اجتماع کی مرکزی تفتیشی بیورو (سی بی آئی) کے ذریعہ جانچ کی ضرورت سے انکار کیا ہے۔ دریں اثنا، عدالت نے معاملے کی سماعت جمعہ کے روز دو ہفتوں کے لئے ملتوی کردی۔

مینگلور: آئندہ صرف کورونا سے متاثر افراد کے گھروں کو ’سیل ڈاؤن‘ کیا جائے گا۔ علاقے کو’کٹینمنٹ زون‘ نہیں بنایا جائے گا؛ میڈیکل ایجوکیشن منسٹر کا بیان

سرکاری سطح پرکووِڈ 19کی وباء پر قابو پانے کے لئے ابتدا میں جوسخت اقدامات کیے جارہے تھے، اب بدلتے ہوئے حالات کے ساتھ ان میں نرمی لانے کا کام مسلسل ہورہا ہے۔

اُڈپی میں کورونا وائرس کے معاملات کو لے کر ریاستی وزیر اور محکمہ صحت کے اعداد و شمار میں نمایاں فرق؛ کہیں رپورٹ کو چھپایا تو نہیں جارہا ہے ؟

اُڈپی ضلع میں کورونا وائرس کے معاملات کی تعداد کو لے کر ریاستی وزیر برائے محصولات آر اشوک اور محکمہ صحت کی جانب سے جاری اطلاع میں فرق کی وجہ سے اُڈپی ضلع کے عوام تذبذب کا شکار ہوگئے ہیں۔

کرناٹک میں کورونا کے 24 گھنٹوں میں 267 نئے معاملات ، داونگیرے میں مریض کی موت سے مرنے والوں کی تعداد 53

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران منگل کی شام 5 بجے تک ریاست میں 267 نئے کو رونا مریض پائے جانے سے ریاست میں کووڈ۔19 سے متاثر مریضوں کی تعداد بڑھ کر 2494 تک پہنچ گئی اور داونگیرے میں مزید ایک مریض کے ریاست میں فوت ہونے سے ریاست میں اس وبائ سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 53 ہوگئی۔

یکم جولائی سے کرناٹک میں اسکول کھل جائیں گے۔کلاسس شروع کرنے کے لئے مرحلہ وار تاریخوں کا اعلان

کرناٹک حکومت نے ریاست بھر میں یکم جولائی سے مرحلہ وار پرائمری اور سکینڈری اسکول کھول دینے کے احکامات جاری کر دئیے ہیں - وزیر برائے بنیادی و ثانوی تعلیم سریش کمار کی صدارت میں محکمہ تعلیمات عامہ کے اعلیٰ عہدیداروں کی میٹنگ کے بعد کمشنر برائے تعلیمات عامہ کی جانب سے اسکولس ...