وائرس کی زد میں 192ممالک- 15,337/اموات، 3,26,722 متاثر

Source: S.O. News Service | Published on 24th March 2020, 10:47 AM | ملکی خبریں | عالمی خبریں |

بیجنگ؍جنیوا؍نئی دہلی،24؍مارچ (ایس او نیوز؍یو این آئی) دنیا کے بیشتر (اب تک192) ممالک میں پھیل چکے کوروناوائرس کا پھیلاؤ رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور اب تک اس خطرناک وائرس سے 15,337/افراد کی موت ہو چکی ہے جبکہ تقریباً 3,26,722/لوگ اس سے متاثر ہوئے ہیں - ہندوستان میں بھی کورونا وائرس کا انفیکشن پھیلتا جا رہا ہے اور ملک میں اب تک اس سے متاثرین کی تعداد بڑھ کر 360 ہو گئی ہے -پنجاب کے نواں شہر میں ایک شخص کی موت کے علاوہ بہار اور گجرات میں بھی ایک ایک شخص کی موت ہونے سے ملک میں کورونا وائرس سے کل 7/افراد کی موت ہو چکی ہے -وزارت صحت نے پیر کو بتایا کہ ملک میں کورونا وائرس کے360/کیسز کی تصدیق ہو چکی ہے جن میں سے319/مریض ہندوستانی ہیں جبکہ 41 غیر ملکی شہری ہیں - کورونا وائرس سے متاثر 24 افراد علاج کے بعد صحت مند ہو چکے ہیں -اس وائرس کے حوالہ سے تیار کی گئی ایک رپورٹ کے مطابق چین میں ہونے والی اموات کے80/فیصد کیسز60/سال سے زیادہ عمر کے لوگوں کے تھے -چین میں 18093افراد کے کورونا وائرس سے متاثر ہونے کی تصدیق ہوئی ہے اورتقریباً 3,270/لوگوں کی اس وائرس کی زد میں آنے کے بعد موت ہو چکی ہے - گزشتہ24/گھنٹوں کے دوران کورونا وائرس کے حوالہ سے سب سے زیادہ سنگین صورتحال اسپین کی ہے - اسپین میں اس سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر1756ہو گئی ہے -

23/ریاستوں میں لاک ڈاؤن: کورونا وائرس کے بڑھتے انفیکشن کو روکنے کے لئے ملک کی 23 ریاستوں میں لاک ڈاؤن کا اعلان کیا گیا ہے-دہلی، اتراکھنڈ، بہار، مہاراشٹر سمیت کئی ریاستوں میں 31 مارچ تک کے لئے لاک ڈاؤن کا اعلان کیا گیا ہے-وہیں اتر پردیش میں فی الحال 25 مارچ تک کے لئے 16 شہروں میں لاک ڈاؤن کا اعلان کیا گیا ہے-مقصد صرف ایک ہی ہے کہ لوگوں کو بھیڑ میں جانے سے روکا جائے جس سے کورونا وائرس ملک میں تیسرے مرحلے میں داخل نہ کر سکے-حالانکہ کچھ ریاستوں سے ایسی تصویریں سامنے آئی ہیں جن میں لوگ لاک ڈاؤن پرمکمل طور پر عمل کرتے دکھائی نہیں دے رہے ہیں -لوگ ضرورت کا سامان خریدنے کے نام پر باہر گھومتے نظر آئے اور اب اس صورتحال سے بچنے کے لئے مرکزی حکومت نے ایڈوائزری جاری کر دی ہے-مرکزی حکومت نے جو ایڈوائزری جاری کی ہے اس میں صاف لکھا ہے کہ لاک ڈاؤن کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی-ریاستوں کو سخت ہدایات کی گئی ہیں کہ لاک ڈاؤن پر عمل کرایا جائے- اس کے علاوہ نریندر مودی نے بھی سخت لہجے میں کہا ہے کہ جو لوگ لاک ڈاؤن کو سنجیدگی سے نہیں لے رہے ہیں اور ہدایات پر عمل نہیں کر رہے ہیں، ایسے لوگوں سے قوانین پر عمل کروایا جائے-پی ایم مودی نے ایک ٹویٹ کیا اور اس میں لکھا کہ لاک ڈاؤن کواب بھی بہت سے لوگ سنجیدگی سے نہیں لے رہے ہیں -براہ مہربانی اپنے آپ کو بچائیں، اپنے خاندان کو بچائیں، ہدایات پر سنجیدگی سے عمل کریں -ریاستی حکومتوں سے میری درخواست ہے کہ وہ قوانین پر عمل کروائیں -بتا دیں کہ ملک میں کورونا وائرس سے متاثر افراد کی تعداد بڑھ کر 418 ہو گئی ہے اور صرف مہاراشٹر میں ہی کل رات سے 22 نئے معاملے سامنے آئے ہیں -اس کے بعد مہاراشٹر میں کرونا وائرس سے مثبت لوگوں کی تعداد بڑھ کر 89 ہو گئی-

ایک نظر اس پر بھی

کشمیر کی پہلی وائرس متاثرہ خاتون روبہ صحت ہوکر ہسپتال سے رخصت

وادی کشمیر میں کورونا وائرس کے مثبت کیسز میں اضافے کے بیچ سری نگر کے خانیار علاقے سے تعلق رکھنے والی وادی کی پہلی وائرس متاثرہ خاتون مکمل طور پر صحت یاب ہوئی ہے اور اس کو شیر کشمیر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز صورہ سے ڈسچارج بھی کیا گیا ہے۔

تبلیغی جماعت کے خلاف کیس واپس لینے کا مطالبہ تبلیغی مرکز سے متعلق پیدا شدہ حالات پر سرکردہ مسلم دانشوروں کا بیان

 تبلیغی مرکز سے متعلق پیداشدہ صورتحال پر سرکردہ دانشوروں اور صحافیوں نے تشویش کا اظہار کرتے ہوئے یہاں جاری ایک بیان میں کہا ہے کہ کورونا وائرس کے خلاف جاری جنگ میں ہم حکومت کو اپنے بھرپور تعاون کا یقین دلاتے ہوئے اس سے یہ اپیل بھی کرنا چاہتے ہیں

ایران سے زائرین کے واپسی معاملہ پر سپریم کورٹ نے کیا اطمینان کا اظہار

سپریم کورٹ نے ایران کے شہر قم میں پھنسے ہندوستانی شیعہ زائرین کی واپسی کے لئے مرکزی حکومت اور تہران میں واقع ہندوستانی سفارت خانے کی جانب سے کی جا رہی کوششوں پراظہار اطمینان کرتے ہوئے متعلقہ پٹیشن کو نمٹا دیا ہے۔

جلد ہی کورونا متاثرین کی تعداد 10 لاکھ اور اموات 50 ہزار سے زیادہ ہوگی: ڈبلیو ایچ او

پوری دنیا میں کورونا وائرس کے بڑھتے اثرات کے درمیان عالمی صحت ادارہ (ڈبلیو ایچ او) کے سربراہ کا کہنا ہے کہ آنے والے کچھ ہی دنوں میں دنیا کووڈ-19 انفیکشن کی وجہ سے 10 لاکھ سے زیادہ کیسز دیکھے گی۔ ساتھ ہی ڈبلیو ایچ او کا کہنا ہے کہ اس وبا کی وجہ سے چند دنوں کے بعد اموات کی تعداد 50 ہزار ...

’کورونا کی وجہ سے رواں سال حج منسوخ ہو سکتا ہے!‘حج کے حوالے سے کوئی بھی حتمی فیصلہ آئندہ کی صورتحال کو دیکھتے ہوئے ہی کیا جائے گا

سعودی عرب نے دنیا بھر میں مسلمانوں کو کہا ہے کہ وہ حج کرنے کے پلان کو اس وقت تک روک دیں جب تک کے کورونا وائرس کی وبا سے متعلق صورتحال واضح نہیں ہو جاتی۔