اٹلی میں 95 سالہ خاتون کورونا وائرس کو شکست دینے میں کامیاب

Source: S.O. News Service | Published on 24th March 2020, 5:25 PM | عالمی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

روم،24؍مارچ (ایس او نیوز؍ایجنسی) اٹلی میں 95 سالہ خاتون نئے نوول کورونا وائرس سے ہونے والی بیماری کووڈ 19 کو شکست دینے والی ملک کی معمر ترین شخصیت بن گئی ہیں۔

خیال رہے کہ چین کے بعد اٹلی اس وبا سے متاثر ہونے والا دوسرا بڑا ملک ہے، جس کے 60 ہزار کے قریب شہری اس سے متاثر جبکہ 6 ہزار سے زائد افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

اٹلی میں ہلاکتیں چین سے لگ بھگ دوگنا زیادہ ہوچکی ہیں اور ان حالات میں ایک معمر خاتون کی جانب سے اس بیماری کو شکست دے کر صحت یاب ہونا اچھی خبر قرار دیا جارہا ہے۔

الما کلارا کورسینی نامی خاتون کو شمالی اٹلی کے علاقے موڈینا کے ایک ہسپتال میں 5 مارچ کو داخل کرایا گیا تھا۔

اتنی زیادہ عمر کے ہونے کے باوجود خاتون نے کووڈ 19 کے خلاف جنگ اینٹی وائرل ادویات کے بغیر لڑی۔

انہوں نے مقامی میڈیا کو بتایا ‘میں ٹھیک ہوں، میں بالکل ٹھیک ہوں، ڈاکٹر اور طبی عملے نے صحت یابی میں بھرپور مدد کی، وہ سب زبردست ہیں جنہوں نے میری نگہداشت کی’۔

اب وہ ہسپتال سے نرسنگ ہوم واپس لوٹ چکی ہیں۔

گزشتہ ہفتے ایران میں ایک بے نام 103 سالہ خاتون کورونا وائرس سے ہونے والی بیماری کووڈ 19 کا شکار ہوئیں اور صحت یاب بھی ہوگئیں۔

اس سے قبل ایران کے شہر کرمان میں بھی ایک 91 سالہ شخص اس وائرس کو شکست دینے میں کامیاب رہے تھے اور وہ رواں ہفتے ہی ہسپتال سے گھر واپس گئے۔

مگر 103 سالہ خاتون اب تک کی سب سے معمر شخصیت ہیں جنہوں نے اس خطرناک وائرس کو شکست دی ہے۔

اس سے قبل چین میں رواں ماہ ہی ایک سو سالہ شخص بھی کووڈ19 میں مبتلا ہوئے اور ووہان کے ایک ہسپتال میں 13 دن کے علاج کے بعد صحت یاب ہوگئے۔

نوجوان افراد میں اس وائرس سے موت کا خطرہ کم ہوتا ہے مگر ہوتا ضرور ہے جبکہ 65 سال سے زائد عمر کے افراد میں یہ خطرہ زیادہ ہوتا ہے، اسی طرح کسی بیماری جیسے نظام تنفس کے امراض، امراض قلب اورر ذیابیطس کے مریضوں میں بھی یہ امکان بڑھ جاتا ہے۔

خیال رہے کہ اٹلی میں ہفتے کو 793 ہلاکتیں اس بیماری کے نتیجے میں ہوئیں جو کسی بھی ملک میں ایک دن میں سب سے زیادہ ہلاکتیں تھیں، جبکہ اتوار کو یہ تعداد 651 تھی۔

اموات کی تعداد میں اس کمی سے یہ توقع پیدا ہوئی تھی کہ اٹلی میں بحران میں کمی آسکتی ہے، تاہم ڈاکٹروں اور سائنسدانوں کا کہنا تھا کہ ابھی کچھ کہنا قبل ازوقت ہے۔

اٹلی میں روزانہ اس بیماری کے شکار ہونے والے افراد کی شرح بھی کم ہوئی ہے اور یہ گزشتہ 2 ہفتے کے دوران اوسطاً 15 فیصد رہی جو گر کر 9 فیصد تک آگئی ہے۔

اس وبا سے شمالی اٹلی سب سے زیادہ متاثر ہوا ہے خصوصاً لمبارڈی کا خطہ۔

ایک نظر اس پر بھی

ایران سے زائرین کے واپسی معاملہ پر سپریم کورٹ نے کیا اطمینان کا اظہار

سپریم کورٹ نے ایران کے شہر قم میں پھنسے ہندوستانی شیعہ زائرین کی واپسی کے لئے مرکزی حکومت اور تہران میں واقع ہندوستانی سفارت خانے کی جانب سے کی جا رہی کوششوں پراظہار اطمینان کرتے ہوئے متعلقہ پٹیشن کو نمٹا دیا ہے۔

جلد ہی کورونا متاثرین کی تعداد 10 لاکھ اور اموات 50 ہزار سے زیادہ ہوگی: ڈبلیو ایچ او

پوری دنیا میں کورونا وائرس کے بڑھتے اثرات کے درمیان عالمی صحت ادارہ (ڈبلیو ایچ او) کے سربراہ کا کہنا ہے کہ آنے والے کچھ ہی دنوں میں دنیا کووڈ-19 انفیکشن کی وجہ سے 10 لاکھ سے زیادہ کیسز دیکھے گی۔ ساتھ ہی ڈبلیو ایچ او کا کہنا ہے کہ اس وبا کی وجہ سے چند دنوں کے بعد اموات کی تعداد 50 ہزار ...

’کورونا کی وجہ سے رواں سال حج منسوخ ہو سکتا ہے!‘حج کے حوالے سے کوئی بھی حتمی فیصلہ آئندہ کی صورتحال کو دیکھتے ہوئے ہی کیا جائے گا

سعودی عرب نے دنیا بھر میں مسلمانوں کو کہا ہے کہ وہ حج کرنے کے پلان کو اس وقت تک روک دیں جب تک کے کورونا وائرس کی وبا سے متعلق صورتحال واضح نہیں ہو جاتی۔

کشمیر کی پہلی وائرس متاثرہ خاتون روبہ صحت ہوکر ہسپتال سے رخصت

وادی کشمیر میں کورونا وائرس کے مثبت کیسز میں اضافے کے بیچ سری نگر کے خانیار علاقے سے تعلق رکھنے والی وادی کی پہلی وائرس متاثرہ خاتون مکمل طور پر صحت یاب ہوئی ہے اور اس کو شیر کشمیر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز صورہ سے ڈسچارج بھی کیا گیا ہے۔

کورونا وائرس وباء:اڈپی ضلع میں 13مریضوں کو آئسولیشن وارڈ میں داخل کیا گیا۔ پوزیٹیو معاملات کے لئے مختص کیا گیا اسپتال

اڈپی ضلع ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر ڈاکٹر سوڈ نے بتایا ہے کہ کورونا وائرس سے متاثر ہونے کے شبہ میں یکم اپریل کے دن 13 مریضوں کو  ضلع کے مختلف اسپتالو ں میں داخل کیا گیا ہے۔

نظام الدین کے اجتماع میں شریک حضرات جانچ کروالیں: اقلیتی بہبود کے سکریٹر اے بی ابراہیم کی اپیل

ریاستی محکمہ اقلیتی بہبود کے سکریٹر اے بی ابراہیم نے اپنے ایک اخباری بیان میں تبلیغی مرکز نظام الدین کے اجتماع میں مارچ کے دوران شرکت کرنے الوں سے اپیل کی ہے کہ وہ اپنے ضلع یا تعلقہ میں محکمہ صحت سے رابطہ کر کے اپنی جانچ کروالیں۔