یو اے ای میں دوسروں کے ساتھ چلنے پر270 ،اجتماعات منعقد کرنے پر 1360 ڈالر جرمانہ

Source: S.O. News Service | Published on 28th March 2020, 11:02 PM | خلیجی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

ابوظبی،28؍مارچ (ایس او نیوز؍ایجنسی) متحدہ عرب امارات نے کرونا وائرس کی وَبا کو پھیلنے سے روکنے کے لیے قرنطینہ کے قواعد وضوابط کی خلاف ورزی کے مرتکبین پر بھاری جرمانے عاید کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

یو اے ای کے اٹارنی جنرل برائے پبلک پراسیکیوشن نے ہفتے کے روز ان جرمانوں کی تفصیل جاری کی ہے اور کہا ہے کہ جو کوئی بھی کسی کام کی ضرورت کے بغیر گھر سے باہر نکلے گا،اس پر دوہزار اماراتی درہم (544 ڈالر) جرمانہ عاید کیا جائے گا۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق دبئی میں اختتام ہفتہ پر نافذ کرفیو کے رات 8 بجے سے آغاز سے قبل ’دا سپرنگز‘ کے احاطے میں گھومنے پھرنے والے ایک شخص پر یہ جرمانہ عاید کیا گیا ہے۔

متحدہ عرب امارات میں کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے 26؍مارچ سے 29؍مارچ تک سرکاری تنصیبات کی صفائی ستھرائی کے لیے قومی مہم چلائی جارہی ہے،اس دوران میں حکومت نے پبلک ٹرانسپورٹ بند اور عوام کی نقل وحرکت محدود کردی ہے۔یو اے ای کی وزارت صحت اور وزارت داخلہ نے تمام وفاقی اور مقامی اداروں کے ساتھ مل کر جمعرات کی شب 8 بجے سے اتوار کی صبح 6 بجے تک قومی صفائی پروگرام کی مہم شروع کررکھی ہے۔اس کے تحت تمام سرکاری تنصیبات ، پبلک ٹرانسپورٹ اور میٹرو سروس کو جراثیم کش سپرے سے مصفا کیا جارہا ہے۔

دبئی میں پولیس اس کرفیو کی خلاف ورزی کرنے والوں کا سراغ لگانے کے لیے مرکزی شاہراہوں پرراڈار استعمال کررہی ہے۔پبلک پراسیکیوشن کے مطابق اگر ایک ڈرائیور کار میں تین سے زیادہ افراد کے ساتھ نظر آیا تو اس کو ایک ہزار درہم (272ڈالر) جرمانہ عاید کیا جائے گا۔

جو کوئی شخص سماجی فاصلے کی پابندی کی پاسداری نہیں کرے گا اور بند جگہوں پر اپنے چہرے پر ماسک نہیں پہنے گا،اس کو بھی ایک ہزار درہم (272 ڈالر) جرمانے کی سزا کا سامنا کرنا پڑے گا۔ کرونا وائرس کے ٹیسٹ سے انکار کرنے والے کو پانچ ہزار درہم (1361 ڈالر) جرمانہ ادا کرنا پڑے گا۔

جو کوئی شخص کرونا وائرس کے دوبارہ ٹیسٹ سے انکار کرے گا اوراس مہلک وائرس کا شکار ہونے کے بعد خود تنہائی اختیار نہیں کرے گا، قرنطینہ میں نہیں رہےگا،اس پر50 ہزار درہم (13612 ڈالر) کا بھاری جرمانہ عاید کیا جائے گا۔اگر کرونا کا کوئی مریض اسپتال میں لازمی قیام یا وہاں علاج سے انکار کرتا ہے تو اس کو بھی اتنا ہی جرمانہ ادا کرنا پڑے گا۔

یو اے ای نے یہ بھاری جرمانے عاید کرنے کا فیصلہ 23؍مارچ کو بیرون ملک سے واپس آنے والے کرونا کے ایک مریض کی بے پروائی اور غیر ذمے دارانہ طرز عمل اختیار کرنے کے بعد عاید کیا ہے۔ امارات کی وزارت صحت کے مطابق اس شخص نے وطن واپسی کے بعد تنہائی اختیار نہیں کی تھی اور اپنے خاندان ، دوستوں اور ساتھ کام کرنے والے 17 افراد کو بھی اس مہلک وائرس کا شکار کردیا ہے۔

یو اے ای کی وزارتِ صحت نے کرونا وائرس کی وبا کو پھیلنے سے روکنے کے لیے تمام شاپنگ مال ، خریداری مراکز ، تجارتی ادارے اور کھلی مارکیٹیں دو ہفتے تک بند کردی ہیں۔تاہم مچھلی بازار، سبزی اور گوشت کی مارکیٹیں اس حکم سے مستثنا ہیں اور کھلی ہیں۔ریستوران بھی دو ہفتے تک بند ہیں اور وہ صرف گھروں میں کھانے پینے کی اشیاء مہیا کرسکتے ہیں۔

اگر ان دکانوں ، مالز اور خریداری مراکز کا کوئی بھی مالک انھیں کھلا رکھتا ہے تو اس پر 50 ہزار درہم (13612 ڈالر) کا بھاری جرمانہ عاید کیا جائے گا اور وہاں جانے والے گاہک یا کسی دوسرے فرد کو پانچ سو درہم (136ڈالر) جرمانہ ادا کرنا پڑے گا۔

جو لوگ عوامی اجتماعات، کانفرنسوں یا پارٹیوں میں شرکت کریں گے، انھیں 5 ہزار درہم (1361 ڈالر) جرمانہ ادا کرنا پڑے گا جبکہ ان اجتماعات کے منتظمین پر 10 ہزار درہم (2723 ڈالر) جرمانہ عاید کیا جائے گا۔

اگر کوئی مذکورہ تمام خلاف ورزیوں کا دوبارہ مرتکب ہوتا ہے تو اس کو دُگنا جرمانہ ادا کرنا پڑے گا اور ان کی وجہ سے اگر کوئی فرد مہلک وائرس کا شکار ہوتا یا کوئی اور نقصان ہوتا ہے،تو اس کو ان کے علاج کے اخراجات کے علاوہ تاوان بھی ادا کرنا پڑے گا۔

ایک نظر اس پر بھی

سعودی عرب نے پرائیویٹ ملازمین کو 2 سال تک نصف تنخواہ کی ادائیگی کا کیا اعلان

دنیا بھر میں کورونا وائرس کے پیش نظر حکومتوں نے عوام، مزدوروں اور ملازمین کو ریلیف فراہم کرنے کے اعلانات کر رکھے ہیں اور اس سلسلہ میں متعدد ممالک کی حکومتوں نے ملازمین کو خصوصی ریلیف فراہم کرنے کے انتظامات بھی کئے ہیں۔

دبئی سے مینگلور جانے کے لئے350 سے زائد درخواستیں موصول،کن کن کو کریں روانہ ؟ ذمہ داران کے سامنے اہم سوال

چارٹرڈ فلائٹ پر دبئی میں پھنسے بھٹکل اور اطراف کے لوگوں کو مینگلور روانہ کرنے کے تعلق سے سینکڑوں  لوگوں کے رابطہ کرنے پر دبئی میں موجود بھٹکل کے ذمہ داران سوچ میں پڑ گئے ہیں کہ اتنی بڑی تعداد میں لوگ دبئی لاک ڈاون میں پھنسے ہیں تو اُنہیں انڈیا روانہ کرنے کے لئے کس طرح کے ...

کورونا وباء اور لاک ڈاون کے چلتے دبئی میں پھنسے بھٹکل کے عوام کے لئے زبردست خوش خبری؛ 11 جون کو مینگلور کے لئے نکل رہی ہے چارٹرڈ فلائٹ

کورونا وباء کے بعدلاک ڈاون کے چلتے دبئی اور عرب امارات میں پھنسے بھٹکل اور اطراف کے عوام کے لئے ایک زبردست خوش خبری یہ ہے کہ  بھٹکل کے معروف بزنس مین اور نُہیٰ جنرل ٹریڈنگ کمپنی    کے مالک جناب عتیق الرحمن مُنیری نے  عوام کی تکلیفات کو دور کرنے اور اُنہیں اُن کے وطن  واپس ...

مینگلور: آئندہ صرف کورونا سے متاثر افراد کے گھروں کو ’سیل ڈاؤن‘ کیا جائے گا۔ علاقے کو’کٹینمنٹ زون‘ نہیں بنایا جائے گا؛ میڈیکل ایجوکیشن منسٹر کا بیان

سرکاری سطح پرکووِڈ 19کی وباء پر قابو پانے کے لئے ابتدا میں جوسخت اقدامات کیے جارہے تھے، اب بدلتے ہوئے حالات کے ساتھ ان میں نرمی لانے کا کام مسلسل ہورہا ہے۔

اُڈپی میں کورونا وائرس کے معاملات کو لے کر ریاستی وزیر اور محکمہ صحت کے اعداد و شمار میں نمایاں فرق؛ کہیں رپورٹ کو چھپایا تو نہیں جارہا ہے ؟

اُڈپی ضلع میں کورونا وائرس کے معاملات کی تعداد کو لے کر ریاستی وزیر برائے محصولات آر اشوک اور محکمہ صحت کی جانب سے جاری اطلاع میں فرق کی وجہ سے اُڈپی ضلع کے عوام تذبذب کا شکار ہوگئے ہیں۔

کرناٹک میں کورونا کے 24 گھنٹوں میں 267 نئے معاملات ، داونگیرے میں مریض کی موت سے مرنے والوں کی تعداد 53

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران منگل کی شام 5 بجے تک ریاست میں 267 نئے کو رونا مریض پائے جانے سے ریاست میں کووڈ۔19 سے متاثر مریضوں کی تعداد بڑھ کر 2494 تک پہنچ گئی اور داونگیرے میں مزید ایک مریض کے ریاست میں فوت ہونے سے ریاست میں اس وبائ سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 53 ہوگئی۔

یکم جولائی سے کرناٹک میں اسکول کھل جائیں گے۔کلاسس شروع کرنے کے لئے مرحلہ وار تاریخوں کا اعلان

کرناٹک حکومت نے ریاست بھر میں یکم جولائی سے مرحلہ وار پرائمری اور سکینڈری اسکول کھول دینے کے احکامات جاری کر دئیے ہیں - وزیر برائے بنیادی و ثانوی تعلیم سریش کمار کی صدارت میں محکمہ تعلیمات عامہ کے اعلیٰ عہدیداروں کی میٹنگ کے بعد کمشنر برائے تعلیمات عامہ کی جانب سے اسکولس ...