بنگلورکے ساتھ ساتھ ساحلی کرناٹکا میں کورونا کا قہر جاری؛ اُترکنڑا میں 76 معاملات؛ بھٹکل میں پھر ایک شخص کی موت

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 16th July 2020, 12:50 AM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

بھٹکل 15جولائی (ایس او نیوز) ریاست کرناٹک بالخصوص بنگلور میں کورونا کا قہر جاری ہے مگر ساحلی کرناٹکا میں بھی کورونا کے معاملات رُکنے کا نام نہیں لے رہے ہیں، ایک طرف آج ضلع اُترکنڑا میں کورونا کے 76 معاملات سامنے آئے تو وہیں پڑوسی ضلع اُڈپی میں 52 اور دکشن کنڑا میں 76 پوزیٹیو کیسس کی تصدیق ہوئی ہے۔

بھٹکل میں آج ویسے تو کورونا کے نئے معاملات سامنے نہیں آئے مگر کل منگل شب کو  ہیبلے پنچایت حدودکے تینگن گنڈی کے رہنے والے  ایک 45 سالہ شخص کی سرکاری اسپتال میں   موت واقع  ہوئی تھی، اُس کی رپورٹ آج بدھ کو کورونا پوزیٹیو آئی ہے۔اسی طرح دو روز قبل بھٹکل کی 61 سالہ خاتون کی بھی موت واقع ہوئی تھی اُس کی رپورٹ بھی کورونا پوزیٹیو آنے کی تصدیق ہوئی ہے،  اس طرح آج کے ہیلتھ بلٹین میں بھٹکل کےان ہی   دو لوگوں کا اندراج ہوا ہے۔ یاد رہے کہ حال ہی میں بھٹکل میں ہوئی دو موت کے ساتھ ہی کورونا  کے مرض میں مبتلا ہوکر  بھٹکل کے  مرنے والے لوگوں کی تعداد بڑھ کر پانچ  ہوگئی  ہے۔اس میں دو لوگوں کی منگلور میں موت واقع ہوئی تھی۔

آج بدھ کو تازہ موت کے معاملے کے تعلق سے پتہ چلا ہے کہ تینگنگونڈی کا یہ 45 سالہ شخص  گردے کی شکایت کی وجہ سے بھٹکل سرکاری اسپتال میں ایڈمٹ ہوا تھا، مگر منگل شام کو وہ انتقال کرگیا، اُسی وقت اُس کے تھوک کے نمونے جانچ کے لئے روانہ کئے گئے تھے، جس کی رپورٹ آج بدھ کو موصول ہوئی جو کورونا پوزیٹیو تھی۔  معاملہ سامنے آنے کے بعد  موصوف کے گھروالوں کے بھی سیمپل اب جانچ کے لئے روانہ کئے گئے ہیں اور تمام گھروالوں کو کورنٹائن کیا گیا ہے۔

بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر بھرت کی طرف سے دی گئی جانکاری کے مطابق بھٹکل کے آج 239 لوگوں کی رپورٹ نیگیٹیو آئی   ہے۔

ضلع اُترکنڑا میں 76 پوزیٹیو:   آج اُتر کنڑا میں  ایک ساتھ 76 لوگوں کی رپورٹ کورونا پوزیٹیو آئی ہے، ایک وقت تھا جب ضلع میں سب سے زیادہ  معاملات بھٹکل سے نظر آتے تھے، مگر اب ضلع کے دوسرے علاقوں سے بہت  بڑی تعداد میں پوزیٹیو کے معاملات سامنے آرہے ہیں۔  آج  بدھ کو   سب سے زیادہ معاملات  ہلیال سے درج کئے گئے  ہیں، جہاں 16خواتین سمیت 37 لوگوں کی رپورٹس پوزیٹیو آئی ہے۔ اسی طرح یلاپور میں 16، سرسی میں 8، کمٹہ میں 6، منڈگوڈ میں 3، کاروار میں 4 معاملات پوزیٹیو کے سامنے آئے ہیں۔ اکثر معاملات کورونا مریضوں کے ابتدائی رابطے میں رہنے کی وجہ سے سامنے آئے ہیں البتہ بعض لوگ دوسرے علاقوں سے سفر کرکے آئے ہوئے لوگ بھی ہیں، لیکن تشویش کی بات یہ ہے کہ 76 میں سے 14 معاملات ایسے ہیں جن کے تعلق سے پتہ لگایا جارہا ہے کہ اُنہیں کورونا کا مرض کیسے لاحق ہوا یا وہ کس کے رابطے میں  تھے۔

خیال رہے کہ آج بدھ کو کرناٹک میں  پھر ایک بار کورونا کا قہر برپا ہوا ہے اور ایک ہی دن 3176 معاملات کی تصدیق ہوئی ہے، ریاست میں یہ اب تک کی سب سے بڑی تعداد ہے ۔ خبر یہ بھی ہے کہ آج ایک ہی دن کورونا سے 87 لوگوں کی موت بھی واقع ہوئی ہے، جس کے ساتھ ہی کرناٹک میں کورونا سے مرنےوالوں کی تعداد بڑھ کر 928 کو پہنچ گئی ہے۔ صرف ریاست کی  راجدھانی بنگلور سے  ہی آج  کورونا کے 1975 معاملات سامنے آئے ہیں جبکہ دھارواڑ سے 139، بلاری سے 136 اور میسور سے 99 لوگوں کی رپورٹ پوزیٹیو آئی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کیرالہ میں پیش آیا چٹان کھسکنے کا خطرناک حادثہ۔ 15ہلاک اور60سے زائدافراد ہوگئے لاپتہ۔ ملبے میں دب گئیں 30جیپ گاڑیاں 

کیرالہ کے مشہور تفریحی مقام ’مونار‘ سے قریب ’ایڈوکی‘ میں چٹان کھسکنے کا ایک خطرناک حادثہ پیش آیا جس میں تاحال 15افراد ہلاک ہونے اور 60سے زیادہ لوگ لاپتہ ہونے کے علاوہ 30جیپ گاڑیاں چٹان کے ملبے میں دب کر رہ جانے کی خبر ہے۔

کیرالہ میں پیش آیا چٹان کھسکنے کا خطرناک حادثہ۔ 15ہلاک اور60سے زائدافراد ہوگئے لاپتہ۔ ملبے میں دب گئیں 30جیپ گاڑیاں 

کیرالہ کے مشہور تفریحی مقام ’مونار‘ سے قریب ’ایڈوکی‘ میں چٹان کھسکنے کا ایک خطرناک حادثہ پیش آیا جس میں تاحال 15افراد ہلاک ہونے اور 60سے زیادہ لوگ لاپتہ ہونے کے علاوہ 30جیپ گاڑیاں چٹان کے ملبے میں دب کر رہ جانے کی خبر ہے۔

کورونا کی وبا اور دعوت رجوع الی اللہ، اس عنوان کے تحت جماعت اسلامی ہند، کرناٹک کی 15 روزہ مہم کا آغاز

  کورونا کی وبا سے اس وقت پوری انسانیت پریشان ہے۔ اس مرض کا مقابلہ کرنے کیلئے حفاظتی اور احتیاطی تدابیر اختیار کرتے ہوئے لوگ اپنے رب سے رجوع ہوں۔ کورونا جیسی بیماریوں پر قابو پانے کیلئے طبی علاج کے ساتھ روحانی اور اخلاقی طاقت کا ہونا بھی ضروری ہے۔

کرناٹک سے 40 امیدوار سیول سرویسز امتحان میں کامیاب

کرناٹک سے زائداز 40 امیدواروں نے 2019 کے یونین پبلک سرویس کمیشن (یو پی ایس سی ) سیول سرویس امتحان میں کامیابی حاصل کی اور اب آئی اے ایس ، آئی ایف ایس اور آئی پی ایس اور دیگر میں ملازمت حاصل کریں گے۔