یلاپور سے تین سمیت اُترکنڑا میں پھر سامنے آئے کورونا کے چھ معاملات؛ بھٹکل کے دیہاتوں میں بھی کورونا نے دی اب دستک

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 16th June 2020, 9:18 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل 16/جون (ایس او نیوز) یلاپور سے تین معاملات سمیت ضلع اُترکنڑا سے آج منگل کو چھ کورونا کے  معاملات سامنے آئے ہیں جس میں  منڈگوڈ اور ہوناور سمیت بھٹکل سے بھی ایک مسافر میں کورونا کے اثرات پائے جانے کی تصدیق ہوئی ہے۔

ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق بھٹکل میں جس شخص میں کورونا پوزیٹو کی تصدیق ہوئی ہے وہ  ترن مکّی کا رہائشی ہے، اس کی رپورٹ پوزیٹو آنے کے ساتھ ہی کورونا نے  بھٹکل کے دیہاتوں میں لمبے عرصہ بعد پھر ایک بار دستک دی ہے۔  یادرہے کہ اس سے پہلے بھٹکل کے صرف شہری علاقوں کے لوگوں میں کورونا کی تصدیق ہوئی تھی، یہ بات الگ ہے کہ بھٹکل میں کورونا پوزیٹو کا  سب سے پہلا معاملہ  شرالی کے رہنے والے ایک نوجوان کی رپورٹ پوزیٹو آنے کے بعد ہی سامنے آیا تھا، جسے 19 مارچ کو مینگلور ائرپورٹ پر اُترتے ہی وینلاک اسپتال میں داخل کیا گیا تھا اور تین دن بعد اُس کی رپورٹ پوزیٹو آئی تھی، مگر اُس کے بعد  آج تین ماہ بعد ایک دوسرے دیہات ترن مکی سے نیا  معاملہ سامنے آیا ہے۔

آج کے تازہ معاملے کے بعد بھٹکل میں کورونا سے متاثرہ لوگوں کی تعدادبڑھ کر 43 ہوگئی ہے جس میں سے 42 لوگ صحت یاب ہوکر اسپتالوں سے ڈسچارج ہوچکے ہیں۔

ذرائع نے بتایا کہ آج جس شخص کی رپورٹ پوزیٹو آئی ہے وہ  ممبئی میں ڈرائیونگ کا کام کرتا تھا۔43 سالہ یہ شخص 5 جون کو بذریعہ نیتراوتی ایکسپریس  بھٹکل پہنچا تھا، آتے ہی اسے کورنٹائن کیا گیا تھا، بتایا گیا ہے کہ کورونا کی علامات نہ پائے جانے پر سات دن بعد اس کے تھوک کے سیمپل جانچ کے لئے روانہ کئے گئے تھے اور 11 جون کو اسے ہوم کورنٹائن کرنے کی ہدایت دیتے ہوئے  گھر جانے کی اجازت دی گئی تھی۔ اب گھر پہنچنے کے بعد  16 جون کو اس کی رپورٹ کورونا پوزیٹو آئی ہے۔ گھر پہنچنے کےبعد رپورٹ پوزیٹو آنے پر اب دیہات کے لوگوں میں  سخت تشویش پائی جارہی ہے۔ خیال رہے کہ جب بھٹکل شہر کے لوگوں میں کورونا کے معاملات پائے جارہے تھے تو  زیادہ تر خوف وہراس کی کیفیت دیہاتوں کے لوگوں میں پائی جارہی تھی، مگر اب دیہات میں ہی کورونا  نے دستک دے دی ہے۔

اُدھر یلاپور سے بھی آج تین لوگوں میں کورونا کے اثرات پائے گئے ہیں جس میں ایک 33 سالہ شخص بھی شامل ہے جو اس سے قبل کورونا پوزیٹو آنے والے  کے رابطے میں تھا اور یہ شخص بھی قریب ایک ماہ قبل ہی ممبئی سے لوٹا  تھا اسی طرح منڈگوڈ کے جس 30 سالہ شخص کی رپورٹ کورونا پوزیٹو آئی ہے وہ دہلی سے تبت کالونی میں لوٹا تھا۔ دیگر سبھی  لوگ ممبئی سے واپس آئے تھے جن کو آتے ہی کورنٹائن کیا گیا تھا اور نمونے جانچ کے لئے روانہ کئے گئے تھے جن کی رپورٹ آج پوزیٹو نکلی ہے۔

آج کے چھ تازہ معاملات کے ساتھ ہی ضلع اُترکنڑا میں کورونا سے متاثرہ لوگوں کی تعداد 120 ہوگئی ہے جس میں سے اب تک  93 لوگ ڈسچارج ہوچکے ہیں اور کاروار کے کمس اسپتال میں  27 لوگ روبہ صحت ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

بیلتنگڈی : ریاست میں لگی ہے غیر اعلان شدہ ایمرجنسی ۔ کانگریسی لیڈر وسنت بنگیرا کا الزام

مندروں کو منہدم کرنے کی ریاستی  پالیسی کے خلاف احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے سابق ایم ایل اے اور کانگریسی لیڈر وسنت بنگیرا نے الزام لگایا کہ حکومت کی طرف سے  ریاست میں غیر معلنہ ایمرجنسی نافذ کی گئی ہے جس کے چلتے احتجاجی مظاہرے منعقد کرنے میں رکاوٹ پیدا کی جارہی ہے ۔

بھٹکل : ضلع شمالی کینرا میں بجلی سربراہی کی مسئلہ پر وزیر توانائی کے ساتھ اراکین اسمبلی نے کی گفتگو

کرناٹکا ودھان سودھا میں اسپیکر وشویشورا ہیگڈے کاگیری اور ضلع شمالی کینرا انچارج وزیر شیورام ہیبار کی موجودگی میں کمٹہ، ہلیال اور بھٹکل کے اراکین اسمبلی نے وزیرتوانائی سنیل کمار سے ملاقات کی اور کاروار، انکولہ سرسی، ہوناوراور بھٹکل جیسے مقامات بجلی سربراہی سے متعلق مسائل ...

بھٹکل : سمیع اللہ اِٹّل پھر ایک بار شاہین اسپورٹس سینٹر کے صدرمنتخب ؛ جسّاد سعدا ندوی کا جنرل سکریٹری کے طور پر انتخاب

بھٹکل مخدوم کالونی  کے  شاہین اسپورٹس سینٹر کے لئے سمیع اللہ اِٹّل     پھر ایک بار صدر کے عہدہ پر منتخب ہوگئے جبکہ  مولوی  جسّاد سعدا ندوی کا جنرل سکریٹری کے طور پر انتخاب عمل میں آیا۔ عہدیداران کا انتخاب جمعرات  بعد نماز عشاء   فاطمہ علی  ہال میں منعقد ہوا۔

بھٹکل : بلدیہ ملازمین کے لئے مکانات کی تعمیر سست روی کا شکار

بھٹکل ٹاون میونسپالٹی میں صفائی کرمچاری کی ذمہ داری انجام دینے والے ملازمین کے لئے رہائشی اسکیم کے تحت جو مجوزہ مکانات کی تعمیر سست رفتاری کا شکار ہوگئی ہے اور ملازمین کے لئے گھروں کا بندوبست ابھی تک ادھورا خواب بنا ہوا ہے۔

مینگلور: ہندتوا کے نام پر اقتدار پانے والی حکومت پورے دیش کو برباد کر سکتی ہے : ایچ جے وی کے بانی صدر رمیش شیٹی نے ظاہر کیا خدشہ

میسور میں ہوئے مندرانہدام کی مذمت میں ریاستی حکومت کے خلاف منعقدہ احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے ہندو جاگرن ویدیکے کے بانی صدر رمیش شیٹی تمیروڈی نے کہا کہ ہندوتوا کے نام پر اقتدار پر آنے والی مرکزی حکومت دیش کی املاک فروخت کرنے میں لگی ہوئی ہے اور ایسا لگتا ہے کہ آنے والے ...