مہاراشٹر میں کورونا ویکسین کا بحران، 3 روزہ اسٹاک باقی، کئی مراکز ہو سکتے ہیں بند

Source: S.O. News Service | Published on 8th April 2021, 10:18 AM | ملکی خبریں |

ممبئی ، 8؍اپریل (ایس او نیوز؍ایجنسی) مہاراشٹر میں کئی مقامات پر کورونا ویکسین کی قلت کا سامنا ہے اور کئی مقامات پر محض تین دن کا اسٹاک باقی رہ گیا ہے۔ ممبئی سمیت دوسرے کئی شہروں میں ویکسین کا ذخیرہ بہت تیزی سے ختم ہو رہا ہے۔ ریاست کے وزیر صحت راجیش ٹوپے نے این ڈی ٹی وی سے بتایا کہ اس مسئلہ سے مرکزی حکومت کو آگاہ کر دیا گیا ہے۔

راجیش ٹوپے نے کہا کہ ’’ریاست میں ویکسین کا اسٹاک محض تین دنوں کے لئے ہی کافی ہوگا۔ ہم نے مرکز سے گزارش کی ہے کہ وہ ہمیں مزید ویکسین مہیا کرائے۔ یہ حالت اس ریاست کی ہے جہاں ہر روز کورونا کے سب سے زیادہ مریضوں کی تشخیص ہو رہی ہے۔ ممبئی میں بھی محض تین دن کا اسٹاک بچا ہوا ہے۔‘‘ انہوں نے کہا کہ اس حوالہ سے ان کی مرکزی وزیر صحت ہرش وردھن سے منگل کے روز ویڈیو کانفرنس کے ذریعہ بات ہوئی تھی۔

انہوں نے بتایا کہ ’’آج کی تاریخ میں 14 لاکھ ڈوز دستیاب ہیں، یہ صرف تین دنوں کا ہی اسٹاک ہے۔ اگر ہم نے ہر روز 5 لاکھ ویکسین بھی دیں تو ہر ہفتہ 40 لاکھ ڈوز درکار ہوں گی۔ ڈاکٹر ہرش وردھن سے ہم نے کہ کہ ہمارے کئی ویکسینیشن سینتروں پر ویکسین نہیں ہے، جس کی وجہ سے انہیں بند کرنا پڑا ہے۔ ڈوز کی قلت کی وجہ سے لوگوں کو واپس بھیجنا پڑ رہا ہے۔ لہذا آپ ہمیں ویکسین مہیا کرائیں۔‘‘

برہن ممبئی میونسپل کارپوریشن نے بھی ایسا ہی کہا ہے کہ ریاست میں کورونا ویکسین کی کمی ہے اور اسٹاک جلد ختم ہونے جا رہا ہے۔ ممبئی کے میئر کشوری پیڈنیکر نے کہا کہ ممبئی میں ویکسین کا اسٹاک ختم ہونے والا ہے۔ ہم سرکاری اسپتالوں کو زیادہ سے زیادہ خوراک فراہم کر رہے ہیں۔ ہمارے پاس کووی شیلڈ کی تقریباً ایک لاکھ خوراکیں ہی بچی ہوئی ہیں۔

خیال رہے کہ مہاراشٹر کورونا کی دوسری لہر سے ملک میں سب سے زیادہ متاثر ہے۔ پہلی لہر میں بھی یہاں کی حالت ایسی تھی لیکن دوسری لہر نے تمام ریکارڈ توڑ ڈالے ہیں۔ ہندوستان میں بدھ کی صبح گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 1.15 لاکھ معاملے رپورٹ ہوئے، جو ملک میں کورونا کی تاریخ میں سب سے زیادہ ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

شعبہ اردوجامعہ ملیہ اسلامیہ کی جانب سے ممتاز ادیب و شعرا سلطان اختر، انجم عثمانی، مشرف عالم ذوقی، مناظر عاشق ہرگانوی اور سید نورالہدیٰ کے سانحہ ارتحال پر تعزیتی جلسے کا انعقاد

شعبہ اردوجامعہ ملیہ اسلامیہ کی جانب سے عظیم آباد پٹنہ میں مقیم بزرگ و ممتاز شاعر سلطان اختر، عہد حاضر کے معروف فکشن نگار اور صحافی انجم عثمانی، دور حاضر کے ممتاز ناول نگار اور بے باک صحافی مشرف عالم ذوقی، کثیرالتصانیف مصنف پروفیسر مناظر عاشق ہرگانوی اور اردو میں تاریخی، ...

فضول ہے یہ بحث کہ لاک ڈاؤن کب لگنا چاہئے! حالات انتہائی خراب

سمجھ نہیں آ رہا کہ کورونا وباکو روکنے کے لئے کس بات کو مانا جائے اور کس کو نہیں! کبھی اس وبا کو روکنے کے لئے لاک ڈاؤن اتنا ضروری ہو جاتا ہے کہ اگر ملک میں چند سو کیسز بھی ہوں تو لاک ڈاؤن نافذ کر دیا جاتا ہے اور اس بات کا بھی خیال نہیں کیا جاتا کہ مہاجر مزدوروں کا کیا حال ہوگا؟ ان ...

دہلی میں لاک ڈاؤن کے اعلان کے بعد مہاجر مزدوروں میں ایک بار پھر افراتفری ، وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال کی عوام سے اپیل ، کہا ؛ دہلی چھوڑ کر نہ جائیں ، یہ لاک ڈاؤن مختصر وقفے کیلئے ہے

دہلی میں لاک ڈاؤن کا اعلان ہوتے ہی ایک بار پھر دہلی کے مہا جر مزدوروں کو وہ پرانے دن یاد آگئے جب گزشتہ سال اچانک ملک بھر میں لاک ڈاؤن لگا دیا گیا تھا۔

حکومت ٹیکہ بنانے والی کمپنیوں کو 4500 کروڑ روپئے پیشگی دے گی ، ٹیکوں کا پروڈکشن بڑھانے اور ٹیکہ کاری کو رفتار دینے کیلئے اہم فیصلہ ، وزیر اعظم کی کمپنیوں کے ذمہ داروں سے میٹنگ

مودی حکومت نے کورونا کے سبب ملک میں پھیلی ابتری پر اب سنجیدگی کا مظاہرہ کرتے ہوۓ ٹیکہ بنانے والی کمپنیوں سے ان کا پروڈکشن بڑھانے کی اپیل کی ہے۔ ساتھ ہی اس معاملے میں 45 سوکروڑ روپئے  پیشگی  کے طور پرادا کرنے کا فیصلہ کیا ہے تا کہ یہ کمپنیاں اپنے ٹیکوں کے پروڈکشن میں اضافہ ...

مہاراشٹر میں مکمل لاک ڈاؤن کی دستک ، نئی پابندیاں ، دکانیں صبح 7 سے 11 بجے تک ہی کھلی رہی گی

مہاراشٹر میں جنتا کرفیو کے نفاذ کے ایک ہفتہ بعد بھی حالات میں سدھار نہ آنے اور کورونا کے نئے معاملات میں مسلسل اضافے کو دیکھتے ہوئے ریاست میں مکمل لاک ڈاؤن کی دستک سنائی دینے لگی ہے جس کے تعلق سے وزیراعلیٰ اُ دھوٹھا کرے بدھ کو حتمی  اعلان کر سکتے ہیں۔ لاک ڈاؤن کے امکان کو تقویت ...

ہندوستان میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 259170 نئے کورونا کے معاملے، ایک دن میں سب سے زیادہ اموات

 کورونا وائرس کے معاملوں میں اضافہ کا سلسلہ لگاتار جاری ہے۔ مرکزی وزارت صحت کی طرف سے جاری اعدادوشمار کے مطابق منگل کے روز ملک میں ایک بار پھر ڈھائی لاکھ سے زیادہ کیسز کی تصدیق کی گئی۔ یہ لگاتار چوتھا دن ہے جب ملک میں ڈھائی لاکھ سے زہادہ کیسز کی تصدیق کی گئی۔