دہلی میں کورونا کے معاملات 94000سے زیادہ، 2900سے زیادہ لوگو ں کی موت

Source: S.O. News Service | Published on 4th July 2020, 11:16 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،4؍جولائی (ایس او نیوز؍ایجنسی) کورونا وائرس (کووڈ۔19) کا قہر رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور راجدھانی میں کل 2520نئے معاملے سامنے آنے کے بعد متاثرین کی تعداد جمعہ کو بڑھ کر 94000سے زیادہ ہوگئی ہے اور 59مزید لوگوں کی موت کے ساتھ مرنے والوں کی تعداد 2923ہوگئی ہے۔

دہلی حکومت کی وزارت صحت کی طرف سے آج جاری اعداد و شمار کے مطابق متاثرین کی تعداد بڑھ کر 94695ہوگئی ہے اور 59مزید مریضوں کی جان جانے سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 2923ہوگئی ہے۔ اس دوران پابندی شدہ علاقوں کی تعداد 445ہی ہے۔ ان میں کوئی اضافہ نہیں ہوا ہے۔

دہلی میں 23جون کو ایک دن کے 3947سب سے زیادہ کورنا کے نئے معاملے آئے تھے۔ گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں راحت کی بات یہ رہی کہ نئے معاملات کے مقابلہ میں ٹھیک ہونے والوں کی تعداد زیادہ رہی۔ اس دوران 2617مریض ٹھیک ہوئے اور اب تک مجموعی طورپر 65624لوگ کورونا سے جنگ جیت چکے ہیں۔

ریاست میں آج فعال معاملات کی تعداد کل کے 26304سے کم ہوکر 26148ہوگئی۔ کورونا کی جانچ میں گزشتہ کچھ دنوں میں آئی تیزی سے جانچ کا اعدادو شمار 596695ہوگئی ہے۔ گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران دہلی میں 24000سے زیادہ ٹیسٹ کئے گئے۔ ان میں آر پی سی آر ٹیسٹ 10577اور ریپڈ اینٹیجن ٹیسٹ 13588تھے۔ دہلی میں دس لاکھ کی آباد ی پر جانچ کا اوسط بڑھ کر 31405ہوگیا۔

دہلی میں مجموعی طورپر 15243کورونا بیڈس ہیں جن میں سے 5635پر مریض ہیں جبکہ 9608خالی ہیں۔ ہوم آئسو لیشن میں 15878مریض ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

بے لگام میڈیا پر جمعیۃ کی عرضی: جب تک عدالت حکم نہیں دیتی حکومت خود سے کچھ نہیں کرتی: چیف جسٹس

مسلسل زہر افشانی کرکے اور جھوٹی خبریں چلاکر مسلمانوں کی شبیہ کوداغدار اور ہندوؤں اورمسلمانوں کے درمیان نفرت کی دیوارکھڑی کرنے کی دانستہ سازش کرنے والے ٹی وی چینلوں کے خلاف داخل کی گئی

دہلی فسادات: پروفیسر اپوروانند کی حمایت میں سامنے آئے ملک و بیرون ملک کے دانشوران

 ملک اور بیرون ملک کے ایک ہزار سے زائد معروف دانشوروں، نوکر شاہوں، صحافیوں، مصنفوں، ٹیچروں او اسٹوڈنٹس نے دہلی یونیورسٹی کے پروفیسر اپوروانند سے مشرقی دہلی میں فسادات کے معاملے میں پوچھ گچھ کئے جانے اور انکا موبائل فون ضبط کرنے کے واقعہ کی شدید مذمت کی ہے اور پولیس کے ذریعہ ...

کالعدم چینی کمپنیوں سے بی جے پی کے گہرے رشتے ہیں: کانگریس

 کانگریس نے الزام عائد کیا ہے کہ حکومت نے قومی سلامتی کے لیے خطرہ بتاتے ہوئے جن چینی کمپنیوں پر پابندی لگائی ہے ان میں سے کئی کے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) سے گہرے رشتے ہیں اور گزشتہ عام انتخابات میں ان کمپنیوں نے اس کے لیے تشہیری مہم کا کام کیا تھا۔

ریا چکرورتی کا سوشانت کے ساتھ جڑنے کا واحد مقصد ان کی جائیداد ہڑپنا تھا: بہار پولیس کا حلف نامہ

 بہار پولیس نے اداکار سوشانت سنگھ راجپوت کی مبینہ خودکشی کے معاملے میں سپریم کورٹ میں دائر حلف نامے میں کہا کہ کلیدی ملزمہ ریا چکرورتی اور اس کے اہل خانہ کا اداکار کے ساتھ جڑنے کا واحد مقصد اس کی جائیداد ہڑپنا تھا۔