بھٹکل جالی پٹن پنچایت کی نئی عمارت کی تعمیرروک دی جائے۔ پنچایت اراکین نے کیا اسسٹنٹ کمشنر سے مطالبہ 

Source: S.O. News Service | Published on 12th August 2020, 8:32 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل،12؍اگست (ایس او نیوز) بھٹکل جالی پٹن پنچایت کے اراکین نے اسسٹنٹ کمشنرکو میمورنڈم دیتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ ایڈمنسٹریٹر کی حیثیت سے تحصیلدار نے جالی پٹن پنچایت کی نئی عمارت تعمیر کرنے کا جو کام شروع کیا ہے اسے فوراً روک دیا جائے کیونکہ اس سے پہلے مجوزہ مقام سروے نمبر 242پر پنچایت کا دفتر تعمیر کرنے کے خلاف تمام پنچایت اراکین نے متفقہ طور پر ریزولیوشن پاس کیا تھا۔

میمورنڈم میں واضح کیا گیا ہے کہ 15-11-2018 کومنعقدہ میٹنگ میں پنچایت کے کاونسلرس نے تجویز نمبر 177کے تحت بالاتفاق سروے نمبر 242 کے1ایکڑ پلاٹ پر پنچایت کی عمارت تعمیر نہ کرنے اور اس جگہ کو پنچایت کی ملکیت بنائے رکھنے کافیصلہ کیا تھا۔ لیکن جالی پٹن پنچایت کے صدر کی میعاد قانونی طور پر ختم ہونے کے بعدبھٹکل تحصیلدار نے ایڈمنسٹریٹر کی حیثیت سے چارج لیااور اس کے بعد تمام کاونسلرز کی متفقہ تجویز کے بالکل خلاف ایک نئی تجویز پر عمل کرتے ہوئے اسی جگہ پر عمارت کی تعمیر کا کام شروع کردیا ہے۔

میمورنڈم میں کہا گیا ہے کہ اس تعمیری کا م کا ٹینڈر طلب کرنے سے لے کر متعلقہ کنٹراکٹر کو ورک آرڈر دینے تک کوئی بھی بات عوامی منتخب اراکین پنچایت کے علم میں نہیں لائی گئی ہے۔29-03-2019سے بھٹکل تحصیلدار نے جالی پٹن پنچایت ایڈمنسٹریٹر کا چارج لیا ہے تب سے اب تک ایک مرتبہ بھی پنچایت کا جنرل باڈی اجلاس طلب نہیں کیا گیا ہے۔اور تمام کارروائیاں منتخب عوامی نمائندوں کی لاعلمی میں ہی انجام دی جارہی ہیں۔

میمورنڈم کے ساتھ پچھلی مرتبہ کاونسلرس کی طرف سے منظور شدہ ریزولیوشن کی نقل منسلک کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ مجوزہ مقام پر پنچایت کی عمارت تعمیر کرنے سے ایک طرف عوام کو بہت ہی زیادہ دشواریوں کا سامنا کرنا پڑے گا۔دوسری طرف  تحصیلدار کی طرف سے کیا گیا یہ اقدام پنچایت اراکین کی جانب سے متفقہ طور پر منظور کی گئی تجویز کے بھی سراسر خلاف ہے۔ اس لئے اسسٹنٹ کمشنر کو اس میں مداخلت کرتے ہوئے تعمیری کام کو فوری طور پر روک دیناچاہیے تاکہ مقامی بلدی اداروں کے حقوق اور اختیارات کا جو خاکہ دستوری طور پر بنایا گیا ہے اس کا تحفظ ہو اور عوام کے مفادات کے پیش نظر ان کے ساتھ انصاف ہو۔

میمورنڈم پر14اراکین پنچایت کے دستخط ہیں جن کی نقول ضلع شمالی کینرا کے ڈپٹی کمشنرکے علاوہ وزیر بسواراج بومئی، وزیروزیر برائے بلدی انتظامات نارائن سوامی، محترمہ کاویری (ڈائریکٹر ڈی ایم اے، بنگلورو)، ضلع انچارج وزیرشیورام ہیباراور ریاستی حکومت کے چیف سیکریٹری کو بھیجی گئی ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل: ٹریڈ لائسنس بنانےیا رینیو کرانے میونسپالٹی میں الگ کاونٹر قائم کرنے اسسٹنٹ کمشنر سے مطالبہ

بھٹکل میونسپالٹی میں ٹریڈ لائسنس نیا کرانے یا پرانے لائسنس کو رینیو کرانے کے لئے ایک الگ کاونٹر قائم کرنے سمیت  میونسپالٹی میں لائسنس  کے تعلق سے ہرممکن سہولت فراہم کرنے کا مطالبہ لے کر بھٹکل بزنس کمیونٹی (بازار علاقہ) کے  ایک وفدنے بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر سے ملاقات کی ہے۔

بھٹکل:طوفانی بارش کے درمیان بیچ سمندر میں بوٹ کا انجن بند؛ بری طرح پھنسے ماہی گیروں کو بچالیا گیا

بھٹکل میں آج صبح سے رات دیر گئے تک طوفانی ہواوں کے ساتھ بارش کا سلسلہ جاری ہے، ایسے میں آج اتوار صبح ماہی گیروں کی ایک بوٹ جو بحر عرب میں  بری طرح پھنس گئی تھی اور اُس پر سوار چار ماہی گیروں کے جان کے لالے پڑ گئے تھے، شام تک چاروں کو بچالئے جانے کی اطلاع ملی ہے۔

بھٹکل میں دو مختلف سڑک حادثات؛ بائک اور کار کی ٹکر میں دو زخمی، آٹو رکشہ اور لاری کی ٹکر میں ایک زخمی

بھٹکل میں آج اتوار کو ہوئےدو مختلف سڑک حادثات میں تین لوگ زخمی ہوگئے جن میں  ایک سرکاری اسپتال سے ابتدائی طبی امداد کے بعد اُڈپی شفٹ کیا گیا ہے جبگہ   دیگر دو کو   قریبی اسپتال سے  مرہم پٹی کرائی گئی ہے۔

بی جے پی کے رویہ سے پارلیمانی جمہوریت شرمسار: کانگریس

کانگریس نے کہا کہ راجیہ سبھا میں بھارتیہ جنتا پارٹی نے جس طرح کا سلوک کیا ہے اس سے ملک کی پارلیمانی جمہوریت شرمسار ہوئی ہے اور ڈپٹی چیرمین ہری ونش نارائن سنگھ نے اراکین کے جذبات کو کچل کر ایوان کی کارروائی کو انجام دیا۔