دبئی میں راہل نے اخبار نویسوں سے کہا؛ ’بی جے پی مشتعل اور غیر روادار؛ کررہی ہے ہمارے اداروں کو برباد؛ مگر ہم اب اُنہیں ایسا کرنے دیں گے

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 13th January 2019, 11:07 AM | ملکی خبریں | خلیجی خبریں |

دبئی 13/جنوری (ایس او نیوز) متحدہ عرب امارات کے دورہ پر پہنچے راہل گاندھی نے دبئی میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مودی حکومت پر راست حملہ کیا اور  کہ  ’’بی جے پی مشتعل اور غیر روادار ہو رہی ہے اور ہمارے اداروں کو برباد کر رہی ہے، جیسا کہ  سپریم کورٹ ، ریزرو بینک اور الیکشن کمیشن   آف انڈیا  میں ہوا،  مگر ہم  اب اُنہیں  ایسا کرنا نہیں دیں گے۔  مزید بتایا کہ  یہ کچھ وقت کی بات  ہے، ہم 2019 انتخابات کے بعد اسے دیکھ لیں  گے۔‘‘

راہول نے کہا کہ بی جے پی سرکار صرف واحد آئیڈیا پر حکومت کرنا چاہتی ہے، مگر ہم اُنہیں ایسا کرنے بھی نہیں دیں گے۔

اُترپردیش میں سماج وادی پارٹی اور بہو جن سماج پارٹی کے درمیان ہوئے گٹھ بندھن کے تعلق سے پوچھے گئے سوال پر راہول گاندھی نے کہا کہ  گٹھ بندھن اُن کا حق ہے، مگر کانگریس اپنی  وچار دھارا کی لڑائی پورے دم سے لڑے گی۔ راہل نے کہا کہ مایاوتی۔اکھیلش نے جو فیصلہ لیا ، میں اُس کی عزت کرتا ہوں، یہ اُن کا فیصلہ ہے، کانگریس کو اُتر پردیش میں خود کو کھڑا کرنا ہے، ہم یہ کیسے کریں گے یہ ہمارے اوپر ہے۔ ہماری لڑائی بی جے پی کی وچار دھارا سے ہے، ہم اُترپردیش میں پورے دم سے لڑیں گے۔

راہول نے پریس کانفرنس میں مودی سرکارپر رافیل ، بیروزگاری اور جی ایس ٹی کو لے کر بھی نشانہ سادھا، انہوں نے کہا کہ مودی جی رافیل سودے پر ہوئے گھوٹالہ میں  پوری طرح گھیرے ہوئے ہے۔

 راہل نے کہا، ’’اس سے فرق نہیں پڑتا کہ میں نے کیا کہا۔ میں نے کہا کہ وزیر اعظم نے چھوٹے امبانی کو 30 ہزار کروڑ روپے چوری کرنے میں مدد کی۔لیکن  وزیر اعطم نے سامنے آکر مجھے جواب دینے کی ہمت نہیں دکھائی۔ وہ پارلیمنٹ سے بھاگ گئے۔ وزیر اعظم نے امبانی کو مدد پہنچائی اور لوک سبھا میں جہاں انہیں بولنا چاہئے تھا وہاں انہوں نے ایک عورت کو بھیج دیا اور وزیر اعظم بھاگ گئے۔ وزیر دفاع بھی ان کا دفاع نہیں کر پائی، مجھے میرے سوالوں کے جوابات ابھی تک نہیں ملے ہیں۔‘‘

ایک نظر اس پر بھی

غیر ملکی تبلیغی جماعتیوں کی عرضی پر سماعت 10 جولائی تک ملتوی

سپریم کورٹ نے تبلیغی جماعت کے پروگرام میں حصہ لینے والے 34غیر ملکی جماعتیوں کی عرضیوں پر سماعت 10 جولائی تک کے لئے ملتوی کردی اور کہا کہ انہیں اپنے ملک بھیجنے کے معاملے میں وہ مداخلت نہیں کرے گا، بلکہ بلیک لسٹ میں ڈالے جانے کے معاملے پر سماعت کرے گا۔

شیوراج کابینہ میں توسیع، 28 وزیروں کی حلف برداری

 بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جےپی) کی نائب صدر اور سابق مرکزی وزیر اوما بھارتی نے مدھیہ پردیش میں شیوراج سنگھ چوہان کی کابینہ توسیع کے بالکل پہلے ذات بات تال میل کے سلسلے میں پارٹی قیادت کے سامنے ’اصولی عدم اتفاق‘کا اظہار کیا ہے

ریاض معاہدے پرعمل درآمد پرغور کیلئے یمنی وفد کی سعودی عرب آمد

یمن کی آئینی حکومت اور عدن کی عبوری انقلابی کونسل کے درمیان جنگ بندی کے حوالے سے سعودی عرب کی کوششوں سے طے پائے معاہدے پرعمل درآمد پرغور کے لیے یمن کی اہم شخصیات پر مشتمل وفد الریاض پہنچ گیا ہے۔رپورٹ کے مطابق یمنی وفد مصر کے دارالحکومت قاہرہ سے الریاض پہنچا ہے۔ اس میں ...