کانگریس ایم ایل اے بھیم نایک کا اپنے ہی وزیرپی ٹی پرمیشورپر الزام، ڈیم پروجیکٹ کے لیے کمیشن مانگا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 26th June 2019, 11:10 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو، 26 جون(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) کرناٹک کے بلاری سے کانگریس ممبر اسمبلی بھیم نایک نے اپنی ہی سرکار کے وزیر پی ٹی پرمیشور پر سنگین الزامات عائد کئے ہیں۔انہوں نے الزام لگایا ہے کہ پی ٹی پرمیشور نے ایک ڈیم کی تعمیر کے منصوبے میں ٹھیکیدار سے کمیشن مانگا ہے۔انہوں نے کہا کہ ٹھیکیدار، وزیر پی ٹی پرمیشور کے پاس جاتا ہے۔اس کے بعد وزیر ٹھیکیدار سے پوچھتے ہیں کہ اس 150 کروڑ کی گرانٹ میں سے کمیشن دیناہو گا۔بھیم نایک کے مطابق وزیر نے ٹھیکیدار سے کہا کہ 12 کلومیٹر پائپ لائن میرے حلقہ سے ہوکر جاتی ہے،80 کام میرا حلقہ ہے،مجھے کمیشن کی ضرورت ہے، تبھی میں کام شروع کرنے دوں گا۔ساتھ ہی انہوں نے پی ٹی پرمیشور کو بیکار کا وزیر قرار دیا،بھیم نایک نے کہا کہ میں نے اس کی شکایت ڈی شیو کمار سے کی ہے،وہ اس کے بارے میں جانتے ہیں۔
 

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو۔بنگلوروٹریک پرچٹان توڑنے کا کام مسلسل جاری۔ دن کے وقت چلنے والی ریل گاڑیاں 24جولائی تک کے لئے منسوخ

انی بندا کے قریب سبرامنیا سکلیشپور ریلوے ٹریک پر ایک بڑی چٹان لڑھکنے کا خطرہ پیدا ہوگیا تھا۔ اس حادثے کو روکنے کے لئے پہاڑی تودے کو دھماکے سے توڑنے کاکام پچھلے دو تین دن سے جاری ہے جس کے لئے ہیٹاچی مشین کے کامپریسر اور بارود کا استعمال کیا جارہا ہے۔ لیکن تیز برسات کی وجہ سے دن ...

کرناٹک: بی ایس پی ارکان اسمبلی کمارسوامی کے حق میں ووٹ کریں گے:مایاوتی

کرناٹک میں کانگریس اورجے ڈی ایس کی مخلوط حکومت رہے گی یا جائے گی اس کا فیصلہ آج ہو جائے گا ۔ برسر اقتدار اتحاد کے ارکان اسمبلی کو بی جے پی ٹوڑنے کی کوشش کر رہی ہے لیکن اس بیچ بی ایس پی سپریموں نے کہا ہے کہ اس کی پارٹی کے ارکان اسمبلی کمارسوامی حکومت کے حق میں ہی ووٹ ڈالیں گے ۔ یہ ...

مخلوط حکومت کی بقا کا سسپنس برقرار آج بھی اسمبلی میں تحریک اعتماد پر ووٹنگ کا امکان،باغیوں کو واپس لانے کیلئے سدارامیا کو وزیر اعلیٰ بنانے کی پیش کش

ریاست میں کانگریس جے ڈی ایس مخلوط حکومت کوبچانے کے لئے اتحادی جماعتوں کے قائدین کی کوششوں کا سلسلہ جاری ہے تو دوسری طرف اپوزیشن بی جے پی اس کوشش میں ہے کہ کسی طرح پیر کے روزتحریک اعتماد پر اسمبلی میں ووٹنگ ہو جائے لیکن خدشات ظاہر کئے جارہے ہیں