اگر آپ عزت دار ماہی گیر ہیں تو آننت کمار ہیگڈے کو ہرگز ووٹ نہ دیں؛ بھٹکل میں ماہی گیروں سے پرمود مدھوراج کی اپیل

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 20th April 2019, 10:20 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل 20/اپریل (ایس او نیوز) اگر آپ عزت دار ماہی گیر ہیں تو  آپ کو چاہئے کہ  ماہی گیروں کی پرواہ نہ کرنے والے بی جے پی اُمیدوار آننت کمار ہیگڈے  کو ہرگز ووٹ  نہ دیں۔ ملپے سے نکلی سات ماہی گیروں پر مشتمل بوٹ لاپتہ ہوکر  پانچ ماہ ہوچکے ہیں مگر مرکزی وزیر آننت کمار ہیگڈے کو ماہی گیروں کی پرواہ ہی نہیں ہے۔ یہ بات  ماہی گیرلیڈر اور سابق ماہی گیر وزیر  پرمود مدھوراج نے کہی۔ وہ یہاں بھٹکل میں کانگریس۔جے ڈی ایس مشترکہ اُمیدوار آنند اسنوٹیکر  کے حق میں  انتخابی پرچار چلانے  پہنچے تھے۔

اخبار نویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے پرمود مدھوراج نے بتایا کہ  ہیگڈے کو  اس بات سے کوئی سروکار نہیں ہے کہ   لاپتہ ماہی گیروں کا پتہ لگائیں،اتنا ہی نہیں افسوس اس بات کا بھی ہے کہ موصوف وزیر نے ابھی تک اُترکنڑا کے  اُن ماہی گیروں کے گھروالوں سے جاکر بھی  ملاقات تک نہیں کی ہے حالانکہ لاپتہ ہونے والوں میں پانچ ماہی گیروں کا تعلق ضلع اُترکنڑا سے ہے۔ ایسے حالات میں ہیگڈے مودی کا نام لے کر لوگوں سے ووٹ مانگ رہے ہیں۔

ملپے سے لاپتہ ہونے والی بوٹ کے تعلق سے پرمود مدھوراج نے شک ظاہر کیا کہ  نیوی کی بوٹ نے ہی  لاپتہ ہونے والی ماہی گیروں کی بوٹ کو ٹکر دی ہے،  انہوں نے کہا "میرے خیال میں یہ ہِٹ اینڈ رن کا معاملہ ہے، مگر یہ بات وزیردفاع کے علم میں لانے کے باوجود  مرکزی حکومت اس پورے معاملے کو چھپانے میں لگی ہوئی ہے اور یہی حال ہے کہ ضلع کے رکن پارلیمان آننت کمار ہیگڈے لاپتہ ماہی گیروں کا پتہ لگانے میں دلچسپی نہیں دکھارہے ہیں"۔ پرمود  مدھوراج نے سوال کیا کہ  ایسے لیڈر کو  کیسے  ووٹ دے سکتے ہیں، عوام کو چاہئے کہ ایسے لوگوں کو  اس بار سبق سکھائیں۔

آننت کمار ہیگڈے پر مسلسل وار کرتے ہوئے پرمود مدھوراج نے کہا کہ ہیگڈے خود کہتے ہیں  کہ وہ عوام کی سیوا کرنے نہیں آئے ہیں بلکہ وہ صرف سیاست کرنے کے لئے آئے ہیں۔ پرمود مدھوراج نے خیال ظاہر کیا کہ ایسے رکن پارلیمان سے ایک گرام پنچایت ممبر بہتر ہے۔

سابق وزیر برائے مچھلی پالن پرمود مدھوراج جو اس وقت  اُڈپی۔چکمنگلور سے کانگریس۔جے  ڈی ایس کے مشترکہ اُمیدوار ہیں نے  اخبارنویسوں کو بتایا کہ  ماہی گیروں کو  مرکزی حکومت کی جانب سے کسی بھی طرح کی کوئی سہولت نہیں ہے، صرف ریاستی سرکار کی طرف سے ہی ماہی گیروں کے ڈیزل میں سبسیڈی دی جارہی ہے، انہوں نے یہ بھی کہا کہ مرکزی حکومت کی طرف سے  چھوٹی کشتیوں کے لئے  مٹی کا تیل  دینے کی سہولت بھی ختم کردی گئی ہے۔

پرمود مدھوراج نے مزید بتایا کہ گذشتہ اسمبلی انتخابات کے موقع پر آننت کمار ہیگڈے  ہوناور کے پریش میستا کی موت کو لے کر  پورے ساحلی کرناٹکا میں گھوم گھوم کر ووٹ مانگ رہے تھے ، جب یہ معاملہ سی بی آئی کے حوالے کیا گیا تو اب پارلیمانی انتخابات کے موقع پر  مودی کا نام لے کر ہیگڈے  لوگوں کے پاس  ووٹ مانگ رہے ہیں۔  اب پریش میستا کا معاملہ  ان کی زبان پر بھی نہیں آرہا ہے، اسی طرح اب شری رام کا نام بھی ان کی زبان پر نہیں آرہا ہے۔ پرمود مدھوراج کے مطابق   ہر انتخابات کے موقع پر ہیگڈے کسی نے کسی  کا نام لے کر اور نیا نیا بھس بدل کر عوام کے سامنے آتے ہیں۔

سابق بھٹکل ایم ایل اے منکال وئیدیا، بھٹکل بلاک کانگریس صدر سنتوش نائک، ضلع پنچایت صدر جئے شری موگیر، تعلقہ پنچایت صدر ایشور نائک، ایف کے موگیر، نارائن بی نائک، پُنڈلک ہیبلے، ویٹھل نائک، ٹی ڈی نائک، ستیش اچاریہ، ناگیش دیوڑیگا، سچن نائک سمیت کافی دیگر لوگ اس موقع پر موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

کاروار: سی آر زیڈ قانون میں رعایت۔سیاحت کے لئے مفیدمگرماہی گیری کے لئے ہوگی نقصان دہ

ساحلی علاقوں میں سمندر ی جوار کی حد سے 200میٹر تک تعمیرات پر روک لگانے والے کوسٹل ریگولیشن زون(سی آر زیڈ) قانون میں رعایت کرتے ہوئے اب ندی کنارے سے 100میٹرکے بجائے 10میٹر تک محدود کردیا گیا ہے۔

سرسی ڈی وائی ایس پی سے کی گئی یلاپور رکن اسمبلی شیورام کوڈھونڈنکالنے کی گزارش

کانگریس اور جے ڈی ایس کے اراکین نے بغاوت کرتے ہوئے اسمبلی اجلاس سے دور رہنے اور وزیر اعلیٰ کمارا سوامی کی جانب سے پیش کی گئی ’اعتماد‘ کی تحریک کے حق میں ووٹ نہ دینے کا جو فیصلہ کیا ہے اس سے مخلوط حکومت گرنا یقینی ہوچلا ہے۔ 

بھٹکل اوراطراف کے  طلبہ وطالبات کے لئے15ڈسمبر کو ہوگا سائنسی وتحقیقی مقابلہ جات کاانعقاد : تعلیمی ادارے توجہ دیں

شہر بھٹکل کا معروف تعلیمی و فلاحی ادارہ تربیت اخوان(شمس اسکول)کے زیر اہتمام  اے جے اکیڈمی فار ریسرچ اینڈ ڈیلوپمنٹ کے اشتراک سے15ڈسمبر 2019 بروز اتوار کو سانتسی و تحقیقی مقابلہ جات کا انعقاد کیا گیا ہے جس میں  بھٹکل‘ مرڈیشور‘ شیرور اور منکی کے سرکاری و  غیر سرکاری‘امدادی ...

مویشی چوروں کے ساتھ ساز باز کرنے کے الزام میں 2پولیس والے ہوئے گرفتار۔4کی تلاش جاری

ایک ہفتے پہلے ساستھان ٹول گیٹ پر 21بھینسوں کی ایک بڑی کھیپ جو ضبط کی گئی تھی، اس تعلق سے گرفتار شدہ ملزمین کے بیانات کی روشنی میں پولیس کی تحقیقاتی ٹیم نے محکمہ پولیس سے ہی وابستہ 2افراد کو گرفتار کرلیا،جبکہ مزید چارمفرور پولیس والوں کو گرفتار کرنے کی کوشش جاری ہے۔ ان پر الزام ...

منگلورومیں تیز بخار کی وجہ سے 8سالہ بچے کی موت۔ عوام کو ڈینگی بخار کا شبہ۔ محکمہ صحت کے آفیسر نے کی تردید

ایک پرائیویٹ اسکول کی تیسری جماعت میں زیر تعلیم 8سالہ بچے کرش این سوورنا کی یہاں کے نجی اسپتال میں موت واقع ہوگئی ہے جس کے بارے میں عوام کو شبہ ہے کہ وہ ڈینگی بخار میں مبتلا ہوگیا تھا۔ لیکن ڈسٹرکٹ ملیریا کنٹرول آفیسر ڈاکٹر نوین کمار نے ڈینگی بخار سے موت ہونے  کی تردید کردی ہے۔