کرناٹک کے بعد یوپی میں کانگریس نے تحلیل کیں تمام ضلعی کمیٹیاں، اجے کمار للو کو ملی بڑی ذمہ داری

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 24th June 2019, 11:09 PM | ملکی خبریں |

لکھنؤ، 24 جون (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) لوک سبھا انتخابات میں شکست کے بعد کانگریس میں اتھل پتھل کا دور جاری ہے۔کرناٹک ریاست کی یونٹ تحلیل ہونے کے بعد یوپی کانگریس نے بھی ریاست کی ساری ضلع یونٹ تحلیل کر دی ہیں۔آل انڈیا کانگریس کمیٹی (اے آئی سی سی) نے پارٹی کے جنرل سکریٹری اور مشرقی مغربی یوپی کے انچارج کی ہدایت پر یہ فیصلہ لیا۔اسی کے ساتھ کانگریس نے اپنے رکن اسمبلی اجے کمار للو کو مشرقی یوپی کی تنظیم میں ردوبدل کا انچارج مقرر کیا گیا ہے۔تنظیم کے سیکرٹری جنرل کے سی وینو گوپال کی جانب سے پریس نوٹ جاری کر معلومات دی۔اس میں کہا گیا ہے کہ اے آئی سی سی نے اپنے سیکرٹری جنرل کی تجویز کے مطابق کچھ ضروری فیصلے لئے ہیں۔اس کے مطابق، یوپی کی تمام ضلع کمیٹیاں تحلیل کر دی گئی ہیں۔اسی کے ساتھ جہاں جہاں اسمبلی ضمنی انتخابات ہونے ہیں وہاں انتخابات کی تیاری کے لیے دو رکنی ٹیم قائم کر دی گئی ہے۔اسی کے ساتھ لوک سبھا انتخابات کے دوران ڈسپلن شکنی کے معاملات کو دیکھنے کے لیے 3 رکنی ٹیم قائم کی گئی ہے۔لوک سبھا انتخابات میں کراری شکست کے بعد یوپی میں کانگریس کی نظر اب 2022 اسمبلی انتخابات پر ہے۔کہا جا رہا ہے کہ پارٹی اسمبلی انتخابات کے لئے نئے سرے سے عوام کی سطح پر تنظیم کو تیار کرے گی۔بتا دیں کہ لوک سبھا انتخابات میں کانگریس کی خراب کارکردگی کے بعد یہ کارروائی کی جا رہی ہے۔لوک سبھا انتخابات میں کانگریس نے صرف رائے بریلی میں ہی کامیابی حاصل کی تھی۔یہاں تک کہ گاندھی خاندان کے روایتی نشست امیٹھی میں بھی پارٹی کو ہار کا منہ دیکھنا پڑا تھا۔یہاں کانگریس صدر راہل گاندھی کو بی جے پی کی اسمرتی ایرانی سے 55 ہزار ووٹوں سے شکست ملی تھی۔لوک سبھا انتخابات میں خراب کارکردگی کے بعد یوپی کانگریس کے صدر راج ببر نے استعفیٰ بھی بھیجا تھا۔اس سے پہلے کرناٹک کانگریس کی تمام ضلع کمیٹیوں کو تحلیل کر دیا گیا تھا،اگرچہ ریاستی صدر دنیش گڈو راؤ اور ایگزیکٹو چیئرمین ایشور بی کھادرے کو برقرار رکھا گیا تھا۔
 

ایک نظر اس پر بھی

مظفرپور: پنچایت نے نابالغ ریپ متاثرہ کو سنایا بچہ فروخت کرنے کا فرمان  ملزم مذہبی رہنمااوردیگرالیکٹرشین اب بھی فرار

بہار کے مظفر پور ضلع میں ایک بہت ہی چونکانے والے معاملے میں ایک پنچایت نے ایک نابالغ ریپ متاثرہ کو اپنا نوزائیدہ بچہ فروخت کرنے کا فرمان سنا دیا۔اس کیس کے سامنے آنے کے بعد مظفر پور پولیس حرکت میں آ گئی اور کیس تحقیقات کا حکم دیا گیا۔

چیف جسٹس کا دفتر آرٹی آئی کے دائرے میں، سپریم کورٹ سے آ سکتا ہے فیصلہ

سپریم کورٹ کے چیف جسٹس کا دفتر آر ٹی آئی کے دائرے میں آنا چاہئے یا نہیں اس مسئلے پر بدھ کو فیصلہ آ سکتا ہے۔آئینی بنچ نے اپریل میں کیس کی سماعت کے بعد فیصلہ محفوظ رکھ لیا تھا۔ججوں کے کام کاج کو آر ٹی آئی کے دائرے میں لانے کے لئے سب سے بڑی دلیل یہ رہی ہے کہ اس سے عوام میں عدلیہ کے لئے ...

مودی پر تبصرہ کے معاملے میں ششی تھرور کے خلاف وارنٹ جاری

پی ایم نریندر مودی پر قابل اعتراض تبصرہ کرنے پر درج ہتک عزت کیس میں عدالت نے کانگریس لیڈر ششی تھرور کے خلاف ضمانتی وارنٹ جاری کیا ہے۔دہلی کی راج ایونیو کورٹ نے بی جے پی لیڈر راجیو ببر کی جانب سے دائر کیس کو لے کر اس کا حکم دیا۔

جے این یو میں سب کے لیے قابل رسائی تعلیمی نظام بحال کیا جائے: سی پی ایم

سی پی ایم نے جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جے این یو) میں فیس اضافہ کو لے کر طالب علموں کے احتجاج کو صحیح ٹھہراتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت کو اس معاملے میں مداخلت کرکے ہر آمدنی والے طبقے کے طالب علموں کے لئے قابل رسائی تعلیمی نظام بحال کرنی چاہیے۔

مودی حکومت گرو نانک دیو کے خیالات و تعلیمات کے لیے وقف: امت شاہ

مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے گرو نانک دیو کو ہندوستان کے سنت روایت کی منفرد مثال اور مودی حکومت کو ان کے خیالات اور تعلیمات کے تئیں وقف بتاتے ہوئے ملک کے باشندوں کو گرو گالا کی مبارکباد دی۔گرو نانک کے 550 ویں جینتی میں سلسلہ وار ٹویٹ کر کے شاہ نے کہا کہ گرو نانک دیو کے 550 ویں پرکاش ...

گرو نانک دیو کی روحانیت اور انسانیت کی راہ سماجی ہم آہنگی کی مثال: نائیڈو

نائب صدر ایم وینکیا نائیڈو نے منگل کو سکھ مذہب کے بانی گرو نانک دیو کی تعلیمات کو سماجی ہم آہنگی کا عقیدہ بتاتے ہوئے ہم وطنوں سے ان کی پیروی کرنے کی اپیل کی ہے۔گرپرو کے طور پر آج منائی جا رہی گرو نانک جینتی کے موقع پر انہیں خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے نائیڈو نے کہاکہ گرو نانک دیو جی ...