کانگریس کی کرناٹک یونٹ تحلیل، صدر اور کارگزار صدر کو رکھا گیا برقرار

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 19th June 2019, 10:42 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو، 19 جون(ایس او نیوز/ایجنسی) لوک سبھا الیکشن میں کرناٹک میں مایوس کن کارکردگی کے بعد کانگریس نے بدھ کو پردیش کانگریس کمیٹی (پی سی سی) کو تحلیل کردیا۔ حالانکہ صدراورکارگزارصدر اپنے عہدے پر برقرار رہیں گے۔ پارٹی کے تنظیمی جنرل سکریٹری کے سی وینو گوپال کی طرف سے جاری بیان کے مطابق آل انڈیا کانگریس کمیٹی نے کرناٹک پردیش کانگریس کمیٹی کو تحلیل کردیا ہے اورصدراورکارگزارصدرکو برقرار رکھا گیا ہے۔

کانگریس نے اس قدم کی وجہ نہیں بتائی ہے، لیکن اسے لوک سبھا الیکشن میں پارٹی کی خراب کارکردگی سے جوڑکردیکھا جارہا ہے۔ واضح رہے کہ ریاست میں جے ڈی ایس کے ساتھ اتحاد میں ہونے کے باوجود کانگریس کرناٹک میں صرف ایک سیٹ جیت پائی ہے۔ دراصل کرناٹک میں حال کے دنوں میں تیزی سے الٹ پھیردیکھنے کو مل رہا ہے۔ اس سے قبل کانگریس لیڈراوررکن اسمبلی آرروشن بیگ کو پارٹی مخالف سرگرمیوں میں شامل ہونے کے الزام میں پارٹی سے معطل کردیا گیا تھا۔

لوک سبھا الیکشن 2019 میں کانگریس کو زبردست شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ شکست کے بعد روشن بیگ نے اپنی ہی پارٹی پرسوالیہ نشان کھڑے کردیئے تھے۔ انہوں نے کہا کہ الیکشن کے دوران کانگریس نے مسلمانوں کوووٹ بینک کے طورپراستعمال کیا۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ مسلمانوں کے دل میں خوف پیدا کیا گیا اوراس خوف کی وجہ سے مسلمان ایک خاص نظریے پرکام کرتے ہیں۔

اس سے قبل روشن بیگ نے وینوگوپال کومسخرہ اورسدا رامیا کومتکبرقراردیا تھا۔ جس پرانہیں وجہ بتاؤ نوٹس جاری کی گئی تھی۔ تاہم روشن بیگ نے وجہ بتاونوٹس کونظرانداز کرتے ہوئے اس کاجواب نہ دینے کا فیصلہ کیا۔ انہوں نے کانگریس کے لیڈران اپنی نکتہ چینی تیزکرتے ہوئے دیگر لیڈران کوبھی نشانہ بنا رہے تھے۔ روشن بیگ نے صدرپردیش کانگریس دنیش گنڈوراؤکو بھی فلاپ ہیروقراردیا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹکا اسمبلی کے سابق باغی اراکین کی نااہلیت برقرار۔ لیکن انتخاب لڑ نے پر نہیں ہوگی پابندی۔ سپریم کورٹ کا فیصلہ

سابقہ اسمبلی میں جن 17 کانگریس اور جے ڈی ایس اراکین نے بغاوت کی تھی، انہیں سپریم کورٹ سے تھوڑی سے راحت ملی ہے جس کا اثر ریاستی بی جے پی حکومت پر بھی پڑنے والا ہے۔

نا اہل اراکین اسمبلی کے مستقبل پر سپریم کورٹ کا فیصلہ، نااہلی کا فیصلہ درست قرار پائے گا یا معاملہ دوبارہ اسمبلی اسپیکر کے حوالے ہوگا؟

ریاستی اسمبلی سے نا اہل قرار پانے والے 17اراکین اسمبلی کے متعلق سپریم کورٹ چہارشنبہ کے روز اپنا فیصلہ سنائے گی۔اسمبلی اسپیکر رمیش کمار کی طرف سے نا اہل قرار دئیے جانے کے فیصلے کو ان 17اراکین نے سپریم کورٹ میں چیلنج کیا ہے۔ عدالت عظمیٰ میں اس عرضی کی سماعت پوری ہو چکی ہے اور عدالت ...

بھٹکل شرالی کی دختر انجمن ڈاکٹر انیسہ شیخ کو ملی ڈینٹل شعبہ میں اعلیٰ ترین کامیابی : جملہ مضامین کے علاوہ مینگلور کالج کی بہترین طالبہ کے ایوارڈ سے بھی نوازا گیا

دختر ِ انجمن  کاگولڈ میڈل اور رابطہ گولڈ میڈل ایوارڈ سے سرفراز  بھٹکل  کی  ڈاکٹر انیسہ شیخ طبی میدان میں بھی بہترین کارکردگی کا مظاہرہ پیش کرتے ہوئے اے جے اسپتال مینگلورو میں بھی  امتیازی نمبرات سے کامیاب  ہونے کا سلسلہ جاری رکھا ہے اور کالج کی بہترین طالبہ کا ایوارڈ حاصل ...