بنگلورسنٹرل حلقہ کے کانگریس امیدوار رضوان ارشد کی حمایت میں انتخابی مہم تیز

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th April 2019, 11:11 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورور،14 اپریل (ایس او نیوز) بنگلورسنٹرل پارلیمانی حلقہ میں خلوص وجذبات کا ایک سماں دیکھا جارہا ہے اس حلقہ کے اقلیتوں وکمزور طبقات کے ساتھ ساتھ دیگر سکیولر ووٹران کانگریس، جنتادل (سکیولر) امیدوار رضوان ارشد کو کامیاب بنانے کے لئے مکمل طورپر ذہن بنالیا ہے ۔ بنگلورسنٹرل حلقہ کے کانگریس امیدوار رضوان ارشد نے آج مہادیوپورہ اسمبلی حلقہ کے نکندی وارڈ سمیت دیگر علاقوں میں روڈ شو کے ذریعہ انہیں اپنا ووٹ دینے کی گزارش کی۔ان کے ہمراہ کانگریس ، جنتادل (سکیولر) کے مقامی لیڈران اورکارکن بڑی تعداد میں شریک تھے۔اس دوران علاقے کے تمام طبقات کی حمایت کے مکمل یقین کے ساتھ تمام کو متحد طورپر حمایت کے لئے بھی گزارش کی۔رضوان ارشد نے ووٹر حضرات سے گزارش کی کہ اپنی سماجی خدمات کو مزید وسیع کرنے اور اقلیتوں بالخصوص مسلمانوں کے تحفظ اور ترقی کے لئے عملی جامہ پہنانے کیلئے اس مرتبہ انہیں اپنے ووٹ سے نوازیں ۔ انہوں نے کہاکہ اگر اس مرتبہ وہ اس حلقہ سے کامیاب ہوں گے تو حقیقی اقتدار عوام کے ہاتھ آئے گا۔ انہوں نے کہاکہ حلقہ سے فرقہ پرست طاقتوں کو دور رکھنا اور حلقہ میں امن وامان عالم کرنا اور یہاں مقیم تمام طبقات کے افراد کو ترقی اورخوشحالی کی راہ پرگامزن کرنا ان کا اہم مقصد ہوگا۔ انہوں نے کہاکہ اگر کانگریس کو ووٹ دیں تو مرکز میں سکیولر پسند قائد راہل گاندھی کی قیادت میں سکیولر حکومت قائم ہوگی ۔جس میں مسلمان خوشحال اور امن وامان کے ساتھ زندگی گزارسکیں گے ۔ انہوں نے کہاکہ موقع اور مفاد پرست بی جے پی نے اقتدار حاصل کرنے کے بعد اپنے کئے گئے وعدوں کو بھلادیا۔ اس کے برعکس کانگریس انتخابی منشور میں جو وعدے کرتی ہے اس کو صد فیصد پورا کردکھائیں گے ۔اس لئے اس مرتبہ کانگریس کو مضبوط کرنے کی گزارش کی ۔رضوان ارشدجہاں بھی اپنا روڈ شو کررہے ہیں ووٹران بھرپور اپنے تائید کا اعلان کررہے ہیں ایسا لگ رہا ہے کہ رضوان ارشد بھاری اکثریت سے کامیاب حاصل کریں گے ۔

ایک نظر اس پر بھی

ملک میں مجبور پی ایم چاہتی ہے کانگریس، کرناٹک میں ریلیوں میں پھرپاکستان کے حوالے سے مودی کاخطاب

معلق لوک سبھاکے تجزیئے کے درمیان اب بی جے پی نے واضح اکثریت مانگنی شروع کردی ہے ۔وزیر اعظم نریندر مودی نے جمعرات کو دعوی کیا کہ کانگریس ملک میں ایک مجبور وزیر اعظم بنوانا چاہتی ہے۔انہوں نے لوگوں سے مرکز میں قومی سلامتی پر زور دینے والی مضبوط حکومت بنوانے کی اپیل بھی کی۔شمالی ...

لوک سبھا انتخابات کا دوسرا مرحلہ ؛کشمیر سے کنیا کماری تک ہورہی ہے پولنگ؛ شام تک 61 فیصد پولنگ؛ جموں و کشمیر میں سب سے کم ووٹنگ

  لوک سبھا انتخاب کے دوسرے مرحلے کے لیے صبح 7 بجے سے ووٹنگ شروع ہو گئی ہے۔ دوسرے مرحلے میں ملک کی 12 ریاستوں کی 95 لوک سبھا سیٹوں پر ووٹنگ ہو رہی ہے، جس کے لئے 1.78 لاکھ پولنگ بوتھ بنائے گئے ہیں۔ اس میں 1629 امیدوار اپنی قسمت آزمائی کر رہے ہیں۔ دوسرے مرحلے کے دوران اتر پردیش کی 8، مغربی ...