شہریت قوانین میں تبدیلی کے بعد شہریت ختم ہونے کے خطرے پر روک ضروری: اقوام متحدہ سربراہ

Source: S.O. News Service | Published on 20th February 2020, 11:18 AM | عالمی خبریں |

اسلام آباد،20/ فروری (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) ہندوستان کے شہریت ترمیمی قانون (سی اے اے) اور مجوزہ قومی شہری رجسٹر (این آرسی) پر خدشات کے درمیان اقوام متحدہ سربراہ ایتونیو گتاریس نے کہا کہ جب کسی شہریت قانون میں تبدیلی ہوتی ہے تو کسی کی شہریت نہ جائے، اس کے لئے سب کچھ کرنا ضروری ہے-پاکستان کے تین دن کے دورے پر آئے گتاریس سے جب ایک انٹرویو میں پوچھا گیا کہ کیا وہ ہندوستان میں نئے قوانین کو لے کر فکر مند ہیں؟ تو انہوں نے کہاکہ ظاہری طور پر ہوں،کیونکہ یہ ایک ایسا علاقہ ہے جو اقوام متحدہ کی متعلقہ یونٹ سے زیادہ فعال ہے- اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل نے کہاکہ پناہ گزینوں کے لئے موجودہ ہائی کمشنر اس صورت حال کو لے کر کافی سرگرم ہیں،کیونکہ اس طرح کے قوانین سے شہریت جانے کا خطرہ پیدا ہوتا ہے- انہوں نے کہاکہ جب کسی شہریت قانون میں تبدیلی کی جاتی ہے تو یہ خیال رکھنا نہایت ضروری ہے کہ کسی کی شہریت نہ جائے- حکومت ہند کا کہنا ہے کہ سی اے اے اس کا اندرونی معاملہ ہے اور اس کا مقصد پڑوسی ممالک میں ظلم و ستم کا شکار اقلیتوں کو تحفظ فراہم کرنا ہے-

ایک نظر اس پر بھی