میں نے فوجیوں کی توہین نہیں کی، ان کے حالات زندگی بیان کئے ہیں: کمار سوامی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th April 2019, 11:39 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،14اپریل(ایس او  نیوز) وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمارسوامی نے وزیراعظم مودی پر شدید نکتہ چینیوں کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے کہا ہے کہ جھوٹ بولتے وقت انہیں کم از کم اپنا نہ سہی اپنے عہدے کا تو خیال رکھنا چاہئے۔گزشتہ دو دنوں سے ریاست میں انتخابی جلسوں میں مودی کی طرف سے اس بیان پر کہ وزیراعلیٰ کمار سوامی نے کہا ہے کہ فوج میں وہی جوان بھرتی ہوتے ہیں جن کے پاس دو وقت کا کھانا نہیں ہوتا۔وزیر اعلیٰ نے کہاکہ اس طرح کا بیان انہوںنے فوجیوں کی توہین کے لئے نہیں دیا بلکہ حقائق سامنے پیش کئے ہیں۔ فوج کے اعلیٰ افسران بھلے ہی خوشحال زندگی بسر کررہے ہوں لیکن سرحد وں کی چوکیداری کرنے والے جوان ایسے پس منظر سے آتے ہیں جو انتہائی غربت اور مصیبتوں کا شکار ہوتے ہیں۔ پلوامہ حملے میں مارے گئے منڈیا کے جوان گرو کا حوالہ دیتے ہوئے کمار سوامی نے کہاکہ گرو کسی امیر خاندان سے وابستہ نہیں تھا بلکہ ایک معمولی کسان کا بیٹا تھا، اس کے گھر میں بھی دو وقت کی روٹی کے لئے فاق کشی چل رہی تھی۔ مودی کو اگر ان سبھی جوانوں کی فکر ہوتی پلوامہ میں مارے گئے سبھی جوانوں کے ورثاء کو سرکاری نوکری دیتے ، لیکن کرناٹک وہ واحد حکومت ہے جس نے کرناٹک کے شہید جوان گرو کی بیوہ کو سرکاری ملازمت دی۔ انہوں نے کہاکہ دراصل اپنے بیانوں سے مودی ملک بھر میں فوجی جوانوں کی توہین کرتے پھر رہے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ ایسے غیر ضروری معاملے اچھال کر مودی پچھلے پانچ سالوں کے دوران اپنی حکومت کی ناکامیوں پر پردہ پوشی کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔انہیں یہ جواب دیناچاہئے تھاکہ سالانہ دو کروڑ ملازمتیں دینے کے متعلق 2014انہوں نے جو وعدہ کیاتھا اس کا کیا ہوا؟۔ ملک کے ہر شہری کے بینک کھاتے میں پندرہ لاکھ روپے جمع کرانے کی بات کی گئی تھی اس کا کیا ہوا؟۔ ملک میں ہر طرف نفرت کا ماحول پھیلا ہوا ہے ، تعصب عام ہوچکا ہے۔ ان حالات میں مودی بحیثیت وزیراعظم ملک کے تمام طبقوں سے انصاف کرنے کی بجائے ہندو مسلم کی سیاست کررہے ہیں۔ منڈیا لوک سبھا حلقے کی آزاد امیدوار سمالتا کی طرف سے انہیں خطرہ لاحق ہونے کے متعلق شکایت پر کمار سوامی نے کہاکہ سمالتا اپنے لئے جیٹ پلس سیکورٹی حاصل کرلیں یا پھر وہ سیکورٹی حاصل کرلیں جو امریکہ کے صدر کو دی جاتی ہے۔ 
 

ایک نظر اس پر بھی

ملک میں مجبور پی ایم چاہتی ہے کانگریس، کرناٹک میں ریلیوں میں پھرپاکستان کے حوالے سے مودی کاخطاب

معلق لوک سبھاکے تجزیئے کے درمیان اب بی جے پی نے واضح اکثریت مانگنی شروع کردی ہے ۔وزیر اعظم نریندر مودی نے جمعرات کو دعوی کیا کہ کانگریس ملک میں ایک مجبور وزیر اعظم بنوانا چاہتی ہے۔انہوں نے لوگوں سے مرکز میں قومی سلامتی پر زور دینے والی مضبوط حکومت بنوانے کی اپیل بھی کی۔شمالی ...

لوک سبھا انتخابات کا دوسرا مرحلہ ؛کشمیر سے کنیا کماری تک ہورہی ہے پولنگ؛ شام تک 61 فیصد پولنگ؛ جموں و کشمیر میں سب سے کم ووٹنگ

  لوک سبھا انتخاب کے دوسرے مرحلے کے لیے صبح 7 بجے سے ووٹنگ شروع ہو گئی ہے۔ دوسرے مرحلے میں ملک کی 12 ریاستوں کی 95 لوک سبھا سیٹوں پر ووٹنگ ہو رہی ہے، جس کے لئے 1.78 لاکھ پولنگ بوتھ بنائے گئے ہیں۔ اس میں 1629 امیدوار اپنی قسمت آزمائی کر رہے ہیں۔ دوسرے مرحلے کے دوران اتر پردیش کی 8، مغربی ...