چکمگلورو: سرکاری ڈگری کالج میں اسکارف اور کیسری شال کا تنازعہ : سرپرستوں کی میٹنگ میں حل

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 11th January 2022, 8:56 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

چکمگلورو:11؍ جنوری (ایس اؤ نیوز) گذشتہ دس دنوں میں ضلع کے کوپا تعلقہ بالگڑی دیہات کی سرکاری ڈگری کالج میں کیسری شال اور اسکارف کا تنازعہ پُرامن طور پر حل ہونے کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔

کالج کے پرنسپال نے کالج میں زیر تعلیم طالبات کے سرپرستوں اور والدین کی میٹنگ بلائی۔ میٹنگ میں متحدہ فیصلہ لیاگیا کہ کالج میں مسلم طالبات اسکارف نہیں پہنیں گی بلکہ سر پر صرف  پراپنی اوڑھنی پہن سکتی ہیں۔یہ بھی کہا گیا ہے کہ وہ  اوڑھنی پِن سے باندھ نہیں سکتیں۔

میٹنگ میں کالج پرنسپال اننت نے بات کرتےہوئےکہاکہ 2018میں اسی طرح کا تنازعہ پیدا ہواتھا اس وقت منعقدہ میٹنگ میں فیصلہ لیاگیا تھا کہ مسلم طالبات سرپر اوڑھنی اوڑھ سکتی ہے۔ اب کی بار بھی یہی مسئلہ پیدا ہواہے۔ اس مرتبہ بھی آپ سب کے صلاح ومشورے سے اسی طرح کافیصلہ لینے کا طئے کیاگیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ  کالج میں طلبا نظم وضبط کی خلاف ورزی کریں گے تو ان کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔انہوں نے امنتبہ کیا کہ  اگر کوئی طلبا آج کے فیصلے کےخلاف عمل کرتےہیں تو ان کے والدین کو بلا بھیج کر ان کی ٹرانسفر سرٹیفکٹ ہاتھ میں دے کر بھیج دیں گے۔

میٹنگ میں  رکن اسمبلی راجے گوڈا نے بات کرتےہوئے کہاکہ طلبا پڑھائی کی طرف توجہ دیں ، کالج میں طلبا نظم وضبط کے ساتھ رہیں اور کالج میں کسی کے جذبات کو ٹھیس پہنچانے کاکام نہ کریں۔

کالج میں مسلم طالبات اسکارف پہن کر کالج آنے لگیں تو ہندو طالبات نے بھی کیسری شال ڈال کر آنے لگیں۔ ایک ہفتہ پہلے اسکارف کے خلاف احتجاج بھی کیاگیا تھا۔ آج کالج پرنسپال نے والدین وسرپرستوں کی میٹنگ منعقد کرتےہوئے مسئلہ کو حل کرلیا۔

ایک نظر اس پر بھی

کاروار: دانتوں میں درد اور سردرد جیسی عام بیماریوں پر اسپتال نہ جائیں ،شدید بیمار پڑنے یا ایمرجنسی کی صورت میں ہی اسپتال کا رخ کریں: کاروار اور ہوناور میں پانچ دنوں تک اسکول بند

شدید بیمار پڑنے اور ایمرجنسی ہونے پر ہی سرکاری، پرائیویٹ  اسپتال یا سوپر اسپیشالٹی اسپتال کا رُخ کریں اور معمولی بیمار مثلاً دانتوں کا درد، سر میں درد وغیرہ پر  اسپتالوں کا رُخ نہ کیا جائے، ایسی عام بیماریوں کے لئے مقامی ڈاکٹروں کے ذریعے علاج کراسکتے ہیں۔ اس طرح  کا حکم حکومت ...

جامعہ اسلامیہ بھٹکل کے ہونہار فرزند کابڑا کارنامہ ۔ انٹرنیشنل سطح پر روشن کیا بھٹکل کانام

کہتے ہیں کہ درخت اپنے پھل سے پہچانا جاتا ہے اور تعلیمی ادارے اپنے فارغین کی لیاقت اور صلاحیت سے پہچانے جاتے ہیں، ہندوستان میں بڑے تعلیمی اداروں کا نام کچھ شخصیات نے ہی روشن کیا ہے ،  الحمد للہ بھٹکل کے دینی و عصری تعلیم گاہوں کے طلبہ و طالبات بھی بڑی حد تک اپنی مادر علمی کی نیک  ...

کانگریس لیڈران نے مرکزی حکومت پر لگایا پسماندہ ہندو سماج اورمظلوم طبقے کی ہتک کرنے کا الزام

ہرسال یوم جمہوریہ کی تقریب میں ریاستوں کی نمائندگی کرنےوالی نمائش  کا اہتمام ہوتاہے۔ اس مرتبہ  ریاست کیرلا کی جانب سےبھیجے گئے انقلابی شخصیت ، سماجی مصلح شری نارائن گرو مجسمہ کو نمائش میں شامل کرنے سے مرکزی حکومت نے انکار کیاہے۔ اس طرح  مرکزی حکومت نے بھارت کی تاریخی ، اہم ...

راگھو چڈھا کا الیکشن کمیشن پر الزام، کہا،الیکشن کمیشن کسی پارٹی کی مددکر رہا ہے

راگھو چڈھا نے آج پریس کانفرنس کرتے ہوئے الیکشن کمیشن پر بڑا الزام لگایا ہے۔ انہوں نے کہاہے کہ چند روز قبل ہم نے پریس کانفرنس کے ذریعے بتایا تھا کہ الیکشن کمیشن رولز میں تبدیلی کرکے نئی سیاسی جماعت کو رجسٹر کرناچاہتاہے۔ الیکشن کمیشن اس پارٹی کو انتخابی نشان دینے جا رہا ہے۔ ...

دہلی میں صبح سے دھند کی چادر، سردی کا ستم جاری

 قومی راجدھانی دہلی اور اس سے ملحقہ علاقوں کو ہفتہ کو دھند نے اپنی لپیٹ میں لے لیا اور سردی کی لہر جاری رہی۔ محکمہ موسمیات کے مطابق راجدھانی اور این سی آر میں اگلے چار دنوں تک گھنی سے درمیانی دھند چھائی رہ سکتی ہے۔

جامعہ اسلامیہ بھٹکل کے ہونہار فرزند کابڑا کارنامہ ۔ انٹرنیشنل سطح پر روشن کیا بھٹکل کانام

کہتے ہیں کہ درخت اپنے پھل سے پہچانا جاتا ہے اور تعلیمی ادارے اپنے فارغین کی لیاقت اور صلاحیت سے پہچانے جاتے ہیں، ہندوستان میں بڑے تعلیمی اداروں کا نام کچھ شخصیات نے ہی روشن کیا ہے ،  الحمد للہ بھٹکل کے دینی و عصری تعلیم گاہوں کے طلبہ و طالبات بھی بڑی حد تک اپنی مادر علمی کی نیک  ...