بھٹکل: شمالی کینرا میں کووڈ وباء کا بدلتا منظر نامہ : سب سے آخری پوزیشن والا ضلع پہنچ گیا سب سے آگے ؛ کون ہے ذمہ دار ؟

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 15th May 2021, 6:50 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں | اسپیشل رپورٹس |

بھٹکل  15/ مئی (ایس او نیوز) کورونا کی دوسری لہر جب ساری ریاست کو اپنی لپیٹ میں لے رہی تھی تو ضلع شمالی کینرا پوزیٹیو معاملات میں گزشتہ لہر کے دوران سب سے آخری پوزیشن پر تھا۔ لیکن پچھلے دو تین دنوں سے بڑھتے ہوئے پوزیٹیو اورایکٹیو معاملات کی وجہ سے اب یہ ضلع ریاست میں سب سے  اوپری درجہ میں پہنچ گیا ہے۔ بس ذرا سا اطمینان اس بات سے ہوسکتا ہے کہ یہ ضلع نمبر ایک پوزیشن سے ہٹ کر اب چوتھے مقام پر آگیا ہے، لیکن یہ کوئی اچھی علامت  نہیں ہے کیونکہ دن بدن گاوں گاوں اور گھر گھر میں متاثرین کی تعداد میں اضافہ ہوتا جارہا ہے چاہے وہ دوسرے اضلاع کے مقابلے میں کم ہی کیوں نہ ہو۔

     کورونا کی پہلی لہر کے دوران جب لاک ڈاون لاگو تھا تو اس وقت ضلع انتظامیہ نے عوام کو روزانہ کی ضروریات  اور طبی امداد و سہولتیں فراہم کرنے میں بڑا نام کمایا تھا۔ اس لحاظ سے ضلع شمالی کینرا پوری ریاست کے لئے ایک ماڈل بن گیا تھا۔ اس وجہ سے لوگوں کا بازاروں میں آنا جانا اور بھیڑ لگنا بھی کم ہوگیا تھا۔ عوام کا طبی سروے بھی دو دو مرتبہ کروایا گیا۔ بیماری سے متعلق بیداری لانے کے لئے مسلسل مہم چلائی گئی تھی۔ احتیاطی تدابیر اختیار کرنے یا پھر کووڈ گائڈ لائنس کو لاگو کرنے میں کچھ زیادہ ہی سختی برتی گئی تھی اور اس وجہ سے کووڈ پر قابو پانے میں ضلع انتظامیہ کو بڑی کامیابی ملی تھی۔

    ذمہ دار افسران کیا کر رہے ہیں؟:    کووڈ کی دوسری لہر پر قابو پانے کے لئے حالانکہ ضلع ڈپٹی کمشنر نے  مختلف سینئر افسران کو اہم ذمہ داریاں  سونپی ہیں، لیکن سوال یہ ہے کہ کیا تمام افسران پوری دلجمعی کے ساتھ اپنی ذمہ داریاں ادا کرنے میں مصروف ہیں؟ صرف محکمہ پولیس کی طرف سے لاک ڈاون لاگو کرنے کی ذمہ داری نبھانے کا کام دکھائی دے رہا ہے۔ بقیہ دوسرے محکمہ جات کے افسران کیا کچھ کر رہے ہیں اور وہ اپنے شعبہ جات میں کس حد تک کامیاب ہیں، اس کا اندازہ نہیں ہورہا ہے۔

    کیا افسران کے درمیان تال میل نہیں ہے؟:  ضلع میں کووڈ متاثرین کا پتہ لگانے، طبی امداد فراہم کرنے، کووڈ کی جانچ کروانے، جانچ رپورٹ جلد از جلد فراہم کرنے جیسے محاذوں پر ضلع انتظامیہ اور متعلقہ افسران تال میل کے ساتھ کام کرتے نظر نہیں آرہے ہیں۔ بیرونی اضلاع یا ریاستوں سے ضلع کے اندر داخل ہونے والوں پر کڑی نگاہ رکھنے کی بات تو کی جاتی ہے، مگر یہ صرف بیانات کی حد تک ہے ۔ عملی طور پر ایسی کوئی سختی کہیں بھی نظر نہیں آتی۔ حالانکہ وباء پر ہر قیمت پر قابو پانے کی ذمہ داری ضلع انتظامیہ کی ہے۔ اور اس وقت جس رفتار سے وباء بڑھ رہی ہے، اس کے تقاضہ کے مطابق اتنی سرعت اور تندہی سے اس پر قابو پانے کی کوشش ہوتی دکھائی نہیں دیتی۔

    ایڈیشنل ڈی سی کی ہدایت:    اس پس منظر میں پوزیٹیو معاملات میں بے حد اضافہ کو دیکھتے ہوئے ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر کرشنا مورتی نے تمام اسسٹنٹ کمشنرس اور تحصیلداروں کو ہدایت جاری کی ہے کہ   وہ اپنی اپنی ذمہ داریاں پوری سنجیدگی سے اور  نتیجہ خیز طریقے پر ادا کریں ۔ تاکہ روز بروز بڑھتے ہوئے پوزیٹیو معاملات پر روک لگائی جا سکے۔ اس کے علاوہ پنچایت اور میونسپالٹی کے چیف افسران کے علاوہ ٹاسک فورس کو آپسی تال میل بنائے رکھنے اور پوری سنجیدگی کے ساتھ کورونا وباء پر قابو پانے کے لئے سرگرم رہنے کو کہا گیا ہے۔
 

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل جالی میں انڈر گراونڈ ڈرینیج کا مسئلہ؛ ممکنہ کنووں کو خراب کرنے والے چمبرس کی درستگی کے بعد ہی کام کو بڑھایا جائے گا آگے؛ ایک ہفتہ کے اندر سڑکوں کی مرمت کی یقین دھانی

بھٹکل کے جالی پٹن پنچایت حدود میں  تعمیر کئے جارہے  انڈر گراونڈ ڈرینیج (یو جی  ڈی)  کا مسئلہ بارش کے بعد مزید پیچیدہ ہونے کے بعد  گذشتہ روز  جالی پنچایت آفس میں  واٹر بورڈ انجینر سمیت  بھٹکل انڈر گراونڈ ڈرینیج کے کام کرنے والے کنٹریکٹر کے  ساتھ میٹنگ کا انعقاد کیا گیا تھا جس ...

کورونا کی تیسری لہر کو لے کر ریاستی ماہرین کمیٹی نے ریاستی حکومت کو سونپی سفارشی رپورٹ : وائرس شدت اختیار کرنےپر 3لاکھ بچے متاثر ہونے کا خدشہ

اگلے 6سے 8ہفتوں میں ملک میں کورونا کی تیسری لہر شروع ہونےکے متعلق ماہرین نےمتنبہ کیا تو ریاستی  حکومت نے ڈاکٹر دیوی شٹی کی قیادت میں کمیٹی تشکیل دیتے ہوئے کہا تھا کہ وہ بتائیں کہ  تیسری لہر کو روکنے کے لئے کیا کیا اقدامات کریں۔ ڈاکٹر دیوی شٹی کی قیادت والی ماہرین کی کمیٹی نے ...

منگلورو : کلاک ٹاور کے پاس پولیس کی اچانک چیکنگ ۔ غیر ضروری طور پر سڑکوں پر گاڑیاں دوڑانے والوں کے خلاف کی گئی کارروائی

دو دن پہلے شہر میں لاک ڈاون کے اوقات میں کمی کرنے کے بعد سڑکوں پر موٹر گاڑیوں کا ہجوم لگ گیا تھا۔ اس پر قابو پانے کے لئے پولیس کے افسران نے کلاک ٹاور کے پاس اچانک چیکنگ شروع کردی اور غیر ضروری طور پر سڑکوں پر گاڑیاں دوڑانے والوں کے خلاف معاملات درج کرلیے۔

اترکنڑا میں 77373افراد کو کووڈکا دوسرا ٹیکہ دیا جاچکا ہے: صحت عامہ کی رپورٹ

اترکنڑا میں ابھی تک 77173لوگوں کو کووڈکا ٹیکہ لگایاجاچکاہے۔ منگل کی شام 7بجے تک ملی رپورٹ کے مطابق 1590ڈوز باقی ہیں۔ جس میں کووی شیلڈ 740اورکو ویکسن 850ڈوز ٹیکوں کا ذخیرہ موجود ہے۔ اس بات جانکاری  ڈسٹرکٹ  آر سی ایچ افسر ڈاکٹر رمیش راؤ نے دی۔

جناب ایس ایم سید محی الدین مارکیٹ صاحب مرکزی خلیفہ جماعت المسلمین بھٹکل کے نئے صدر منتخب

مرکزی خلیفہ جماعت المسلمین بھٹکل  کے نائب صدرجناب ایس ایم سید محی الدین مارکیٹ صاحب اب مرکزی خلیفہ جماعت المسلمین بھٹکل کے  صدر منتخب ہوئے ہیں۔ پیر کو جماعت کے دفتر میں منعقدہ انتظامیہ میٹنگ میں  انہیں اس عہدہ کےلئے بالاتفاق رائے منتخب کیا گیا۔ یاد رہے کہ خلیفہ جماعت ...

کاروار میں کووڈ ٹیکہ مہم کا افتتاحی پروگرام : ہر ایک ٹیکہ لگوائیں اور اپنی جان کی حفاظت کریں : روپالی نائک

کورونا پر قابو پانے کے لئے حکومتیں کام کررہی ہیں، ملک بھر میں 21جون سے شروع ہوئے مفت کووڈ ٹیکہ مہم میں ہرایک ٹیکہ لگاتے ہوئے اپنی جان کی حفاظت کا سامان کرنے کی رکن اسمبلی روپالی نائک نے عوام سے اپیل کی۔

میسورو میں ’ڈیلٹا پلس‘ فارم کا پہلا کیس سامنے آیا

میسورو میں کورونا وائرس سے متعلق ’ڈیلٹا پلس‘ شکل کا پہلا کیس سامنےآیا ہے۔ تاہم متاثرہ شخص کو اس مرض کی کوئی علامت نہیں ہے اور جو بھی اس کے ساتھ رابطہ میں آیا ہے وہ انفکیشن میں نہیں ہے۔ ریاستی وزیر صحت ڈاکٹر کے سدھاکر نے یہ جانکاری دی۔ 

سابق وزیر اعظم دیو ےگوڑا پر 2 کروڑ روپے جرمانہ عائد

ریاست کرناٹک کی بنگلورو کی ایک عدالت نے 10 سال قبل ٹیلی ویژن انٹرویو میں نندی انفراسٹرکچر کوریڈور انٹرپرائزز (نائس لمیٹڈ) کے خلاف توہین آمیز بیانات دینے پر سابق وزیر اعظم ایچ ڈی دیوے گوڑا کو کمپنی کو 2 کروڑ روپے ہرجانے کے طور پر ادا کرنے کی ہدایت کی ہے۔

کرناٹک میں مزید 4 اضلاع اَن لاک کی رعایتیں، دوپہر تک دکانیں کھولنے کی اجازت

کووڈ۔19 کا پھیلاؤ کم ہونے کے  سبب  مزید 4 اضلاع میں حکومت نے اَن لاک کی رعایتیں دی ہیں، یہاں کووڈ پازیٹیو معاملات کی شرح 5 فیصد سے کم ہوگئی ہے۔ دکشن کنڑا، ہاسن، داونگیرے اور چامراج نگر میں صبح 6 بجے تا دوپہر 1 بجے تک ضروری اشیا کی خریداری کے لئے دکانیں کھلی رکھنے کی اجازت دی گئی ...

بنگلور کے جے ہلّی اور ڈی جے ہلّی تشدد معاملے میں اے پی سی آر کی کوششوں سے چار لوگوں کو ملی ضمانت

گذشتہ سال اگست میں  بنگلور کے ڈی جے ہلّی اور کے جے ہلّی میں ہوئے تشدد کے واقعات    اور رکن اسمبلی  اکھنڈ شری نواس مورتی کے مکان  کو آگ لگانے کے معاملے  میں گرفتار  رحمان خان اور محمد عدنان سمیت چار لوگوں  کو کرناٹک ہائی کورٹ  نے ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دیا ہے۔

بنگلورو: ’میڈیکل ٹیررزم ‘ کا ٹائٹل دینے والی بی جے پی اب خاموش کیوں ہے ؟:کانگریس کا سوال

بیڈ بلاکنگ دھندے کو ’’میڈیکل ٹیررزم ‘‘ کا نیا ٹائٹل دینے والی بی جےپی اب خاموش  کیوں ہے، اس سلسلے میں کوئی زبان  کیوں نہیں کھول رہا ہے، یہ سوال   ریاستی کانگریس نے بی جے پی سے کرتے ہوئے  جواب مانگا ہے۔

فائیوجی کا ریڈئیشن نقصان دہ نہیں ، بلکہ ٹیکنالوجی کا بےجا استعمال نقصان دہ: فائیوجی کے ماہر انجنئیر محمد سلیم نے فراہم کیں معلومات

فائیو جی ٹکنالوجی ان دنوں عوام کے درمیان بحث کا موضوع ہے۔ کورونا وبا کو ایک سازش قرار دیتے ہوئے لوگوں نے اس کے تار 5جی ٹکنالوجی سے جوڑنے کی بھی کوشش کی ہے۔یہ سارا معاملہ کیا ہے اسے سمجھنے کے لیے نائب امیر جماعت اسلامی ہند پروفیسر محمد سلیم انجینئر سے  مشرف علی کی بات چیت کا ...

کرونا ویکسین اور افواہوں کا بازار ؛ افسوسناک بات یہ ہے کہ بے بنیاد افواہیں مسلم حلقوں میں زیادہ اڑائی جا رہی ہیں ۔ ۔۔۔ آز: سہیل انجم

مئی کا مہینہ ہندوستان کے لیے انتہائی خطرناک ثابت ہوا۔ اس مہینے میں کرونا کی دوسری لہر نے ایسی تباہی مچائی کہ ہر شخص آہ و بکا کرنے پر مجبور ہو گیا۔ اپریل اور مئی کے مہینے میں کرونا سے ایک لاکھ ساٹھ ہزار افراد ہلاک ہوئے۔ نہ تو شمشانوں میں چتا جلانے کی جگہ تھی اور نہ ہی قبرستانوں ...

رکن اسمبلی نے اپنے ترقیاتی فنڈ سے بھٹکل اور ہوناور سرکاری اسپتال کے لئے کیا آکسیجن سہولت والی دو ایمبولنس کا انتظام

بھٹکل ۔ہوناور اسمبلی حلقہ کے  ایم ایل اے سنیل نائک نے اپنے  حلقہ کے دو تعلقہ اسپتالوں کے لئے آکسیجن والی سہولت کا انتظام کیا  جس سے کووڈ کے اس وبائی دور میں   عوام کو فوری طور پر  ایمبولنس  کی مدد سے اسپتال پہنچنے میں آسانی ہوگی۔

ملت کے کروڑ وں کے اثاثے ہیں مگر،غریب مسلمان گزربسر کیلئے ز یورات گروی رکھنے پر مجبور۔ مسلمانوں کی اکثریت آمدنی سے بالکل محروم۔بلا سودی قرض کی فراہمی کے ذریعہ پریشان حال ملت کی مدد ممکن

 کورونا وائرس اور لاک ڈاؤن نے سارے ملک میں معاشی بدحالی پیدا کردی ہے۔ ملک کے تمام ہی طبقات معاشی پریشانیوں اور مسائل کا شکار ہیں۔ خاص طور پر مسلمان اس لاک ڈاؤن میں بری طرح سے متاثر ہوئے ہیں۔ ان کی معیشت تباہ ہوچکی ہے۔