منگلورو۔بنگلوروٹریک پرچٹان توڑنے کا کام مسلسل جاری۔ دن کے وقت چلنے والی ریل گاڑیاں 24جولائی تک کے لئے منسوخ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 23rd July 2019, 1:01 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

سولیا23/جولائی (ایس او نیوز) مانی بندا کے قریب سبرامنیا سکلیشپور ریلوے ٹریک پر ایک بڑی چٹان لڑھکنے کا خطرہ پیدا ہوگیا تھا۔ اس حادثے کو روکنے کے لئے پہاڑی تودے کو دھماکے سے توڑنے کاکام پچھلے دو تین دن سے جاری ہے جس کے لئے ہیٹاچی مشین کے کامپریسر اور بارود کا استعمال کیا جارہا ہے۔ لیکن تیز برسات کی وجہ سے دن رات کام جاری رکھنے کے باوجود اس کی رفتار بہت دھیمی ہوگئی ہے۔

    ایک طرف پہاڑی تودے کو توڑنے کے بعد نیچے گرنے والا ملبہ ہٹایا جارہا ہے تو دوسری طرف تیز برسات کی وجہ سے بڑی مقدار میں مٹی اور کیچڑ ریلوے ٹریک پر اتررہا ہے۔ بڑا مسئلہ اس ملبے کو ہٹانے میں اس لئے پیش آرہا ہے کہ قریب میں کوئی ایسی کھلی جگہ یا میدان نہیں ہے جہاں ملبے کا ڈھیر لگایا جاسکے۔ اس وقت سکلیشپور۔سبرامنیا ریلوے سیکشن سے جڑے ہوئے عملے کے 80مزدور اس کام میں لگے ہوئے ہیں۔بھاری برسات کے علاوہ رات کے وقت اندھیرے کی وجہ سے بھی سے مشکلات پیش آرہی ہیں۔ بتایاجاتا ہے کہ ایک جنریٹر کے ذریعے روشنی کا انتظام کیا گیا ہے جو ناکافی ہے۔ افسران اور مزدوروں کے لئے کھانااور مشینوں کے ایندھن وغیرہ سبرامنیا روڈ ریلوے اسٹیشن سے ٹرالیز پرپہنچایاجارہاہے۔  

    افسران کا کہنا ہے کہ اس پوری مہم کو اختتام تک پہنچانے کے لئے مزید تین دنوں کا وقت لگ سکتا ہے۔اس لئے دن میں چلنے والی منگلورو۔بنگلورو ریل گاڑیاں 24جولائی تک منسوخ کردی گئی ہیں جبکہ رات کے وقت چلنے والی ٹرینوں کے لئے متبادل راستہ استعمال کرنے کے لئے کہا گیا ہے۔یہاں پر پہاڑی تودا پھوڑنے سے گرنے والے ملبے اور بار ش سے ٹریک پر اترنے والے کیچڑ کو دیکھتے ہوئے میسورو ریلوے ڈیویژن کے سینئر افسران نے اندیشہ ظاہر کیا ہے کہ منگلورو۔بنگلورو روٹ پر مزید ایک ہفتے تک ٹرین سروس پوری طرح بحال نہیں ہوسکے گی۔
 

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل: مرڈیشور میں راہ چلتی خاتون کو اغوا کرنے کی کوشش ہوگئی ناکام؛ علاقہ میں تشویش کی لہر

تعلقہ کے مرڈیشور میں ایک خاتون کو اغوا کرنے کی کوشش اُس وقت  ناکام ہوگئی جب اُس نے ہاتھ پکڑ کھینچتے وقت چلانا اور مدد کے لئے پکارنا شروع کردیا،  وارات  منگل کی شب قریب نو بجے مرڈیشور کے نیشنل کالونی میں پیش آئی۔واقعے کے بعد بعد نہ صرف مرڈیشور بلکہ بھٹکل میں بھی تشویش کی لہر ...

کیا شمالی کینرا سے شیورام ہیبار کے لئے وزارت کا قلمدان محفوظ رکھا گیا ہے؟

کرناٹکاکے وزیراعلیٰ  ایڈی یورپا نے دو دن پہلے اپنی کابینہ کی جو تشکیل کی ہے اس میں ریاست کے 13اضلاع کو اہمیت دیتے ہوئے وہاں کے نمائندوں کو وزارتی قلمدان سے نوازا گیا ہے۔اور بقیہ 17اضلاع کو ابھی کابینہ میں نمائندگی نہیں دی گئی ہے۔

ساگر مالا منصوبہ: انکولہ سے بیلے کیری تک ریلوے لائن بچھانے کے لئے خاموشی کے ساتھ کیاجارہا ہے سروے۔ سیکڑوں لوگوں کی زمینیں منصوبے کی زد میں آنے کا خدشہ 

انکولہ کونکن ریلوے اسٹیشن سے بیلے کیری بندرگاہ تک ’ساگر مالا‘ منصوبے کے تحت ریلوے رابطے کے لئے لائن بچھانے کا پلان بنایا گیا اور خاموشی کے ساتھ اس علاقے کا سروے کیا جارہا ہے۔

ماڈرن زندگی کا المیہ: انسانوں میں خودکشی کا بڑھتا ہوا رجحان۔ ضلع شمالی کینرا میں درج ہوئے ڈھائی سال میں 641معاملات!

جدید تہذیب اور مادی ترقی نے جہاں انسانوں کو بہت ساری سہولتیں اور آسانیاں فراہم کی ہیں، وہیں پر زندگی جینا بھی اتنا ہی مشکل کردیا ہے۔ جس کے نتیجے میں عام لوگوں اور خاص کرکے نوجوانوں میں خودکشی کا رجحان بڑھتا جارہا ہے۔

منگلورو پولیس نے ایک اور مشکوک کار کو پکڑا؛ پنجاب نمبر پلیٹ والی کار کے تعلق سے پولس کو شکوک و شبہات

دو دن دن پہلے لٹیروں اور جعلسازوں کی ایک ٹولی کے قبضے سے منگلورو پولیس نے ایسی کار ضبط کی تھی جس پر نیشنل کرائم انویسٹی گیشن بیوریو، گورنمنٹ آف انڈیا لکھا ہوا تھا۔اب مزید ایک مشکوک کار کو پولیس نے اپنے قبضے میں لیا ہے۔ جس پر بھی گورنمینٹ آف انڈیا لکھا ہوا ہے۔

ریاستی حکومت نے آئی ایم اے فراڈ کیس کی جانچ سی بی آئی کے حوالے کیا

ریاست کی سابقہ کانگریس جے ڈی ایس حکومت کے دور میں کی گئی مبینہ ٹیلی فون ٹیپنگ کی سی بی آئی جانچ کے ا حکامات صادر کرنے کے دودن بعد ہی آج ریاستی حکومت نے کروڑوں روپیوں کے آئی ایم اے فراڈ کیس کی جانچ سی بی آئی کے سپرد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

کیا شمالی کینرا سے شیورام ہیبار کے لئے وزارت کا قلمدان محفوظ رکھا گیا ہے؟

کرناٹکاکے وزیراعلیٰ  ایڈی یورپا نے دو دن پہلے اپنی کابینہ کی جو تشکیل کی ہے اس میں ریاست کے 13اضلاع کو اہمیت دیتے ہوئے وہاں کے نمائندوں کو وزارتی قلمدان سے نوازا گیا ہے۔اور بقیہ 17اضلاع کو ابھی کابینہ میں نمائندگی نہیں دی گئی ہے۔

بنگلورو: نشے میں دھت شخص نے فٹ پاتھ پر 7 لوگوں کو کچل دیا

شراب کے نشے میں دھت ایک شخص نے بہت تیز رفتار کار فٹ پاتھ پر چڑھا دی اور فٹ پاتھ پر چل رہے 7 افراد اس کار کی زد میں آ گئے۔ زخمیوں کو فوراً اسپتال پہنچایا گیا اور خبر لکھے جانے تک ان لوگوں کی حلات نازک بنی ہوئی ہے۔ یہ واقعہ بینگلورو کے ایچ ایس آر لے آؤٹ علاقے کا ہے۔