چندریان مشن تقریباً سو فیصد کامیاب رہا، اسرو کے چیئرمین کے سیون کا بیان

Source: S.O. News Service | Published on 8th September 2019, 12:15 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،8؍ستمبر (ایس او نیوز؍یو این آئی)  خلائی تحقیق کی ہندوستانی تنظیم (اسرو) کے چیئرمین کے سیون نے کہا کہ، 'ا بھی چندریان -2 کے لینڈر وکرم سے ہمارا رابطہ ٹوٹ گیا ہے، لیکن اگلے 14 دنوں کے اندر لینڈر سے دوبارہ رابطہ قائم کرنے کی کوشش کریں گے۔ ڈاکٹر کےسیون نے کہا کہ لینڈر کا کنٹرول سینٹر سے رابطہ ٹوٹ جانے کے باوجود چندریان مشن تقریبا سوفیصد کامیاب رہا ہے اور گگن يان سمیت مستقبل کا کوئی بھی مشن آج (7 ستمبر) کے واقعہ کی وجہ سے متاثر نہیں ہوگا۔

اسرو کے چیف سیون نے کہا، ’’وکرم کی سافٹ لینڈنگ میں 30 کلومیٹر کی اونچائی سے سطح تک اترنے میں چار مرحلے تھے۔ ان میں تین مرحلے کامیابی سے پورے کئے گئے۔ ہم صرف آخری مرحلہ مکمل نہیں کر سکے۔ تب تک لینڈر سے ہمارا رابطہ ٹوٹ گیا۔‘‘

’ڈی ڈی نیوز‘ کے ساتھ ایک خصوصی انٹرویو میں ڈاکٹر سیون نے کہا کہ لینڈر سے رابطہ منقطع ہونا نہ تو مشن کی ناکامی ہے اور نہ ہی اسرو کے لئے کوئی دھچکا۔ لینڈر وکرم سے رابطہ دوبارہ قائم کرنے کی کوششیں مسلسل جاری رہیں گی ۔

انہوں نے کہا کہ آربیٹر بالکل اچھی طرح کام کر رہا ہے اور اس معاملے میں ہم نے جو ہدف مقرر کئے تھے، تقریبا تمام حاصل کر لیے ہیں۔ ویسے تو چاند کے مدار میں آربیٹر ایک سال تک چکر لگانا طے کیا گیا ہے لیکن اس میں ساڑھے سات سال کے لئے ایندھن ہے۔ اس ساڑھے سات سال میں وہ پورے چاند کی میپنگ کرسکے گا۔

اسرو کے چیئرمین ڈاکٹر کے سیون نے بتایا کہ یہ پہلی بار ہے کہ چاند پر بھیجے گئے کسی آربیٹر میں ایل بینڈ سار لگایا گیا ہے۔ چندریان -1 سمیت اب تک کے سبھی مشن میں ایس بینڈ سار کا استعمال کیا گیا تھا۔ چندریان -2 میں دونوں ہیں۔ ایل بینڈ سار کی خاصیت یہ ہے کہ یہ چاند کی سطح سے 10 میٹر نیچے تک پانی اور برف کا پتہ لگانے کے قابل ہے۔یہ پہلی بار ہے کہ کسی آربیٹر پر پانچ مائكرون ویب لینتھ والے ہائی ریجولیشن انفراریڈ اسپیكٹرو میٹر کا استعمال کیا گیا ہے۔

چندریان-2 کے پاس کئی سائنس پے لوڈ ہیں جو چاند کی ارتقا اور اس کی نشوونما کو تفصیل سے سمجھنے کا راستہ ہموار کریں گے۔ آربیٹر کے تحت 8 پے لوڈ ہیں ، لینڈر کے پاس 3 پے لوڈ ہیں اور روور کے پاس دو پے لوڈ ہیں۔ لینڈر اور روور کے پے لوڈ لینڈنگ سائٹ کے نزدیک صورتحال کا تجزیہ اور مطالعہ کریں گے۔

چاند کی سطح سے 2.1 کیلومیٹر کی دوری پر چندریان 2 کے لینڈر وکرم سے رابطہ ٹوٹ جانے کے بعد مایوس اسرو کے چیئرمین سیون کا وزیراعظم نے گلے لگاکر حوصلہ بڑھایا۔اسرو کے بنگلورو سنٹر سے آج صبح اپنی روانگی سے قبل کے سیون نے وزیراعظم کو وداع کیا تو ان کی آنکھوں میں آنسو تھے تاہم مودی نے ان کو گلے لگایا اور ان کا حوصلہ بڑھایا۔

ایک نظر اس پر بھی

کورونا پرقابو پانے کے لئے بیدر میں خدمات انجام دینے والے ڈاکٹر محمد سہیل کے جذبے کو لوگ کررہے ہیں سلام

یدر شہر میں 10افراد کی کورونا وائرس سے متاثر ہونے کی تصدیق کے بعد بیدر شہر کو مکمل طورپر لاک ڈاؤن کردیا گیا ہے مگر اس دوران بیدر کے ایک ڈاکٹر محمد سہیل حسین انچارج قدیم سرکاری دواخانہ بیدر نے انسانی جذبہ ہمدردی سے سر شا رہوکر اپنے طبی عملہ کے ساتھ دن رات COVID-19 کورونا وائرس جیسے ...

منگلوروکے ایک دیہات میں لگا نیا پوسٹرہندو بیوپاریو! ہمارے گاؤں میں آکر تجارت کرو:منفی پروپگنڈا کرنے والوں کومنھ توڑ جواب

کورونا وائرس کی وباء کو مسلمانوں کی سازش قرار دینے اور ان کے سماجی بائیکاٹ کرنے کی جو لہر چل پڑی ہے اور مختلف مقامات پر مسلمانوں کے داخلے اور آمد ورفت پر پابندی کے جو پوسٹرس، بیانرس اور آڈیو مسیج عام ہورہے ہیں اس سے سماج میں ایک عجیب تشویش پیدا ہوگئی ہے۔

ایمرجنسی معاملات میں کیرالہ کے مریضوں کا علاج مینگلور کے ڈیرلکٹہ اسپتال میں کرنےجنوبی کینرا ڈپٹی کمشنرکی رضامندی

کورونا وائرس کی وبا ء پھیلنے کے بعد کرناٹکا نے کیرا لہ کے ساتھ لگنے والی تمام سرحدیں بند کردی تھیں، جس کی وجہ سے مینگلور سے لگے کیرالہ کے سرحدی علاقہ  کاسرگوڈ اور اطراف سے علاج کے لئے منگلورو آنے والے مریض بری طرح متاثر ہوگئے تھے۔پھر یہ تنازعہ سپریم کورٹ تک جا پہنچا تھا۔ اور ...

منڈیا کے گاؤں والوں نے کرنسی نوٹوں کو دھویا، مسلمانوں سے کرنسی لئے جانے کی بنا پر نوٹوں کو دھونے کی خبریں

ریاست کرناٹک  کے دیہی علاقوں میں کورونا وائرس کی وباء تا حال نہیں پہنچی مگر اس کے تعلق سے سماجی کلنک یہاں اپنی موجودگی کا احساس دلارہا ہے۔ کیمرے میں قید ایک واقعہ میں منڈیا کے کئی گاؤں والے کورونا وائرس کے خوف سے کرنسی نوٹوں کو دھوتے ہوئے نظر آرہے ہیں، جس کے تعلق سے بتایا جارہا ...

جن اضلاع میں کورونا نہیں وہاں لاک ڈاؤن میں رعایت کا امکان؛ 11/اپریل کو وزیر اعظم مودی کی ویڈیو کانفرنس کے بعد ریاستی حکومت کی طرف سے اعلان متوقع 

وزیر اعلیٰ بی ایس ایڈی یورپا نے اشارہ دیا ہے کہ مرکزی حکومت کی طرف سے منظوری ملنے کی صورت میں ان اضلاع میں لاک ڈاؤن ختم کیا جاسکتا ہے جہاں کورونا وائرس کے واقعات بہت کم ہیں یا نہیں ہیں۔