چندریان2-لینڈروکرم نہیں ٹوٹا اسروپرجوش-رابطہ کے امکانات روشن

Source: S.O. News Service | Published on 10th September 2019, 10:52 AM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

بنگلورو،10؍ستمبر(ایس او نیوز؍ایجنسی) ہندوستانی خلائی ادارہ اِسرو نے لینڈر وکرم کا پتہ تو لگا لیا ہے لیکن اس سے رابطہ اب بھی قائم نہیں کیا جا سکا ہے۔ لینڈر وکرم سے رابطہ قائم کرنے کی کوششیں لگاتار جاری ہیں -وہیں چندریان-1کے ڈائرکٹر ایم- انا دورائی نے بتایا ہے کہ آخر کیوں رابطہ قائم کرنے میں اِسرو کو کامیابی نہیں مل رہی ہے۔ انا دورائی نے کہا کہ چاند کی سطح پر موجود رکاوٹیں لینڈر وکرم کو سگنل حاصل کرنے سے روک رہی ہیں -ڈائرکٹر نے نیوز ایجنسی اے این آئی کو بتایا کہ ہم نے لینڈر کا چاند کی سطح پر پتہ لگا لیا ہے، اب ہمیں اس کے ساتھ رابطہ قائم کرنا ہوگا۔ جس جگہ لینڈر اترا ہے، وہ سافٹ لینڈنگ کیلئے مناسب نہیں ہے-ساتھ ہی انا دورائی نے کہا کہ پہلے چندریان کے آربیٹر نے رابطہ قائم کرنے کیلئے لینڈر کی طرف سگنل بھیجے، لیکن موجودہ حال میں یہ دیکھنا ہوگا کہ وہ سگنل پکڑ پاتا ہے یا نہیں۔آربیٹر اور لینڈر کے درمیان ہمیشہ دو طرفہ مواصلات ہوتی ہے، لیکن ہم ایک طرفہ ڈائیلاگ کرنے کی کوشش کر سکتے ہیں - حالانکہ انہوں نے کہا کہ رابطہ5 سے 10منٹ سے زیادہ کیلئے نہیں ہوگا۔ اس کے علاوہ انھوں نے کہا کہ یہ ایک مشکل حالت ہے لیکن ہمارے سائنسداں اسے سنبھالنے میں کافی اہل ہیں -دوسری جانب حالانکہ وقت نکلنے کے ساتھ ساتھ چندریان-2کے لینڈر وکرم سے رابطہ بحال ہونے کا امکان بھی کم ہوتا جا رہا ہے- لیکن، اِسرو لینڈر وکرم سے رابطہ کرنے کی ہر ممکن کوشش کر رہا ہے۔ اِسرو سربراہ کے. سیون نے کہا کہ خلائی ایجنسی 14 دنوں تک لینڈر سے رابطہ قائم کرنے کی کوشش کرے گی۔ چندریان-2 میں لگے کیمروں سے چاند کی سطح پر لینڈر وکرم کا پتہ اتوار کو چلنے کے بعد انہوں نے دہرایا کہ یہ (رابطہ بحال کرنے کی) کوششیں جاری رہیں گی-مہم سے جڑے ایک سینئر افسر نے کہا کہ جیسے جیسے وقت گزرتا جائے گایہ رابطہ بحال کرنا مشکل ہوگا-ایک افسر نے کہا کہ حالانکہ صحیح ماحول ملنے پر یہ اب بھی توانائی پیدا کر سکتا ہے اور سولار پینل کے ذریعہ بیٹریوں کو ری چارج کر سکتا ہے-

ایک نظر اس پر بھی

حاملہ خاتون کی رپورٹ  کورونا پوزیٹو آنے پر  ہوسکوٹے کے ایک گائوں میں4 ہزار لیٹر دودھ نالی میں بہادینے کی واردات

کرناٹک کے ہوسکوٹے کے قریب چکّا کوریٹی گاؤں کے دودھ تیار کرنے والے کسانوں کو مجبوراً 4ہزار لیٹر دودھ نالی میں بہا دینا پڑا کیونکہ گاؤں میں کورونا کا مریض ہونے کی وجہ سے فیڈریشن نے دودھ لینے سے انکار کردیا۔

کرناٹک میں مجموعی طورپر100افراد میں کورونا کی تصدیق؛ تعداد بڑھ کر ہوگئی 2282

آج منگل کو کرناٹک میں مجموعی طورپر100افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی ہے‘ جبکہ 17افراد کورونا کو شکست دے کر اپنے گھر واپس چلے گئے ہیں۔ آج سو لوگوں کی رپورٹ پوزیٹو آنے کے ساتھ ہی ریاست میں مریضوں کی جملہ تعداد بڑھ کر 2282 ہوگئی ہے جن  میں سے722افراد علاج کے بعد صحت مند ہوکر اسپتال سے ...

بھٹکل سمیت ساحلی کرناٹکا میں زبردست گرمی ؛ 26مئی سے اگلے تین دنوں تک کرناٹکا میں زبردست بارش کے امکانات

بحرہ عرب اور خلیج بنگال میں طوفانی ہواؤں سے پیدا ہونے والے دباؤ کے نتیجے میں ریاست کے جنوبی اندرونی علاقوں اور ساحلی پٹی پر 26مئی سے اگلے تین دنوں تک زبردست بارش ہونے کا محکمہ موسمیات نے امکان جتایا ہے۔

کورونا اَپ ڈیٹ:اڈپی ضلع کے تین پولیس اسٹیشنوں کو کیا گیا سیل ڈاؤن۔کارکلا،ہلیال اور برہماور میں پولیس افسران اور اہلکارآئے کووِڈ 19کی زد میں 

اڈپی ضلع میں کووِڈ وباء کا قہر کا کچھ زیادہ ہی بڑھتا ہوا محسوس ہورہا ہے۔ اب تک ممبئی اور خلیج سے واپس لوٹنے والوں میں مرض پائے جانے کی وجہ سے یہاں مریضوں کا گراف بڑھتا جارہا تھا۔ لیکن اب ایسا لگتا ہے کہ پولیس افسران اور اہلکار بھی اس کی زد میں آ گئے ہیں۔

بنگلورو میں کل بروز پیر 25؍ مئی کو عید الفطرمنائی جائے گی

مرکزی رو ئیت ہلال کمیٹی کر نا ٹک کے رکن مولانا محمد مقصود عمران رشادی نے یہ اطلاع دی ہے کہ آج مؤرخہ29 رمضان المبارک 1441ھ م 23مئی 2020 ؁ ء بروز ہفتہ مرکزی رؤیت ہلال کمیٹی کرناٹک،بنگلورو کا ماہانہ اجلاس زیر صدارت حضرت مولانا صغیر احمد خان صاحب رشادی کنوینر مرکزی رو ئیت ہلال کمیٹی امیر ...

کرناٹک میں کورونا کا قہر، ایک ہی دن 216 کورونا وائرس سے متاثر۔ یادگیر میں سب سے زیادہ 72 کیس، متاثرین کی کُل تعداد 1959

ملک بھر میں کورونا کاقہر جاری ہے، ریاست کرناٹک میں بھی کورونا وائرس کا خوفناک پھیلاؤ رکنے اور تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے، ہر گزرتے لمحے اور دن کے ساتھ کورونا وائرس کے نئے معاملات میں اضافہ ہی ہوتا جارہا ہے۔

جموں کے ایک وکیل اور کشمیر کی ایک خاتون کورونا سے ہلاک، لوگ دہشت زدہ

 جموں سے تعلق رکھنے والے ایک وکیل اور جنوبی کشمیر کے ضلع کولگام کی ایک خاتون کی موت کے بعد کورونا ٹیسٹ مثبت آنے سے جموں و کشمیر یونین ٹریٹری میں اس وائرس سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 23 ہوگئی ہے۔ ان ہلاکتوں کے بعد لوگوں میں ایک دہشت کا ماحول بھی دیکھنے کو مل رہا ہے۔