قومی تعلیمی پالیسی نے اعلیٰ تعلیمی اداروں کو خود مختار بنایا: پروفیسر شری دھر

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 24th June 2019, 12:30 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو24؍جون (ایس او نیوز؍نیوز) ڈرافٹ کمیٹی برائے نیشنل ایجوکیشن پالیسی کے سابق رکن پروفیسر ایم کے شری دھر نے کہا کہ پہلی مرتبہ ڈرافٹ نیشنل ایجوکیشن پالیسی نے تین سال کی عمر سے بچوں کی تعلیم کو فروغ دینے کی راہ ہموار کی-بنگلور یونیورسٹی کی جانب سے سنٹر فار ایجوکیشنل اینڈ سوشیل اسٹیڈیز کے تعاون سے بنگلور یونیورسٹی سے ملحق اساتذہ اور کالجوں کے پرنسپلوں کے لئے ڈرافٹ نیشنل ایجوکیشن پالیسی پر منعقد سمپوزیم سے خطاب کرتے ہوئے پروفیسرشری دھر نے اس خیال کا اظہارکیا- انہوں نے کہا کہ قومی تعلیمی پالیسی نے سبجکٹ کی بنیاد پر اساتذہ کو آزادی فراہم کی ہے- انہوں نے کہا کہ ڈرافٹ ایجوکیشن پالیسی ایک بصارتی دستاویز ہے جس کا مقصد تمام اعلیٰ تعلیمی اداروں کو کود مختار بنانا اور 2030 تک ڈگری ایوارڈ کرنے کے لائق بنانا ہے- انہوں نے بتایا کہ پالیسی نے تعلیمی نظام میں سدھار لانے میں اور تعلیمی اداروں کو تعلیمی، انتظامی اور مالیاتی خود مختار بنانے میں اہم رول اداکیا ہے- انہوں نے مشورہ دیا کہ وظیفہ یاب پروفرس کواعلیٰ تعلیمی اداروں میں ہائر ایجوکیشن کو فروغ دینے کے لئے استعمال کیا جائے- رامیا پبلک پالیسی سنٹر کے ڈپٹی ڈائرکٹر ڈاکٹرچیتن سنگیا نے ڈرافٹ نیشنل ایجوکیشن پالیسی کی تیاری پر روشنی ڈالی اور بتایا کہ ڈافٹنگ کمیٹی کی نمائندگی ہندوستان بھر سے کی گئی ہے اور 28 مختلف پالیسی دستاویزات کا جائزہ لے کر پالیسی تیارکی گئی ہے- صدارتی تقریر کرتے ہوئے بنگلور یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر وینوگوپال کے آر نے قومی تعلیمی پالیسی کو اعلیٰ تعلیمی اداروں میں اپنانے پر زور دیا- انہوں نے کہا کہ اعلیٰ تعلیمی اداروں میں سہولتوں کی کمی ہے اس لئے ان اداروں کے ذمہ داروں کو چاہئے کہ اسکل ڈیولپمنٹ پرتوجہ دیں - سنٹر فار ایجوکیشنل اینڈ سوشیل اسٹیڈیز کے ڈائڑکٹر پروفیسر مانسا ناگ بھوشن نے کہا کہ یہ ہندوستان میں اپنی نوعیت کی پہلی تعلیمی پالیسی ہے جس کامقصد اقدار پر مبنی تعلیم کو فروغ دینا ہے- بنگلور یونیورسٹی کے رجسٹرار پروفیسر بی کے روی نے کہا کہ ڈرافٹ نیشنل ایجوکیشن پالیسی نے اعلیٰ تعلیمی اداروں کو خود مختار بنایا ہے اور سماج کے خصوصی طبقات کو شامل کرتے ہوئے تعلیمی معیار کو اعلیٰ بنانے میں اہم رول ادا کیا ہے- اس موقع پر پروفیسر شرت اننت مورتی نے بھی خطاب کیا- سمپوزیم میں بنگلور یونیورسٹی کے رجسٹرار (ایویالیوئیشن) پروفیسر سی شیوراجو بھی حاضر رہے- پروگرام کی کوآرڈنیٹر ڈاکٹر واھنی نے استقبال کیا اور شکریہ ڈاکٹر راجیشوری نے ادا کیا-

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل شرالی کی دختر انجمن ڈاکٹر انیسہ شیخ کو ملی ڈینٹل شعبہ میں اعلیٰ ترین کامیابی : جملہ مضامین کے علاوہ مینگلور کالج کی بہترین طالبہ کے ایوارڈ سے بھی نوازا گیا

دختر ِ انجمن  کاگولڈ میڈل اور رابطہ گولڈ میڈل ایوارڈ سے سرفراز  بھٹکل  کی  ڈاکٹر انیسہ شیخ طبی میدان میں بھی بہترین کارکردگی کا مظاہرہ پیش کرتے ہوئے اے جے اسپتال مینگلورو میں بھی  امتیازی نمبرات سے کامیاب  ہونے کا سلسلہ جاری رکھا ہے اور کالج کی بہترین طالبہ کا ایوارڈ حاصل ...

آئی ایم اے کے اثاثوں کو نیلام کرنے حکومت کا فیصلہ، کامپٹنٹ اتھارٹی کے ذریعہ سرمایہ کاروں کو رقم لوٹانے کی طرف پہلا قدم

کروڑوں روپیوں کے آئی ایم اے فراڈ کیس کی جانچ کے مرحلے میں ریاستی حکومت کی طرف سے تشکیل دی گئی خصوصی تحقیقاتی ٹیم کی طرف سے آئی ایم اے کے سربراہ منصور خان کے جن اثاثوں کو ضبط کیا گیا ان کوریاستی حکومت نے نیلام کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

دیوے گوڈا نے بی جے پی کی حمایت کا واضح اشارہ دیا ضمنی انتخاب بی جے پی ہار بھی گئی تو حکومت کو خطرہ نہیں

ریاست میں ایک او ر بار بی جے پی اور جے ڈی ایس کے درمیان مفاہمت کے واضح اشارے دیتے ہوئے سابق وزیر اعظم اور جے ڈی ایس سربراہ ایچ ڈی دیوے گوڈا نے کہا ہے کہ ضمنی انتخابا ت کا نتیجہ جو بھی ہو لیکن ریاست میں بی جے پی حکومت کے استحکام کو متاثرہونے نہیں دیا جائے گا۔

مہاراشٹر سیاسی گہما گہمی پر دیوے گوڑا کا بڑا بیان ’’سیاست میں کوئی کسی کا مستقل دوست یا دشمن نہیں‘‘

سابق وزیر اعظم اور جنتا دل سیکولر کے سربراہ ایچ ڈی دیوے گوڑا نے مہاراشٹر میں بدلتے ہوئے سیاسی واقعات پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے پیر کو کہا کہ سیاست میں کوئی کسی کا مستقل دوست یا دشمن نہیں ہوتا اور وقت کے مطابق حالات بدلتے رہتے ہیں۔