سیلاب سے متاثرہ گلبرگہ پہنچی مرکزی ٹیم ، تباہ شدہ فصلوں کاکیا معائنہ ،  کسانوں کو 30.79کروڑ روپئے کی پہلی امدادی قسط

Source: S.O. News Service | Published on 10th September 2022, 11:50 AM | ریاستی خبریں |

گلبرگہ،10؍ستمبر(ایس او نیوز؍راست)  جمعرات کے د ن مرکزی ٹیم نے ضلع گلبرگہ کے ان تمام علاقوں کا دورہ کرتے ہوئے جو شدید بارش اور سیلابی پانی سے متاثر ہوئے ہیں۔ ذراعت  اورکسانوں کی فلاح و بہبود سے متعلق وزارت کے ڈائیریکٹر کے منوہر نے  متاثرہ کھیتوں کا معائینہ کیا اور کسانوں سے تبادلہ خیال کیا تاکہ فصلوں اور مکانات کی تباہی کا اندازہ لگایا جاسکے۔ جیورگی ٹاؤن کے ساکنان نے اس موقع پر مرکزی ٹیم پر زور دیا کہ وہ جلد ازجلد  بارش سے ہوئے نقصانات کی تلافی کے لئے سرکاری معاوضوں کوجاری کرنے کا کا انتظام کریں۔ اس موقع پر عہدہ داران نے بی رسول نامی ایک کسان کے کھیت کا معائینہ کیا۔ اس کھیت کی 1.3ایکڑ پر مشتمل فصلیں شدید بارش کے سبب تباہ ہوچکی ہیں۔ اس موقع پر محکمہ ذراعت کے جائینٹ ڈائیریکٹر چندر کانت جیونگی نے بتایاکہ اس گاؤں میں 1000ہیکٹر پر مشتمل فصلیں شدید بارش کے سبب تباہ ہوچکی ہیں۔ 1481سے زیادہ کسان جنھوں نے اپنی اراضی پر فی ایکڑ 5000روپئے خرچ کئے تھے وہاں کی فصلیں زیادہ بارش ہونے کے سبب تباہ ہوگئی ہیں۔ جیورگی کے تحصیلدار نے بتایا کہ تعلقہ جیورگی میں شدید بارش کے سبب 160مکانات منہدم ہوچکے ہیں اورمتاثرہ افراد میں 50,000روپئے فی مکان کے حساب سے رقمی امدادتقسیم کی گئی ہے۔ 

ڈپٹی کمشنر گلبرگہ مسٹر یشونت گروکر نے میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ ضلع گلبرگہ میں 1,11,400ہیکٹرس پر مشتمل فصلیں شدید بارش کے سبب تباہ ہوگئی ہیں۔ اس کے علاوہ 850مکانات منہدم ہوئے ہیں اور سیلاب کے سبب چھ افراد کی موت ہوئی ہے۔ ضلع بھر میں پہلی قسط کے طور پر 30.79کروڑ روپئے 33,487کسانوں میں امداد کے طورپر تقسیم کئے جاچکے ہیں۔ مرکزی ٹیمکے دورہ کے موقع پر دیہی ترقیات کی وزارت کے انڈرسیکریٹری ایس بی تیواری، و دیگر عہدہ داران موجود تھے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

بجٹ 2023: ’کوئی امید نہیں، بجٹ ایک بار پھر ادھورے وعدوں سے بھرا ہوگا‘، سدارمیا کا اظہارِ خیال

یکم فروری کو مرکز کی مودی حکومت رواں مدت کار کا آخری مکمل بجٹ پیش کرنے والی ہے۔ مرکزی وزیر مالیات نرملا سیتارمن کے ذریعہ بجٹ پیش کیے جانے سے قبل بجٹ 2023 کو لے کر کانگریس کے کچھ لیڈران نے اپنے خیالات ظاہر کیے ہیں۔

کرناٹک ہائی کورٹ کی وارننگ، کہا: چیف سکریٹری دو ہفتوں میں لاگو کرائیں حکم

کرناٹک ہائی کورٹ نے منگل کو انتباہ دیا کہ اگر ریاستی حکومت دو ہفتوں کے اندر سبھی گاؤں اور قصبوں میں قبرستان کے لئے زمین فراہم کرانے کے اس کے حکم پر عمل درآمد کرنے میں ناکام رہتی ہے تو وہ چیف سکریٹری کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی شروع کرنے پر مجبور ہوجائے گا ۔

منگلورو: محمد فاضل قتل میں ہندوتوا عناصر ملوث ہونے کا دعویٰ - اپوزیشن پارٹیوں نےکیا کیس کی دوبارہ جانچ کامطالبہ 

بی جے پی یووا مورچہ لیڈر پروین نیٹارو قتل کے بدلے میں عناصر کی طرف سے سورتکل میں محمد فاضل کو قتل کرنے کا کھلے عام دعویٰ کرنے والے وی ایچ پی اور بجرنگ دل لیڈر شرن پمپ ویل کے خلاف کانگریس ، جے ڈی ایس اور ایس ڈی پی آئی جیسی اپوزیشن پارٹیوں نے اس قتل کیس کی ازسر نو جانچ کا مطالبہ کیا ...

ٹمکورو میں اشتعال انگیز بیان دینے والے شرن پمپ ویل سمیت دیگر ہندوتوا لیڈروں کے خلاف قانونی کارروائی کا مطالبہ لے کر اے پی سی آر نے ایس پی کو دیا میمورنڈم

حال ہی میں ریاست کرناٹک کے  ٹمکور میں  منعقدہ شوریہ یاترا کے دوران وی ایچ پی لیڈر شرن پمپ ویل نے جو متنازع اور اشتعال انگیز بیان دیا  تھا ، اس پر کٹھن کارروائی کرتے ہوئے اسے گرفتارکرنے کا مطالبہ لے کر  ایسوسی ایشن فار پروٹیکشن آف سوِل رائٹس (اے پی سی آر) کے  ایک وفد نے ٹمکورو ...