مرکزی حکومت کو عوام کی شہریت کا فیصلہ کرنے کا حق حاصل  نہیں ہے: کنّن گوپی ناتھن

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 2nd December 2019, 9:10 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

بنگلورو:02؍دسمبر(ایس اؤ نیوز)صرف دستایزات کی بنیاد پر ملک کے عوام کی  شہریت کا فیصلہ لینے کا مرکزی حکومت کو حق نہیں ہے۔ سابق آئی اے ایس آفیسر کنّن گوپی ناتھن نے ان خیالات کااظہارکیا۔

وہ یہاں پی یو سی ایل ، کے وی ایس ، سوراج انڈیا سمیت عوامی اداراتی  محاذ کے زیراہتمام ’’موجودہ جمہوریت کو درپیش چیلنجس ‘‘ کے عنوان پر شہر میں منعقدہ پروگرام میں وہ خطاب کررہے تھے۔ انہوں نے اپنی بات جاری رکھتے ہوئے کہاکہ مرکزی حکومت  این آر سی اور شہریت ترمیمی  بل کو  زبردستی تھوپ کر  ملک کے عوام کو بے وجہ پریشان کرنا شروع کیا ہے، جس کوہر ایک شہری  مخالفت کرنے کی اپیل کی ۔

انہوں نے زمینی حقائق کو پیش کرتے ہوئے کہاکہ آج بھی ملک میں رہنے والے دلتوں ، پچھڑی ذات کے آدی باسیوں، اقلیتوں اور ان کی عورتوں کے پاس اپنی شہریت ثابت کرنے کے لئے دستاویزات نہیں ہیں، انہوں نے سوال اٹھایا کہ کیا صرف اسی وجہ  یہ سب درانداز کہلائیں گے ؟۔حکومت اپنے فرائض کو ٹھیک طرح سے انجام دئیے گئے بغیر ملک کے تمام مسائل کو عوام پر ڈالنا کتنا صحیح ہے سوال کیا۔

مرکزی حکومت کی طرف سے  ریاست آسام میں این آر سی نفاذ کے لئے تقریبا ً 50ہزار عملہ مسلسل 6برسوں کو کام کرنے کے باوجود ریاست کے تمام لوگوں کا صحیح طورپر اندراج کرنا تک ممکن نہیں ہواہےلیکن اس کے لئے 16ہزار کروڑ روپئے خرچ کئے گئے۔ عوام بھی اپنی دستاویزات تیار کرنے کے لئے قریب 8ہزار کروڑ روپئے خرچ کئے ہیں۔ اس کے باوجود وہاں 12لاکھ ہندوؤں اور 7لاکھ مسلمانوں کو دستاویزات نہیں ملے۔ اب اس کو ملک پر تھوپتے ہوئے ملک کے عام عوا م کو خوف زدہ کرنے کا مقصد ہونے کی بات کہی۔ مرکزی حکومت کو  نوٹ بندی کے بعد کیا کرنا ہے واضح منصوبہ بندی نہیں تھی ، اسی طرح جی ایس ٹی کے بعد بھی کیا کرنا پتہ نہیں تھا، اب آسام میں این آر سی جاری کیا، جہاں جن عوام کے پاس صحیح دستاویزات نہیں ہیں ان کے تعلق سے کیا کرنا کوئی وضاحت نہیں ہے۔ اس طرح عوام کو ہمیشہ پیچیدگی کا شکار بنا کر اپنے مفاد کو حاصل کرنا ہی اہم مقصد ہونے کا الزام لگایا۔

کمشیر ہی ایک جیل ہے: مرکزی حکومت نے کشمیر کو دئیے گئے خصوصی درجہ کو رد کرتےہوئے پورے کشمیر کو جیل میں منتقل کردیا ہے۔ عوامی نمائندوں سمیت ہزاروں لوگوں کو بغیر کسی وجہ کے ان کی گرفتاری کی گئی ہے۔ یہ سب اپنی آنکھوں سے دیکھتے ہوئے خاموش رہنا میرے لئے ممکن نہیں تھااسی لئے آئی اے ایس عہدے سے استعفیٰ دینے کی بات کہی۔ میرے استعفیٰ کے بعد ششی کانت سینتھل نے بھی استعفیٰ دیا تو میری اخلاقی قوت میں اضافہ ہوا۔ اور اس بات سے بھی خوشی محسوس ہوئی کہ  ہماری طرح  فکر رکھنے والے بے شمار افسران ہیں۔اب ملک بھر کا دورہ کرتے ہوئے مرکزی حکومت کی عوام مخالف پالیسی کے خلاف رائے عامہ ہموار کرنے کا سابق آئی اے ایس آفیسر کنن گوپی ناتھن نے  خیال ظاہرکیا۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل کا نوجوان اُدیاور میں ہوئے سڑک حادثہ میں شدید زخمی؛ علاج کے لئے مالی تعاون کی اپیل

بھٹکل مخدوم کالونی کا ایک نوجوان اُڈپی کے اُدیاور میں سڑک حادثہ میں شدید زخمی ہوا ہے اور اسے منی پال کستوربا اسپتال شفٹ کیا گیا ہے، نوجوان کی مالی حالت کمزور ہونے  کی وجہ سے علاج کے لئے  قریب تین لاکھ  روپیوں کی فوری ضرورت ہے۔ نوجوان کی شناخت سمیرسوکیری (34) کی حیثیت سے کی گئی ...

دبئی میں ایک سواری نے ایک شخص کو رونڈ ڈالا؛ مہلوک ایشیائی شخص کی شناخت ہنوز نہیں ہوپائی؛ پولس نے عوام سے کی تعاون کی اپیل

یہاں ایک سواری کی ٹکر میں ایک شخص ہلاک ہوگیا مگر اُس شخص کی شناخت ابھی تک معمہ بنی ہوئی ہے اور یہ کون ہے، کس ملک یا کس  شہر سے ہے کچھ پتہ نہیں چل پایا ہے۔ پولس کا کہنا ہے کہ یہ ایشیاء کے  کسی ملک سے تعلق رکھتا ہے۔

دبئی :شیرورگرین ویلی اسکول کے صدر ڈاکٹر سید حسن کی دختر دانیا کو ملا شیخہ فاطمہ بنت مبارک ایوارڈ آف ایکسلینس‘

عرب امارات میں بہترین ہمہ جہتی تعلیمی کارکردگی کے لئے طالب علموں کو دیا جانے والا ’’ہَرہا ئنیس شیخہ فاطمہ بنت مبارک ایوارڈ آف ایکسلینس“ امسال دانیا حسن کو تفویض کیا گیا ہے جس کا تعلق  بھٹکل کے پڑوسی علاقہ شرور سے ہے۔

بھٹکل میں الحاج محی الدین مُنیری کے نام سے موسوم ہائی ٹیک ایمبولنس کا خوبصورت افتتاح

   یہاں نوائط کالونی میں  دبئی کے معروف تاجر جناب عتیق الرحمن  مُنیری کی طرف سے ان کے والد مرحوم الحاج محی الدین مُنیری کے نام سے منسوب ایک ہائی ٹیک ایمبولنس کا خوبصورت افتتاح عمل میں آیا جس میں بھٹکل کی سرکردہ شخصیات سمیت علماء و عمائدین   موجود تھے۔

دبئی میں ایک سواری نے ایک شخص کو رونڈ ڈالا؛ مہلوک ایشیائی شخص کی شناخت ہنوز نہیں ہوپائی؛ پولس نے عوام سے کی تعاون کی اپیل

یہاں ایک سواری کی ٹکر میں ایک شخص ہلاک ہوگیا مگر اُس شخص کی شناخت ابھی تک معمہ بنی ہوئی ہے اور یہ کون ہے، کس ملک یا کس  شہر سے ہے کچھ پتہ نہیں چل پایا ہے۔ پولس کا کہنا ہے کہ یہ ایشیاء کے  کسی ملک سے تعلق رکھتا ہے۔

توہین آمیز فیس بک پوسٹ اور اس پر تشدد دونوں قابل مذمت

شان رسالتﷺ میں گستاخی کرتے ہوئے کئے گئے ایک فیس بک پوسٹ اور اس کے نتیجے میں شہر بنگلورو میں گزشتہ روز پیش آنے والے پر تشدد واقعات کی مذمت کے لئے چہار شنبہ کی صبح ممتاز علمائے کرام وقائدین کی زوم کانفرنس کے ذریعے ایک میٹنگ ہوئی

ایس ایس ایل سی نتائج میں حاصل اول مقام برقرار رکھنے افسر توجہ دیں: وزیر تعلیم ڈاکٹر سدھاکر

70 سالہ تاریخ میں چکبالاپور ضلع ایس ایس ایل سی امتحانات میں ریاست میں اول مقام جو حاصل کیا ہے۔ یہ ہمارے لئے بہت خوشی کی بات ہے۔ مگر اس سے اوپر جا نہیں سکتے مگر اس مقام کو بچائے رکھنا ہی ہمارے لئے ایک چیلنج ہے۔اس سلسلے میں ضلع کے افسروں کو توجہ دینا ضروری ہے۔