کرناٹک میں بڑھتی بدعنوانی کی سی بی آئی جانچ کرائی جائے، ایس ڈی پی آئی کا مطالبہ

Source: S.O. News Service | Published on 26th August 2022, 9:24 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،26؍اگست (ایس او نیوز؍پریس ریلیز) سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (SDPI)نے کرناٹک کے سرکاری محکموں میں 40فیصد کمیشن اور بروہت بنگلورمہانگر پالیکے(BBMP) میں 50فیصد کمیشن اور بدعنوانی میں اراکین اسمبلی اور وزراء کے ملوث ہونے کے الزامات کی سی بی آئی جانچ کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ اس قسم کے انکشافات سے لگتا ہے جیسے کرناٹک کی پوری حکومت بدعنوانی سے بھری ہوئی ہے۔ کرناٹک میں ابھی تک کرپشن کی شرح 40فیصد بتائی جاتی تھی اب یہ بڑھ کر 50فیصد تک پہنچ گئی ہے۔یہ وہ الزام ہے جو ٹھیکیداروں نے لگایا ہے۔ جس سے کرناٹک حکومت ملک کی سب سے بڑی بدعنوان ریاست کے طور پر ابھری ہے۔ اس ضمن میں ایس ڈی پی آئی کے ریاستی صدر عبدالمجید نے اپنے جاری کردہ اخباری بیان میں کہا ہے کہ ایک ٹھیکیدار نے ایک کنٹر نیوز چینل کے سامنے اپنا دکھ بیان کیا ہے۔ اس کے مطابق انہیں کام کے ہر مرحلے پر کمیشن دینا پڑتا ہے اور یہ 40فیصد سے زیادہ ہوجاتا ہے۔ٹھیکیدار نے کاروار کے بی جے پی ایم ایل اے روپالی نائک اور اس کے پی اے پر اس سے رقم کا مطالبہ کرنے کا الزام لگایا ہے۔ متاثرہ نے کہا ہے کہ ایم ایل اے کے خلاف اے سی بی میں شکایت درج کرانے کا کوئی فائدہ نہیں ہے کیونکہ آج تک کوئی کارروائی شروع نہیں کی گئی ہے۔ اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ موجودہ حکومت میں کرپشن کس سطح پر ہے۔ عبدالمجید نے کہا ہے کہ کنٹریکٹرز اسوسی ایشن کے صدر کیمپنا نے حکومت پر سنگین الزامات لگائے ہیں اور بتایا کہ وہ اس سلسلے میں وزیر اعظم نریندر مودی کو خط لکھیں گے۔ اسوسی ایشن کے صدر نے کرناٹک ہائی کورٹ کے ایک موجودہ جج کے ریمارکس کا ذکرکیا ہے کہ حکومت کرناٹک میں غیر قانونی معاوضہ کی رقم مقرر ہے اور اس کی ادائیگی کے بغیر کوئی کام نہیں ہوتا ہے۔ اب سب کا سر شرم سے جھک جانا چاہئے کیونکہ یہ ریمارک ایک معزز جج نے دی ہے۔ ایس ڈی پی آئی ریاستی صدر عبدالمجید نے اس بات کی طرف خصوصی نشاندہی کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایک کنٹریکٹر ز اسوسی ایشن نے شکایت درج کروائی تھی کہ اس وقت کے آر ڈی پی آر منسٹر کے ایس ایشورپا نے 40فیصد کمیشن کا مطالبہ کیا تھا۔ اس کے علاوہ بی جے پی کے ایک رکن سنتوش پاٹل نے اس سلسلے میں پی ایم کو خط لکھا تھا اور پی ایم او کی جانب سے کوئی جواب نہ آنے پر انہوں نے خودکشی کرلی۔ اس معاملے کو سی آئی ڈی کو ریفر کیا گیا جس نے چند دنوں میں منسٹر کو کلین چٹ دیدی۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ ایشورپا کو تحقیقاتی ایجنسی کے سامنے پیش ہوئے بغیر ہی کلین چٹ مل گئی۔ عبدالمجید نے کہا اس قسم کی بدعنوان حکومت آزادی کے بعد کے دور میں نہیں دیکھی گئی۔ ایس ڈی پی آئی صدر جمہوریہ سے اس حکومت کو برخاست کرنے اور بد عنوانی کے تمام الزامات کی غیر جانبدارانہ تحقیقات کیلئے سی بی آئی کے حوالے کرنے کا مطالبہ کرتی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو:کانگریس لیڈر رماناتھ رائے نے کہا؛ سی ٹی روی کے بیان نے بی جےپی کو ننگا کردیا ہے

بی جے پی میں راؤڈی شیٹر وں کی شمولیت کی حمایت میں سی ٹی روی نے جو بیان دیا ہے، اُس بیان نے بی جے پی کو ننگاکردیا ہے۔ ان خیالات کا اظہار  سابق وزیر  اور کے پی سی سی کے نائب صدر بی ، رماناتھ رائی  نے کیا۔

مہاراشٹر-کرناٹک سرحد تنازعہ میں شدت، بیلگاوی میں مہاراشٹر کے ٹرکوں پر پتھراؤ، حالات کشیدہ

کرناٹک اور مہاراشٹر کے درمیان جاری سرحد تنازعہ نے بیلگاوی علاقہ میں حالات کو کشیدہ کر دیا ہے۔ سرحدی علاقہ بیلگاوی میں تشدد کے واقعات پیش آ رہے ہیں اور منگل کے روز تو بیلگاوی کے باگیواڑی میں شدید احتجاجی مظاہرہ دیکھنے کو ملا۔ اس دوران کرناٹک رکشن ویدیکے سے جڑے کارکنان نے ...

’مہاراشٹر کے وزراء نے بیلگاوی میں قدم رکھا تو ہوگی قانونی کارروائی‘، کرناٹک کے وزیر اعلیٰ بسوراج بومئی نے کیا متنبہ

مہاراشٹر اور کرناٹک کے درمیان سرحدی تنازعہ کو لے کر بیان بازی لگاتار بڑھتی جا رہی ہے۔ تازہ بیان کرناٹک کے وزیر اعلیٰ بسوراج بومئی کا سامنے آیا ہے جس میں انھوں نے مہاراشٹر حکومت کو متنبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر ان کے وزراء نے کرناٹک کے بیلگاوی میں قدم رکھنے کی کوشش کی تو ان کے ...

منڈیا : مالا دھاری بھکتوں نے لگائے سری رنگا پٹن جامع مسجد کو ہنومان مندر بنانے کے نعرے - مسجد میں گھسنے کی کوشش پولیس نے کر دی ناکام  

زعفرانی جھنڈے اٹھائے ہوئے ہزاروں  مالا دھاری ہنومان بھکتوں کا جلوس 'سیکیرتھنا یاترا' کی شکل میں ہنومان مندر کی طرف جاتے ہوئے جب تاریخی سری رنگا پٹن جامع مسجد کے سامنے پہنچا تو نوجوان بھکتوں نے اچانک اشتعال انگیزی شروع کر دی اور جامع مسجد کو ہنومان مندر میں بدلنے کے نعرے لگانے ...

مرکزی حکومت کی طرف سے دلت، پسماندہ اور اقلیتی طلباء کا اسکالرشپ ختم کیا جانا انہیں تعلیمی حقوق سے بتدریج محروم کرنے کی حکمت عملی ہے: ایس ڈ ی پی آئی

سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا کرناٹک کے ریاستی صدر عبدالمجید نے اپنے جاری کردہ اخباری بیان میں کہا ہے کہ مرکزی حکومت کی طرف سے تعلیمی سال 23۔2022سے ایس سی، ایس ٹی، پسماندہ طبقات، اور اقلیتی برادریوں سے تعلق رکھنے والے پہلی سے آٹھویں جماعت کے تمام طلباء کو کوئی اسکالرشپ ختم ...