بنگلورو کنٹونمنٹ ریلوے اسٹیشن اب سی کے جعفر شریف اسٹیشن ہو گا، بی بی ایم پی کونسل اجلاس میں اتفاق رائے سے قرار داد منظور

Source: S.O. News Service | Published on 29th July 2020, 11:17 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،29؍جولائی(ایس او  نیوز) منگل کے روز بروہت بنگلورو مہا نگرا پالیکے اجلاس میں شہر کے قلب میں آنے والے بنگلورو کنٹونمنٹ ریلوے اسٹیشن کو سابق مرکزی وزیر سی کے جعفر شریف سے منسوب کرنے کے لئے ایک قرار داد منظور کرلی گئی۔

بی بی ایم پی میں اپوزیشن لیڈر نے بتایا کہ انہو ں نے کونسل اجلاس میں دوسری بار یہ قرار داد پیش کی جس کو اتفاق رائے سے منظور کرلیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ کونسل اجلاس کے دوران انہوں نے محکمہ ریلویز کے لئے جعفر شریف مرحوم کی گراں قدر خدمات کے اعتراف میں بنگلورو کنٹونمنٹ ریلوے اسٹیشن کو ان کی شخصیت سے منسوب کرنے کے لئے اس سے پہلے بھی بار ہا کوشش کی ہے ا و ر آخر کار منگل کے اجلاس کے دوران اس ضمن میں کونسل نے قرار داد کو باضابطہ منظور ی دے دی۔

اس سے پہلے بی بی ایم پی نے شہر کی مصروف ترین سڑک کوئنس روڈ کو سی کے جعفر شریف سے منسوب کرنے کا فیصلہ لیا اور اس کو عملی شکل دینے کے لئے بی بی ایم پی انتظامیہ وزیر اعلیٰ بی ایس ایڈی یورپا کی تاریخ کا انتظار تھا تاہم کورونا وائرس کے سبب جو صورتحال پیدا ہوئی اس کے سبب اس تقریب کو مؤخر کرنا پڑا۔ عبد الواجد نے کہا کہ بہت جلد ہی وہ اس بات کی کوشش کریں گے کہ ریلوے اسٹیشن کو جعفر شریف سے منسوب کرنے کے لئے جو قرار داد منظور کی گئی ہے اس کو بھی عملی جامہ پہنا دیا جائے۔

کونسل اجلاس میں اس سلسلہ میں قرار داد کی منظور ی کے دورا ن بی بی ایم پی کمشنر نے کونسل کو بتایا کہ اس سے پہلے اس ضمن میں کونسل اجلاس میں 29 دسمبر 2019کوقرار داد پیش ہوئی اور اس پر بی بی ایم پی نے عوام سے اعتراضات طلب کئے۔ چونکہ مقرر ہ مدت میں کسی بھی حلقہ سے کوئی اعتراض نہیں آیا اس لئے بی بی ایم پی کونسل میں یہ قرار داد منظور کی جاتی ہے کہ بنگلور و کنٹونمنٹ ریلوے اسٹیشن کو جعفر شریف سے منسوب کیا جائے۔

عبد الواجد نے بی بی ایم پی کونسل اجلاس میں اس قرار داد کی منظوری پر مسرت کا اظہار کیا اور کہا کہ محکمہ ریلوے کے لئے جعفر شریف مرحوم کی حذمات کے لئے بی بی ایم پی کی طرف سے یہ اقدام ایک خراج عقیدت ہوگا۔ اس اجلاس میں یہ بھی فیصلہ اتفاق رائے سے کیا گیا کہ موجودہ کورونا وائرس بحران کے سبب بی بی ایم پی کی میعاد جو 10ستمبر کو پوری ہونے والی ہے اس میں کم از کم تین ماہ کی توسیع کی جائے۔

عبدالواجد نے کہا کہ کورونا وائرس کے سبب مقامی سطح پر کارپویٹروں کو کام کرنے کی ضرورت ہے اس لئے انہیں کام کرنے کا اختیار دیا جائے۔ اس سلسلہ میں بی جے پی کے کارپوریٹروں کی طرف سے بھی حکومت سے میعاد میں توسیع کی گزارش کی گئی ہے۔ یہ طے کیا گیا ہے کہ جلد ہی میئر اس سلسلے میں حکومت کو تجویز پیش کریں گے۔

ایک نظر اس پر بھی

کانگریس اور جے ڈی ایس لینڈریفارم ترمیمی ایکٹ کی سخت مخالف، کسانوں کے حقوق اورزمین کی حفاظت کیلئے جدوجہدکریں گے:سدارامیا

کسانوں کے حقوق کے ساتھ ان کی زمینوں سے بھی بے دخل کرنے پرآمادہ ریاستی حکومت کے لینڈریفارم ایکٹ کے ترمیمی مسودہ کے خلاف اسمبلی سیشن میں نہایت سختی کے ساتھ آوازاٹھائیں گے۔