کینیڈا کا ترکی کو ہتھیاروں کی برآمد روک دینے کا اعلان

Source: S.O. News Service | Published on 17th October 2019, 10:46 AM | عالمی خبریں |

اٹاوا،17؍اکتوبر (ایس او نیوز؍ایجنسی) کینیڈا کی حکومت نے اعلان کیا ہے کہ اس نے ترکی کے لیے نئے ایکسپورٹ پرمٹس بالخصوص عسکری ساز و سامان کی برآمدات سے متعلق اجازت ناموں کا اجراء عارضی طور معطل کر دیا ہے۔

منگل کے روز جاری ایک بیان میں کینیڈا کی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ "کینیڈا کی طرف سے شام میں ترکی کی عسکری مداخلت کی شدید مذمت کی جاتی ہے"۔ بیان میں واضح کیا گیا کہ "یہ یک طرفہ کارروائی خطے کے استحکام کو سبوتاژ کر دے گی جو کہ درحقیقت پہلے ہی کمزوری سے دوچار ہے۔ اس سے انسانی صورت حال ابتر ہو گی اور ترکی سمیت بین الاقوامی اتحاد کی جانب سے داعش تنظیم کے خلاف پیش رفت برباد ہو جائے گی"۔

کینیڈا کی وزارت خارجہ نے زور دیا کہ "ہم شہریوں کے تحفظ کا مطالبہ کرتے ہیں اور تمام فریقوں پر زور دیتے ہیں کہ وہ بین الاقوامی قانون کی پاسداریوں کا احترام کریں ، ان میں انسانی امداد کا بنا کسی رکاوٹ پہنچنا شامل ہے ..... حالیہ پیش رفت کی روشنی میں کینیڈا نے ترکی کے لیے برآمدات کے نئے اجازت ناموں کے اجرا کو عارضی طور پر معطل کر دیا ہے"۔

کینیڈا سے قبل کئی مغربی ممالک مماثل اقدامات کا اعلان کر چکے ہیں۔ ان میں فرانس، جرمنی، برطانیہ اور اسپین شامل ہیں۔

کینیڈا کی وزارت خارجہ کے مطابق 2018 میں کینیڈا نے ترکی کو تقریبا 11.6 کروڑ کینیڈین ڈالر (8 کروڑ يورو) کا اسلحہ فروخت کیا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

لیبیا : فائز السراج اکتوبر کے اختتام تک اقتدار سے دست بردار ہونے کے لیے تیار

لیبیا میں وفاق حکومت کی صدارتی کونسل کے سربراہ فائز السراج نے اعلان کیا ہے کہ وہ آئندہ ماہ اکتوبر کے اختتام تک اقتدار سے دست بردار ہونے اور اپنی ذمے داریاں ایگزیکٹو اتھارٹی کے حوالے کرنے کی خواہش رکھتے ہیں۔ ...

سمندری طوفان 'سیلی' امریکی ساحل سے ٹکرا گیا، شدید بارشوں کی پیشن گوئی

سمندری طوفان 'سیلی' بدھ کی صبح امریکی ریاست الاباما کے ساحلی قصبوں سے ٹکرا گیا۔ اپنے ساتھ تند و تیز ہوائیں اور شدید بارشیں لانے والے طوفان کے متعلق موسمیات کے ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ وہ خلیجی ساحل کے کئی علاقوں میں بڑے پیمانے پر تباہی اور سیلاب لا سکتا ہے۔ ...

امن مذاکرات کے باوجود افغانستان میں طالبان کے حملوں میں 17 ہلاکتیں

دوحہ میں افغان حکومت اور طالبان کے وفود کے درمیان امن مذاکرات کے دوران طالبان افغانستان کے اندر بدستور اپنی عسکری کارروائیاں جاری رکھے ہوئے ہیں۔ ملک کے شمالی حصے میں گزشتہ 24 گھنٹوں میں مختلف واقعات میں کم از کم 17 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔ ...