کرناٹک میں وزیر داخلہ کے قلمدان کو لے کر بی جے پی کے دولیڈران میں رسہ کشی جاری

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 25th August 2019, 7:58 PM | ریاستی خبریں |

بنگلور، 25 اگست(ایس او نیو ز/آئی این ایس انڈیا) وزیر داخلہ کو قلمدان کو لے کر بی جے پی کے دو قائدین میں رسہ کشی جاری۔بی ایس یدی یورپا کی اقتدار والی کابینہ میں ابھی قلمدانوں کی تقسیم ہی نہیں ہوئی وزراء میں قلمدانوں کو لے کر رسہ کشی جاری ہے۔سابق وزیر داخلہ مسٹر آر اشوک وزیر داخلہ کے ساتھ ساتھ ٹرانسپورٹ کا قلمدان دینے کی ضِد کررہے ہیں تو وہیں بی جے پی کے اور ایک قائد مسٹر شری راملو بھی وزیر داخلہ کا قلمدان حاصل کرنے کے لیے ایڑی چوٹی کا زور لگارہے ہیں۔بی ایس یدی یورپا کو قلمدانوں کی تقسیم کو لے کر پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔انھوں نے آج صحافیوں سے کہا کہ وہ نئی دہلی میں پارٹی ہائی کمان کے ذمہ داران سے قلمدانوں کی تقسیم کے سلسلہ میں رابطہ میں ہیں۔ویسے قومی صدر مسٹر امیت شاہ کی جانب سے آج ہری جھنڈی ملنے والی ہے۔ دیکھنا ہے کہ کس کوکیا قلمدان حاصل ہوتا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

منگلورو میں سی اے اے مخالف احتجاج کے دوران ہوئی پولیس فائرنگ میں ہلاک ہونے والے افراد کے خاندانوں کو معاوضہ

بنگلورو میں آئی یو ایم ایل کے نیشنل سکریٹریٹ کا اجلاس منعقد ہوا۔ اس موقع پر کرناٹک کے ساحلی شہر منگلورو کے دو متاثرہ خاندانوں کو پانچ پانچ لاکھ روپئے کے چیک دئے گئے۔

چکمگلورو میں واقع امولیہ کے گھر پر ہندو نواز نوجوانوں کا حملہ

سی اے اے،این آر سی اور این پی آر کے خلاف بنگلور کے فریڈم پارک میں مختلف تنظیموں کی جانب سے منعقد پروگرام کے دوران پاکستان زندہ باد کا نعرہ لگانے والی طالبہ امولیہ لیونا کے چکمگلور ضلع کوپہ میں واقع اس کے گھر پر سنگھ پریوار کے کارکنوں نے حملہ کیا۔

ملک اور قوم کے تحفظ کیلئے ہمیشہ تیارہوں، امولیہ معاملہ میں جلد بازی میں کام لینے کی ضرورت نہیں: عمران پاشاہ

پاکستان کی حمایت میں نعرہ لگاکر سرخیوں میں آنے والی امولیہ کی گرفتاری اور 14دنوں کی تحویل میں دیئے جانے کے بعد فریڈم پارک میں سی اے اے مخالف احتجاجی اجلاس کے آرگنائزر کونسلر عمران پاشاہ کو اپارپیٹ پولیس نے حاضرہوکر اپنا موقف رکھنے کیلئے نوٹس دیاہے۔

معروف قانون دان فیضان مصطفیٰ کا مدلل تبصرہ؛ امولیہ کی نعرے بازی ملک سے غداری کے زمرے میں نہیں آتی

ملک کے معروف قانون دان اور آئینی امور کے ماہر فیضان مصطفیٰ نے کہا ہے کہ بنگلور و کے فریڈم پارک میں شہریت قانو ن کے خلاف احتجاج کے دوران ایک لڑ کی امولیہ کی طرف سے ’پاکستان زندہ باد‘ کا جو نعرہ لگایا گیا وہ ملک سے غداری کے زمرے میں نہیں آتا البتہ موقع محل کے اعتبار سے یہ نعرہ ...