برطانوی وزیر خارجہ نے کہا؛  ایران کو جوہری ہتھیار رکھنے کی اجازت نہیں دیں گے

Source: S.O. News Service | By INS India | Published on 10th March 2020, 6:45 PM | عالمی خبریں |

ویانا، لندن /10مارچ (آئی این ایس انڈیا) برطانوی وزیر خارجہ ڈومینک ریپ نے کہا کہ ان کا ملک ایران کو جوہری ہتھیار رکھنے کی اجازت نہیں دے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ ایران کو اس کے اقدامات اور اس کے بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی کا جوابدہ ٹھہرایا جائے گا۔

برطانوی وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ ایران شام، عراق اور آبنائے ہرمز میں اپنے اقدامات کی وجہ سے خطے کو عدم استحکام سے دوچار کررہا ہے۔ ایرانی حکومت کو خطے کو عدم استحکام سے دوچار کر نے کی کوششوں سے باز رہنا چاہیے۔ انہوں نے شام میں بشارالاسد رجیم کو شام میں کشیدگی کا اصل سبب قرار دیا اور کہا کہ برطانیہ شام میں بحران کا باعث بننے والے نظام کو ختم کرنا چاہتا ہے۔

ڈومینک ریپ کا مزید کہنا تھا کہ انہوں نے سعودی قیادت سے ویژن 2030 اور دونوں فریقین کے مابین تجارتی مواقع پر تبادلہ خیال کیا اور خطے میں ایرانی خطرات سے نمٹنے بارے میں سعودی عرب سے بھی مشاورت کی گئی۔اس سے قبل پیر کو بین الاقوامی جوہری توانائی ایجنسی (IAEA) کے ڈائریکٹر جنرل نے ایران پر زور دیا تھا کہ وہ بڑی طاقتوں کیساتھ طے پائے جوہری معاہدے کے فریم ورک کی شرائط پر فوری اور مکمل تعاون کرے۔

ایجنسی نے اسلامی جمہوریہ ایران سے مطالبہ کیا کہ عالمی توانائی ایجنسی کے معائنہ کاروں کو دو تنصیبات میں داخل ہونے کی اجازت دے۔ ایجنسی کے نئے جنرل مینجر رافیل گروسی کے مطابق تہران نے ایجنسی کے سوالوں کے جوابات دینے کے لئے ٹھوس بات چیت نہیں کی تھی۔گروسی نے کہا کہ آئی اے ای اے نے تین مقامات پر جوہری نوعیت کے مشتبہ جوہری مواد اور سرگرمیوں سے متعلق سوالات اٹھائے ہیں۔ ایران نے ان تنصیبات کا اعلان نہیں کیا۔انہوں نے مزید کہا کہ تین میں سے دو مقامات میں داخل ہونے کی اجازت نہ دینے اور ایران سے مذاکرات نہ کرنے سے ایران میں غیر اعلانیہ جوہری سرگرمیوں یا مواد کی عدم موجودگی سے متعلق قابل اعتماد گارنٹی فراہم کرنے والی ایجنسی کی صلاحیت پر منفی اثر پڑتا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی