ہرن شکارکا معاملہ:تبو،نیلم اور سیف کوتازہ نوٹس

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 21st May 2019, 11:34 AM | ملکی خبریں |

جودھپور،21/مئی (ایس او نیوز؍یو این آئی) راجستھان ہائی کورٹ نے مشہور کالے ہرن کے شکار کے معاملے میں فلم اداکار سیف علی خان، اداکارہ سونالی بیندرے، نیلم اور تبو سمیت دیگر شریک ملزمین کو نئے سرے سے نوٹس جاری کئے ہیں۔ہائی کورٹ جودھپور میں جسٹس منوج گرگ کی عدالت نے آج اس معاملے کی سماعت کے دوران سبھی شریک ملزموں کو نئے سرے سے نوٹس جاری کئے۔ ریاستی سرکار نے چیف جوڈیشیل مجسٹریٹ دیو کمار کھتری (جودھپور دیہی) کی عدالت کے شریک ملزمان کو گزشتہ برس اپریل میں بری کردینے کے فیصلے کو چیلنج کیا تھا۔ اس معاملے میں آئندہ سماعت کے لئے آٹھ ہفتوں کا وقت دیا گیا ہے۔عدالت میں سماعت کے دوران سرکاری وکیل مہی پال سنگھ نے بتایا کہ نیلم کے علاوہ ابھی تک دیگر شریک ملزمان کو نوٹس موصول نہیں ہوپائے ہیں۔ اس پر عدالت نے سبھی شریک ملزمین کو نئے سرے سے نوٹس جاری کرکے آٹھ ہفتوں میں اپنا جواب پیش کرنے کا حکم دیا۔واضح رہے کہ سی جے ایم دیہی عدالت نے اس معاملے میں گزشتہ برس پانچ اپریل کو اصل ملزم سلمان خان کو پانچ سال کی قید کی سزا سنائی جبکہ شریک ملزمان سیف علی خان، نیلم، سونالی بیندرے، تبو اور دیگر ملزمان دشینت سنگھ کو شبہ کا فائدہ دیتے ہوئے بری کردیا تھا۔ فی الحال سلمان خان ضمانت پر ہیں۔ اس معاملے میں ریاستی سرکار نے ہائی کورٹ میں اپیل کی تھی۔سال 1988 میں فلم ہم ساتھ ساتھ ہیں کی شوٹنگ کے دوران جودھپور شہر کے نزدیک کاکانکی گاؤں کی سرحد پر یکم اکتوبر کی دیر رات دو کالے ہرنوں کا شکار کرنے کا معاملہ سامنے آنے کے بعد سلمان خان کے خلاف معاملہ درج کیا گیا تھا، جس میں یہ لوگ شریک ملزم ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

متھرا : کرشن مندر کے لئے مسجد کے انہدام کا اعلان کرنے والے دیو مراری کے خلاف ایف آئی آر

 ایودھیا میں بابری مسجد کو شہید کرنے کے بعد فیصلہ مندر کے حق میں آنے کے بعد سے ایک طبقہ کے حوصلہ بلند نظر آ رہے ہیں اور اب ان کی نظریں ملک کی دیگر ان مساجد پر مرکوز ہیں جہاں تنازعہ کھڑا ہوتا رہا ہے۔

یوپی میں نظم و نسق کی حالت کافی خراب: مایاوتی

بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) سپریمو مایاوتی نے اترپردیش میں نظم ونسق پر سوالیہ نشان کھڑے کرتے ہوئے کہا کہ ریاست میں جرائم پر کنٹرول اور نظم ونسق کے معاملے میں سابقہ سماج وادی پارٹی(ایس پی) اور برسراقتدار بی جے پی میں اب کوئی فرق نہیں رہ گیا ہے۔

دبئی میں ایک سواری نے ایک شخص کو رونڈ ڈالا؛ مہلوک ایشیائی شخص کی شناخت ہنوز نہیں ہوپائی؛ پولس نے عوام سے کی تعاون کی اپیل

یہاں ایک سواری کی ٹکر میں ایک شخص ہلاک ہوگیا مگر اُس شخص کی شناخت ابھی تک معمہ بنی ہوئی ہے اور یہ کون ہے، کس ملک یا کس  شہر سے ہے کچھ پتہ نہیں چل پایا ہے۔ پولس کا کہنا ہے کہ یہ ایشیاء کے  کسی ملک سے تعلق رکھتا ہے۔